نئے جوہری معاہدے پر کام کیا جا سکتا ہے: امریکا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 1:00 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن،15 مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)امریکا کی جانب سے ایران کے ساتھ جوہری معاہدے سے دستبرداری کے بعد سے یورپی یونین کے لیے صورتحال پیچیدہ ہوتی جا رہی ہے۔ اس موقع پر امریکا نے کہا ہے کہ وہ نئے جوہری معاہدے پر کام کرنے کے لیے تیار ہے۔ایک امریکی اعلٰی سفارت کار نے کہا ہے کہ واشنگٹن ایران کے ’تباہ کن‘ طرز عمل کو ٹھیک کرنے کی خاطر یورپ کے ساتھ کام کرنے کے لیے ابھی بھی تیار ہے۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اس دوران امریکی اتحادیوں سے دو طرفہ تعاون پر از سر نو غور کرنے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔ دوسری جانب ایک اعلی امریکی نمائندے نے کہا ہے کہ وہ یورپی کمپنیاں پابندی کی زد میں آ سکتی ہیں، جو ایران کے ساتھ تجارت جاری رکھے ہوئے ہیں۔امریکا کی جانب یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے، جب ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے کہا کہ وہ بہتر مستقبل کے حوالے سے پر امید ہیں۔ اس موقع پر ایران نے یورپی یونین کو امریکی دستبرداری کے بعد جوہری معاہدے پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کی ضمانت دینے کے حوالے سے ساٹھ دن کی مہلت دی ہے۔ تاہم یہ خبریں بھی سامنے آئی ہیں کہ یہ مہلت نوے دن کی ہے۔جواد ظریف نے آج ماسکو میں اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف کے ساتھ ملاقات میں کہا، ’’ اس بات چیت کا اوّلین مقصد ایک ایسی ضمانت حاصل کرنا ہے، جو ایرانی عوام کے حق میں ہو اور انہیں تحفظ فراہم کرے‘‘۔ ظریف نے ایک مرتبہ پھر خبردار کیا ہے کہ اگر یورپ کی جانب سے ایران کے ساتھ تجارتی سرگرمیوں کی اجازت و ضمانت نہیں دی جاتی تو ایران صنعتی بنیادوں پر یورینیئم کی افزودگی شروع کر دے گا۔دوسری جانب فرانسیسی صدر ایمانوئیل ماکروں نے اپنے دورہ واشنگٹن کے دوران ایران کے ساتھ ایک ضمنی معاہدے کی تجویز پیش کر چکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھارت۔ تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم تائیپی میں شروع 

vایم ایس ایم ای کے سکریٹری ڈاکٹر ارون کمار پانڈا 13 سے 17 نومبر 2018 تک چلنے والے بھارت 150 تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم کے اجلاس میں بھارتی وفد کی قیادت کررہے ہیں۔ فورم میں کل اپنے افتتاحی کلمات میں ڈاکٹر پانڈا نے کہا کہ بھارت میں ایم ایس ایم ای کی پوزیشن کلیدی اہمیت کی حامل ہے

شمالی کوریا کا میزائل پروگرام جاری ہے، رپورٹ

ایک امریکی ریسرچ آرگنائزیشن نے کہا ہے کہ اس نے شمالی کوریا کے میزائلوں سے متعلق ایسے 13 مقامات کا پتا لگایا ہے جن کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ یہ اس بات کی تازہ ترین علامت ہے کہ شمالی کوریا کو اس کے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار کرانے کی امریکی کوشش تعطل کا شکار ہو گئی ہے۔

غیر ملکی طلبہ کی امریکہ میں دلچسپی کیوں گھٹ رہی ہے؟

غیر ملکی طالب علموں کی آمد سے امریکی معیشت کو ہر سال42 ارب ڈالر کا فائدہ ہوتا ہے اور روزگار کی منڈی میں ساڑھے چار لاکھ ملازمتیں پیدا ہوتی ہیں۔ غیر ملکی طالب علم امریکی معیشت کے لئے بے بڑی اہمیت رکھتے ہیں۔

ہندوستان ڈیجیٹل فروغ اورترقی کے دورسے گذررہاہے ، سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں وزیراعظم کاخطاب

وزیراعظم نے سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ ہندوستان پر چھاجانے والے مالیاتی انقلاب اور ہندوستان کے 1.3 ارب عوام کی زندگی میں بہتر تبدیلیوں کا اعتراف ہے۔ہندوستان اور سنگاپور ہندوستانی اور آسیان ملکوں کے چھوٹے اور اوسط درجے کے کاروباری اداروں کوایک ...

سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے وزیراعظم نریندر مودی کی ملاقات

وزیر اعظم نریندر مودی نے بدھ کو سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں نے مالیاتی ٹیکنالوجی میں تال میل اور علاقائی اقتصادی اتحاد سمیت کئی مسائل پر بات چیت کی۔ مودی نے فنٹیس فیسٹیول سے خطاب کر کے بدھ کو دو روزہ سنگاپوردورہ کا آغاز کیا ۔یہ فیسٹیول مالیاتی ...