آئندہ پارلیمانی الیکشن :کیا اُترکنڑا میں دیش پانڈے اوراننت کمار ہیگڈے ہونگے آمنے سامنے ؟!

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd December 2018, 9:30 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 3؍دسمبر(ایس او نیوز) پارلیمانی انتخابات کا موسم جیسے جیسے قریب آتا جارہا ہے ، سیاسی پنڈتوں کی پیشین گوئیاں اور سیاسی گلیاروں میں سرگوشیاں تیز ہوتی جارہی ہیں۔ اگر ضلع شمالی کینرا کی پارلیمانی سیٹ کی بات کی جائے تو یہاں ابتدائی طور پربی جے پی کے اننت کمار ہیگڈے اور کانگریس کے آر وی دیشپانڈے کے تعلق سے ہوا کا رخ طے ہوتا نظر آرہا ہے۔

اننت کمار کو ٹکٹ یقینی!: سیاسی جانکاروں کی ابتدائی رپورٹ یہی بتارہی ہے کہ بی جے پی ہائی کمان کی سطح پر اس مرتبہ بھی اننت کمار ہیگڈے کو ہی ٹکٹ دیا جانا طے ہے ۔ حالانکہ پچھلے کچھ مہینوں سے خود اننت کمار نے یہ خبر اڑا رکھی ہے کہ اس مرتبہ وہ پارلیمانی انتخاب میں اترنے کے سلسلے میں کوئی دلچسپی نہیں رکھتے اس لئے پارٹی کسی اور امیدوار کو تلاش کرلے۔ مگر سیاسی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ یہ بھی اننت کمار کی ایک چال ہے کہ پارٹی ہائی کمان کی توجہ ان پر مبذول رہے اور پہلے ہی سے ان کی سیٹ پکّی ہوجائے ۔پھر ان کے لئے یہ بھرم بنائے رکھنا آسان ہوجائے گا کہ پارٹی کے اصرار پر ہی انہوں نے انتخاب لڑا ہے ورنہ انہیں کوئی دلچسپی نہیں تھی۔ اور اب ایسا لگتا ہے کہ اننت کمار کی چال کامیاب ہورہی ہے اور پارٹی ا ن کے لئے سیٹ محفوظ ہونے کاسگنل دینا چاہتی ہے۔ اب اگر اپنے کچھ نجی اسباب کی وجہ سے اننت کمار انکار کردیں تو یہ الگ بات ہوگی ، مگر اس کے امکانا ت بہت ہی کم نظر آرہے ہیں۔

کانگریس سے دیشپانڈے ہونگے امیدوار؟: دوسری طرف یہ خبر آرہی ہے کہ ضلع شمالی کینرا سے اننت کمار کے مقابلے میں اترنے کے لئے چونکہ کانگریس کے پاس کوئی بڑاتجربہ کار اور قدآور لیڈر موجود نہیں ہے اس لئے موجودہ ضلع انچارج وزیر آر وی دیشپانڈے کو یہاں سے ٹکٹ دینے پر غورکیا جارہا ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ پارلیمانی انتخابات میں اننت کمار کے مقابلے میں کانگریس سے دیشپانڈے کے فرزند پرشانت دیشپانڈے کو ٹکٹ دیا گیا تھا۔مگر مودی لہراور اننت کمار کی کٹر ہندوتواوادی امیج کے سامنے پرشانت ٹک نہیں سکے اور انہیں شکست سے دوچار ہونا پڑا تھا۔اور اب نہیں لگتا کہ کانگریس پارٹی دوبارہ پرشانت کو ٹکٹ دینے کے بارے میں غور کرے گی۔

کیا یہ دیشپانڈے کو کنارے لگانے کی چا ل ہے؟: سیاسی حلقے میں کچھ لوگ اس معاملے کو دوسرے انداز سے بھی دیکھ رہے ہیں اور دیشپانڈے کو پارلیمانی انتخاب میں امیدوار بنانے کے پیچھے کچھ کانگریسی لیڈران کی چال محسوس کررہے ہیں۔ اس کا سبب یہ ہے کہ فی الحال ریاستی سیاست میں دیشپانڈے سب سے تجربہ کار اور قد آور کانگریسی لیڈر ہیں۔ اگر کرناٹکا میں کانگریسی وزیر اعلیٰ چننے کا موقع آیا تو پھر سب سے پہلا نام دیشپانڈے کا ہی سامنے آئے گا۔ جبکہ ریاستی وزارت اعلیٰ کی کرسی پر ایک طرف ڈی کے شیو کمار جیسے بااثر کانگریسی لیڈر کی نظر ہے تو دوسری طرف سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کے دل میں بھی پھر ایک مرتبہ اس کرسی پر براجمان ہونے کی خواہش انگڑائیاں لیتی ہوئی صاف محسوس ہورہی ہے۔دوسری طرف یلاپور کے رکن اسمبلی شیو رام ہیبار کے لئے بھی راستہ صاف ہوجائے گا جو ضلع انچارج وزیر بننے کی آس لگائے بیٹھے ہیں۔

کھرگے کے ساتھ یہ کھیل ہوچکا ہے: ریاستی وزارت اعلیٰ کی کرسی پر نظریں جمائے ہوئے لیڈران کی حکمت عملی یہ سمجھی جارہی ہے کہ آر وی دیشپانڈے کو اگر دہلی بھیج دیا جاتا ہے تو یہاں پر ایک مضبوط دعویدار کم ہوجائے گااور دوسرے خواہشمندوں کے لئے راستہ صاف ہوجائے گا۔ اس سے پہلے یہی کھیل ملیکا ارجن کھرگے کے ساتھ بھی کھیلا جاچکا ہے۔کیونکہ ریاستی سیاست میں سینئر شپ کے لحاظ سے کھرگے وزارت اعلیٰ کی دعویداری کے حق دار ہوچکے تھے۔ مگربعض کانگریسی لیڈروں نے اپنے راستے سے ہٹانے کے لئے منظم طریقے پر اندرونی چالیں چلنے کے بعد انہیں دہلی کا راستہ دکھادیا تھا۔ اور اب سمجھا جارہا ہے کہ یہی چال دیشپانڈے کے ساتھ بھی چلنے کی تیاری ہورہی ہے۔

دیشپانڈے کو دلچسپی نہیں ہے !: بتایا جارہا ہے کہ ماضی میں ایک مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں امیدوار بن کر شکست کا منھ دیکھنے والے خود آر وی دیشپانڈے کو دوبارہ پارلیمانی سیاست کے میدان میں اترنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ ریاستی سیاست میں رہ کر مزید ترقی اور بلندی دیکھنے کی خواہش رکھنے والے دیشپانڈے کے لئے دہلی کی طرف رخ کرنے ہچکچاہٹ کا سامنا ہے۔ لیکن خود کانگریسی لیڈران کے اندرگروہ بندی اور انہیں دہلی بھیجنے کی چالیں دیکھ کر دیشپانڈے کے دل میں کسک پیدا ہونا ایک فطری بات ہے۔اس لئے ہائی کمان اگر اس طرح کا فیصلہ کرتا ہے تو دیشپانڈے اس کے لئے راضی ہونگے یا نہیں یہ کہنا ابھی ذرا مشکل نظر آرہا ہے۔

سیاسی تبدیلیوں پر نظر رکھنے والوں کا خیال ہے کہ ریاستی کابینہ میں جلد ہی جو توسیع ہونے والی ہے اس کے بعد یہاں کے حالات نئی کروٹ لے سکتے ہیں اور ضلع میں سیاسی صورتحال مزید کچھ واضح ہوسکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

’کراولی اتسوا‘میراتھن میں افریقہ 2کھلاڑیوں نے حاصل کیا اول اور دوم مقام۔ مختلف تفریحی پروگراموں سے شائقین ہوئے لطف اندوز

’کراولی اتسوا‘ کی مناسبت سے رویندرا ناتھ ٹیگور بیچ پر منعقدہ میراتھن دوڑ میں افریقہ کے دو کھلاڑیوں نے بازی ماری۔21 کیلو میٹر کی دوڑ میں سوڈان کے سیمون نے اول مقام اور کینیا کئے پیٹیر نے دوم مقام حاصل کیا ۔ جبکہ تیسرا مقام بنگلورو کے ننجو ڈپّا کو ملا۔خواتین کی میراتھن دوڑ میں ...

پڑوسی ریاست کیرالہ کے کنّور میں انٹرنیشنل ائرپورٹ کا شاندار افتتاح؛ کیرالہ واحد ریاست جہاں ہیں چار انٹرنیشنل ائرپورٹ

ڑوسی ریاست کیرالہ کے کنّور میں انٹرنیشنل ائرپورٹ کا شاندار افتتاح عمل میں آیا جس کے ساتھ ہی کیرالہ پورے ملک میں واحد ریاست  بن گیا جہاں چار انٹرنیشنل ائرپورٹ قائم ہیں۔

بھٹکل کے نیوشمس اسکول اور ہائی اسکول طلبا کے درمیان ’ انسانیت ‘کے لئے سائیکل ریس مقابلہ

تربیت ایجوکیشن سوسائٹی کے زیر سرپرستی چلنے والے نیو شمس اسکول طلبا کے درمیان ’’انسانیت کے لئے سائیکل ریس  - 2018‘‘کے مقابلے کا سنیچر کی صبح 9بجے  ادارے کے نائب صدر انجنئیر نذیر احمد قاضی نے افتتاح کرنے کے بعد اسکول کے زیر اہتمام طلبا کے درمیان  انسانیت کے لئے سائیکل ریس مقابلہ ...

مڈکیری اور کورگ ضلع کے متاثرین کے لئے مرکزی حکومت  نے ایک پیسہ بھی نہیں دیا ہے: وزیر یوٹی قادر

ضلع کورگ کے بھیانک آفاقی  حادثے  سے متاثرہ لوگوں کی مدد کا ڈھونڈرا پیٹ رہے رکن پارلیمان پرتاپ سنہا کو شہری ترقیات اور رہائش وزیر یوٹی قادر نے آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ مڈکیری اور کورگ ضلع کے متاثرین کے لئے مرکزی حکومت کی طرف سے  ایک پیسہ بھی نہیں ملاہے، رکن پارلیمان پرتاپ ...

توہم پرستی کے مخالفین کومذہب دشمن قراردیاجارہاہے: ملیکارجن کھرگے

پارلیمان میں کانگریسی رہنما ملیکارجن کھرگے نے کہاکہ آج سماج میں توہم پرستی کی مخالفت کرنے والوں کومذہب کے دشمن کے طورپر پیش کیاجارہاہے ،یہاں کونڈجی بسپاہال میں اکھل بھارت شرن ساہتیہ پریشد اورماچی دیواسمیتی کی جانب سے اشوک دوملور کی تین مختلف زبانوں میں تحریرکردہ کتابوں ...

22دسمبر کو کابینہ میں ضرور توسیع ہوگی: دنیش گنڈو راؤ

پردیش کانگریس کمیٹی ( کے پی سی سی ) صدر دنیش گنڈو راؤ نے بتایا کہ 22دسمبر کوریاستی کابینہ میں توسیع ضرور ہوگی۔کے پی سی سی دفتر میں نامہ نگاروں سے انہوں نے کہا کہ کابینہ میں توسیع سے متعلق وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی ،نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور سمیت دونوں پارٹیوں کے لیڈروں ...

بی جے پی الزام عائد کرنے سے پہلے سی اے جی رپورٹ کاجائزہ لے: سدرشن

کے پی سی سی نائب صدر قانون سازکونسل کے سابق چیرمین وی آر سدرشن نے کہاکہ بی جے پی رہنما ؤں کو سابق وزیراعلیٰ سدارامیا کے دورمیں 35ہزار کروڑ روپئے کاگھپلہ ہونے کالزام لگانے سے پہلے سی اے جی رپورٹ کاجائزہ لینا چاہئے ۔

بلگام :پروفیسر خواجہ فرازؔبادامی کو  کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ سے فن عروض کے موضوع پر پی ایچ ڈی کی سند تفویض  

گوکاک  جے ایس ایس ڈگری کالج کے شعبہ اردو کے صدر پروفیسر خواجہ بندہ نواز انڈیکر فرازؔبادامی کو کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کی طرف سے  ’’اردو عروض اور ہندی پنگل کا تقابلی مطالعہ ‘‘کے موضوع پر ڈاکٹر آف فلاسفی (پی ایچ ڈی ) کی سند تفویض کی گئی ہے۔

بنگلور میں منعقدہ APCR کارگاہ میں دہشت گردی کے نام پر بے گناہوں کی گرفتاریوں پر سخت تشویش؛سابق چیف جسٹس اور معروف وُکلا نے کی، یو اے پی اے کی سخت مخالفت

اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس (اے پی سی آر) کرناٹک چاپٹر کے زیراہتمام ریاستی سطح کے ورکشاپ میں دہشت گردی کے نام پر بے گناہ مسلمانوں کی گرفتاریوں پر سخت تشویش کااظہار کیا گیا اور سابق چیف جسٹس آف انڈیا مسٹر وینکٹ چلیّا سمیت معروف وُکلاء نے یو اے پی اے اسپیشل قانون کی سخت ...

بھٹکل میں آدھا تعلیمی سال گزرنے پر بھی ہائی اسکولوں کے طلبا میں نہیں ہوئی شو ز کی تقسیم  : رقم کا کیا ہوا ؟

آخر اس  نظام ،انتظام کو کیا کہیں ،سمجھ سے باہر ہے! تعلیمی سال 2018-2019نصف گزر کر دو تین مہینے میں سالانہ امتحان ہونے ہیں۔ اب تک بھٹکل کے سرکاری ہائی اسکولوں کو سرکاری شو بھاگیہ میسر نہیں ، نہ کوئی پوچھنے والا ہے نہ  سننے والا۔شاید یہی وجہ ہے کہ محکمہ تعلیم شو، ساکس کی تقسیم کا ...

سوشیل میڈیا اور ہماراسماج ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ (از: سید سالک برماور ندوی)

اکیسویں صدی کے ٹکنالوجی انقلاب نے دنیا کو گلوبل ویلیج بنادیا ہے۔ جدید دنیا کی حیرت انگیزترقیات کا کرشمہ ہے کہ مہینوں کا فاصلہ میلوں میں اورمیلوں کا،منٹوں میں جبکہ منٹ کامعاملہ اب سیکنڈ میں طےپاتا ہے۔

جیل میں بندہیرا گروپ کی ڈائریکٹر نوہیرانے فوٹو شاپ جعلسازی سے عوام کو دیا دھوکہ۔ گلف نیوز کا انکشاف

دبئی سے شائع ہونے والے کثیر الاشاعت انگریزی اخبار گلف نیوز نے ہیرا گولڈ کی ڈائرکٹر نوہیرا شیخ کی جعلسازی کا بھانڈہ پھوڑتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ    کس طرح اس نے فوٹو شاپ کا استعمال کرتے ہوئے بڑے بڑے ایوارڈ حاصل کرنے اور مشہور ومعروف شخصیات کے ساتھ اسٹیج پر جلوہ افروز ...

کہ اکبر نام لیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔!ایم ودود ساجد

میری ایم جے اکبر سے کبھی ملاقات نہیں ہوئی۔میں جس وقت ویوز ٹائمز کا چیف ایڈیٹر تھا تو ان کے روزنامہ Asian Age کا دفتر جنوبی دہلی میں‘ہمارے دفتر کے قریب تھا۔ مجھے یاد ہے کہ جب وہ 2003/04 میں شاہی مہمان کے طورپرحج بیت اللہ سے واپس آئے تو انہوں نے مکہ کانفرنس کے تعلق سے ایک طویل مضمون تحریر ...