نئے لوک آیوکتہ کے تقرر پر اعلیٰ سطحی میٹنگ میں اتفاق نہ ہوسکا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:41 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) ریاست کے نئے لوک آیوکتہ کے تقرر کے سلسلے میں آج وزیراعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں اعلیٰ اختیاری کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں کسی جج کے نام پر اتفاق نہیں ہوسکا۔ رشوت ستانی کے الزامات کے بعد اس عہدہ سے جسٹس بھاسکر راؤ کے استعفیٰ کے بعد سے اب تک ریاستی حکومت نے انسانی حقوق کمیشن کے سابق چیرمین جسٹس ایس آر نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کی دو مرتبہ کوشش کی ،لیکن گورنر نے اسے منظور نہیں کیا۔ آج منعقدہ اعلیٰ اختیاری کمیٹی میٹنگ میں لوک آیوکتہ کے عہدہ کیلئے جسٹس گوپال گوڈا، جسٹس ایس آر نائک ، جسٹس بی وشواناتھ شٹی اور جسٹس این کمار کے نام پیش کئے گئے۔ وزیر اعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں ہوئی میٹنگ میں ریاستی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ایس کے مکھرجی ، اسمبلی اسپیکر کے بی کولیواڈ، کونسل چیرمین شنکر مورتی، وزیر قانون ٹی بی جئے چندرا، اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر جگدیش شٹر ، کونسل کے اپوزیشن لیڈر ایشورپا اور دیگر نے شرکت کی۔ چونکہ گورنر نے جسٹس ایس آر نائک کے نام کو دو مرتبہ منظوری کے بغیر لوٹادیا ، بی جے پی لیڈران نے حکومت کو مشورہ دیا کہ دوبارہ وہ جسٹس نائک کے تقرر پر زور نہ دے، لیکن حکومت کی طرف سے یہی کوشش ہورہی ہے کہ دوبارہ ایس آر نائک کا نام تجویز کیا جائے۔ ان کے علاوہ جسٹس وشواناتھ شٹی ، این کمار اور جسٹس گوپال گوڈا کے ناموں پر تفصیلی تبادلۂ خیال کیاگیا۔ جسٹس وشواناتھ شٹی کے نام پر سماجی کارکن ایس آر ہیرے مٹھ نے اعتراض کیا اور کہا کہ وہ وزیر توانائی ڈی کے شیوکمار کے وکیل ہیں اور ساتھ ہی ان پر جعلی حلف نامہ دے کر سائٹ حاصل کرنے کا الزام ہے۔ اسی لئے انہیں لوک آیوکتہ بنایا نہیں جانا چاہئے۔پچھلے ایک سال سے ریاست میں لوک آیوکتہ کا عہدہ خالی پڑا ہوا ہے۔موزوں امیدوار نہ ہونے کے نتیجہ میں ایسی صورتحال پیدا ہوئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کمیونسٹوں کو سبق سکھانا جانتی ہے؛ کیرالہ میں ایم پی نلین کمار کٹیل کا خطاب

کچھ دنوں پہلے منگلورو میں احتجاجی مظاہرے کے دوران ہندتوا کارکن کے قتل میں ملوث ملزموں کو گرفتار نہ کئے جانے کی صورت میں جنوبی کینر ضلع کو آگ لگادینے جیسا متنازعہ اوربھڑکاؤ بھاشن دے کر سرخیوں میں رہنے والے رکن پارلیمان نلین کمار کٹیل نے اب کیرالہ میں ایک میٹنگ کے دوران ...

یوٹی قادر کو چامراج نگر کا ضلع انچارج بنایا گیا

ریاستی وزیر اعلیٰ سدرامیا کی طرف سے جاری کیے گئے حکم کے مطابق فوڈ اینڈ سول سپلائی منسٹر جناب یو ٹی قادر کو اب چامراج نگر کا ضلع انچارج وزیر بنایا گیا ہے۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے مسٹر قادر کولار ضلع کے انچارج وزیر کی خدمات انجام دے چکے ہیں۔

چنتامنی میں غٖیر قانونی رسوئی گیس فروخت:ایک گرفتار

حال ہی میں شہر کے مضافات میں واقع نائن ہلی کے قریب ایچ پی گیس ایجنسی کے گودام میں پیش آئے رسوئی گیس سلنڈر حادثہ کے بعد تعلقہ بھر میں غیر قانونی رسوئی گیس فروخت کرنے والوں کا پتہ لگانے کیلئے چکبالاپور ضلع سپر ٹنڈنٹ آف پولیس چائترا ڈی وائی ایس پی کرشنامورتی کے زیر نگرانی میں ...

چنتامنی: اساتذہ کے مسائل حل کرانے کیلئے ہمہ وقت تیار ہوں:ر ایل رام کرشناریڈی

ریاست کے اساتذہ کے مختلف مسائل ہے ان مسائل کو حل کرانے میں حکومتیں ناکام ہے حکومتیں اعلیٰ اورعمدہ تعلیم کا نعرہ ضرور دے رہے ہیں لیکن ان نعروں سے اساتذہ کے بنیادی مسائل کا حل ممکن نہیں ہوگا عمدہ تعلیم صرف کے نعرے کی حد تک محدو رہ جائیگی یہ بات آزاد امیدوار را یل رام کرشناریڈی نے ...

قومی سیاسی جماعتوں سے ملک مشکل میں: مانک سرکار

ملک کی 58 فیصد دولت پر محض ایک فیصد طبقہ قابض ہے۔ اس سے ملک میں معاشی مساوات کے قیام کا تصور کبھی مکمل نہیں ہوسکے گا۔ یہ بات آج منی پور کے وزیراعلیٰ مانک سرکار نے کہی۔ پریس کلب کے احاطہ میں منعقدہ پریس سے ملئے پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک میں آج بھی 70 سے زائد فیصد ...

سائنس وٹیکنالوجی کے فروغ پر حکومت مکمل متوجہ: سدرامیا

ریاستی حکومت شعبہئ تعلیم وسائنس کو زیادہ سے زیادہ آگے بڑھانے اور فنڈز مہیا کرنے کیلئے ہمہ وقت تیار ہے۔ خاص طور پر سائنس کے شعبے میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبا کی حوصلہ افزائی کرنے تیار ہے۔ یہ بات آج وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہی۔ جواہر لال نہرو پلانیٹوریم میں 12.5 کروڑ روپیوں کی لاگت ...