نیرو مودی کی عیش،کانگریس نے نشانہ بنایا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 15th March 2019, 10:04 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:15 /مارچ(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) کانگریس نے مفرور ہیرا تاجر نیرو مودی کو وطن واپس لانے میں ناکام رہنے پر وزیر اعظم نریندر مودی کی آج ایک بار پھر سخت نکتہ چینی کی اور کہا کہ مرکزی حکومت گہری نیند میں سوئی ہوئی ہے اور مجرم عیش کی زندگی گذاررہا ہے۔کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کروڑوں روپے کی دھوکہ دہی کرکے غائب ہوجانے والا ہیرا تاجر کھلے عام کاروبار کررہا ہے جب کہ مودی حکومت اور اس کے تحت جانچ ایجنسیاں مرکزی تفتیشی بیورو او رانفورسمنٹ ڈائریکٹوریت گہری نیند میں سوئے ہوئے ہیں۔ نیرو مودی صحافیوں کو تو مل جاتا ہے لیکن حکومت کو اس کے بارے میں کوئی اتہ پتہ نہیں لگتا ہے۔انہوں نے نیرو مودی کے ہندوستان سے فرار ہونے کے بعد سے اس کے دووی اور سرگرمیوں کی سلسلہ وار تفصیلات دیتے ہوئے کہاہے کہ یہ جانکاری پوری طرح سے عام ہے لیکن حکومت اسے نہیں پکڑ پارہی ہے۔ انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ یہ ملی بھگت کے بغیر ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیرو مودی مہنگا مکان خرید کر رہ رہا ہے اور ہیرے اور قیمتی گھڑیوں کا کاروبار کررہا ہے۔ وہ راجہ کی طرح عیش وآرام کی زندگی جی رہا ہےَکانگریس لیڈر نے طنز کرتے ہوئے وزیر اعظم کو عالمی یوم خواب کی مبارک باد دی اور کہا کہ اپوزیشن پوری طرح سے بیدار ہے اور حکومت کی خامیوں کو سامنے لاتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ نیرو مودی کہیں چھپا ہوا نہیں ہے بلکہ پاسپورٹ رد ہونے کے بعد بھی کئی ملکوں میں گھوم رہا ہے۔ یہ ایسے ملک ہیں جن کے ساتھ ہندوستان کا حوالگی معاہدہ ہے لیکن حکومت اس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کر پائی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔