کوبرا پوسٹ کا انکشاف،ٹائمس آف انڈیا ،انڈیا ٹو ڈے، ہندوستان ٹائمس،زی نیوز،وغیرہ پیڈ نیوز چھاپنے کے لئے تیار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th May 2018, 12:15 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،25؍مئی (ایس او نیوز؍ایجنسی)  جمعہ کے روزکوبرا پوسٹ نے آپریشن 136 کا دوسرا حصہ فیس بک لائیو کے ذریعے جاری کیا۔ کوبرا پوسٹ نے اس سے جڑی ایک کور اسٹوری بھی اپنی ویب سائٹ پر شائع کی ہے۔ کوبرا پوسٹ کے یو ٹیوب چینل پر اس اسٹنگ آپریشن سے متعلق کل 50 ویڈیو ڈالے گئے ہیں، جن میں میڈیا کی کئی جانی مانی شخصیتیں تول مول کرتے ہوئے ریکارڈ ہوئی ہیں۔ ان میں سے کچھ ویڈیو ابھی بھی پبلک ہونے باقی ہیں۔

واضح ہو کہ اس اسٹنگ کے پہلے حصے میں میڈیا کی بڑی ہستیاں پیسے کے بدلے ہندوتوا کا ایجنڈا اپنے چینل، اخبار کے ذریعے بڑھانے کو راضی تھیں۔آج جاری دوسرے حصے میں بھی وہی بات سامنے آئی ہے۔پہلے حصے میں کوبرا پوسٹ کے صحافی پشپ شرما نے دینک جاگرن، امر اجالا، ڈی این اے، پنجاب کیسری ،اسکوپ وہوپ، انڈیا ٹی وی، ریڈف اور یو این آئی شامل تھے۔

تازہ جاری اسٹنگ ویڈیو میں میڈیا کے کچھ بے حد بڑے نام پکڑے گئے ہیں۔ان میں ٹائمس آف انڈیا ، انڈیا ٹو ڈے، ہندوستان ٹائمس، زی نیوز،نیٹ ورک 18، اسٹار انڈیا،اے بی پی نیوز، ریڈیو ون، ریڈ ایف ایم، لوک مت، اے بی این آندھرا جیوتی، ٹی وی 5، دن ملار، بگ ایف ایم، کے نیوز، انڈیا وائس، دی نیو انڈین ایکسپریس، ایم وی ٹی وی اور اوپین میگزین شامل ہے۔ کوبرا پوسٹ کے دوسرے حصے کو آج پریس کلب آف انڈیا میں جاری کیا جانا تھا۔ لیکن اس اسٹنگ آپریشن میں شامل میڈیاگروپ دینک بھاسکرنے دہلی ہائی کورٹ کی پناہ لے لی۔

بھاسکر نے کورٹ میں اپیل کی کہ اس اسٹنگ کو نشر کرنے سے ان کے وقار کو چوٹ پہنچے گی۔اس پر کورٹ نے اسٹے جاری کر دیا۔کورٹ میں اس معاملے کی اگلی شنوائی 4 جولائی کو ہوگی۔ کورٹ کے آرڈر کا ذکر کرتے ہوئے 25 مئی کی کور اسٹوری میں کوبرا پوسٹ نے لکھا ہے،’ ہمیں 24 مئی 2018 کی شام دہلی ہائی کورٹ سے ایک اسٹے آرڈر ملاہے۔ جس میں ہمارے انویسٹی گیشن سے دینک بھاسکر گروپ کو الگ رکھنے کا آرڈر ملا ہے۔ دہلی ہائی کورٹ نے دینک بھاسکر کے حق میں یہ آرڈر ہماری بات سنے بغیر جاری کیا ہے۔ لہٰذا ہم عدالت کے اس آرڈر کو سچائی اور انصاف کے لیے چیلنج دیتے ہیں۔’

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اپنے کسی بھی ممبر اسمبلی کو لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتارے گی عام آدمی پارٹی

عام آدمی پارٹی آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اپنے موجودہ  ممبراسمبلی اور وزرا کو ٹکٹ نہیں دے گی۔ عآپ کے سینئر لیڈر گوپال رائے نے منگل کو یہ جانکاری دی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی دہلی یونٹ کے صدر رائے نے ساتھ ہی کہا کہ انتخابات کی اطلاع جاری ہونے سے کافی پہلےہی دہلی م پنجاب اور ہریانہ ...

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر چندرابابوکوشبہات

الکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایمس)کے استعمال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اے پی کے وزیراعلی و تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر این چندرابابونائیڈو نے کہا کہ ان مشینوں میں الٹ پھیر کے کئی ثبوت پائے گئے ہیں