نرملا سیتارامن پر کرناٹک کے مفادات سے کھلواڑ کا الزام 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th August 2018, 9:48 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍اگست(ایس او نیوز) کرناٹکا پردیش کانگریس کمیٹی صدر دنیش گنڈو راؤ نے مرکزی وزیر دفاع اور کرناٹک سے راجیہ سبھا میں نمائندگی کرنے والی نرملا سیتا رامن پر کرناٹک کے مفادات کے ساتھ دھوکہ کرنے کاالزام لگایا ہے۔

اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ریاست سے منتخب ہونے کے بعد ریاست سے جڑے معاملوں میں عدم دلچسپی اور کرناٹک کی حق تلفی درست نہیں۔

انہوں نے کہاکہ مرکزی وزیر دفاع کو چاہئے کہ جس ریاست سے وہ منتخب ہوئی ہیں اس کے مفادات کی نمائندگی کریں۔

ایرو انڈیا ایر شو کی بنگلور سے منتقلی کی تجویز کی مذمت کرتے ہوئے دنیش گنڈو راؤ نے نرملا سیتارامن کے نام اپنے مکتوب میں کہا ہے کہ پندرھویں مالیاتی کمیشن کے ضوابط کے تحت بینکنگ امتحان میں کنڑیگا باشندوں کو امتحان لکھنے کی سہولت مناسب طریقے سے فراہم نہیں کی گئی۔

مرکزی وزیر اس معاملے کو سلجھانے میں ناکام رہیں، اس کے علاوہ فرانس سے رافیل طیارے کی خریداری کا سودا جو کرناٹک کی کمپنی ایچ اے ایل سے طے تھا اسے چھین کر ایک ایسی کمپنی کے حوالے کردیاگیا جس کا وجود ہی نہیں ہے۔کرناٹک کے لئے منظور شدہ سی آر پی ایف سنٹر اترپردیش منتقل کردیاگیا، اب ایرو انڈیا ایر شو منتقل کرنے کی بات کہی جارہی ہے۔

اس موقع پر دنیش گنڈو راؤ نے بتایاکہ 9اگست کو کے پی سی سی کی جانب سے ’’ہندوستان چھوڑو‘‘ تحریک کی سالگرہ کا اہتمام کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایاکہ 13اگست کو صدر کانگریس راہل گاندھی کرناٹک کے ایک روزہ دورے پر آرہے ہیں۔ بیدر میں وہ ایک انتخابی جلسۂ عام سے خطاب کریں گے۔ اس ریلی میں کم ازکم تین لاکھ لوگوں کو جمع کرنے کا منصوبہ ہے، ریلی کے ذریعے مرکزی حکومت کی ناکامیوں اور ملک کے عوام کو امن وامان کے متعلق لاحق تشویش سے آگاہ کیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

پانچ حلقوں کے لئے آج نامزدگیوں کی جانچ ہوگی

ریاست کے تین لوک سبھا اور دو اسمبلی حلقوں کے لئے ضمنی انتخابات کے لئے آج نامزدگیو ں کے داخلوں کی تکمیل کے ساتھ ہی تینوں اہم سیاسی جماعتوں کے امیدوار آمنے سامنے آگئے ہیں۔

حکومت گر جانے کے متعلق یڈیورپا کے بیان پر سدر امیا کا طنز، اقتدار کی حوس میں سابق وزیراعلیٰ اپنا دماغی توازن کھو بیٹھے ہیں: سدرامیا

سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا کا یہ دعویٰ کہ آج دوپہر تین بجے تک ریاست کی سیاست میں بہت بڑی تبدیلی ہونے والی ہے ایک بار پھر جھوٹا ثابت ہوا۔