نئے لوک آیوکتہ کے تقرر پر اعلیٰ سطحی میٹنگ میں اتفاق نہ ہوسکا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:41 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) ریاست کے نئے لوک آیوکتہ کے تقرر کے سلسلے میں آج وزیراعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں اعلیٰ اختیاری کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں کسی جج کے نام پر اتفاق نہیں ہوسکا۔ رشوت ستانی کے الزامات کے بعد اس عہدہ سے جسٹس بھاسکر راؤ کے استعفیٰ کے بعد سے اب تک ریاستی حکومت نے انسانی حقوق کمیشن کے سابق چیرمین جسٹس ایس آر نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کی دو مرتبہ کوشش کی ،لیکن گورنر نے اسے منظور نہیں کیا۔ آج منعقدہ اعلیٰ اختیاری کمیٹی میٹنگ میں لوک آیوکتہ کے عہدہ کیلئے جسٹس گوپال گوڈا، جسٹس ایس آر نائک ، جسٹس بی وشواناتھ شٹی اور جسٹس این کمار کے نام پیش کئے گئے۔ وزیر اعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں ہوئی میٹنگ میں ریاستی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ایس کے مکھرجی ، اسمبلی اسپیکر کے بی کولیواڈ، کونسل چیرمین شنکر مورتی، وزیر قانون ٹی بی جئے چندرا، اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر جگدیش شٹر ، کونسل کے اپوزیشن لیڈر ایشورپا اور دیگر نے شرکت کی۔ چونکہ گورنر نے جسٹس ایس آر نائک کے نام کو دو مرتبہ منظوری کے بغیر لوٹادیا ، بی جے پی لیڈران نے حکومت کو مشورہ دیا کہ دوبارہ وہ جسٹس نائک کے تقرر پر زور نہ دے، لیکن حکومت کی طرف سے یہی کوشش ہورہی ہے کہ دوبارہ ایس آر نائک کا نام تجویز کیا جائے۔ ان کے علاوہ جسٹس وشواناتھ شٹی ، این کمار اور جسٹس گوپال گوڈا کے ناموں پر تفصیلی تبادلۂ خیال کیاگیا۔ جسٹس وشواناتھ شٹی کے نام پر سماجی کارکن ایس آر ہیرے مٹھ نے اعتراض کیا اور کہا کہ وہ وزیر توانائی ڈی کے شیوکمار کے وکیل ہیں اور ساتھ ہی ان پر جعلی حلف نامہ دے کر سائٹ حاصل کرنے کا الزام ہے۔ اسی لئے انہیں لوک آیوکتہ بنایا نہیں جانا چاہئے۔پچھلے ایک سال سے ریاست میں لوک آیوکتہ کا عہدہ خالی پڑا ہوا ہے۔موزوں امیدوار نہ ہونے کے نتیجہ میں ایسی صورتحال پیدا ہوئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بغاوت کی شدت کے دوران بی جے پی نے کمٹہ میں دیا دینکر شٹی کو ٹکٹ ؛ کمٹہ بی جے پی امیدوار کا مسئلہ بن گیا تھا اننت کمار کے پاؤں کی زنجیر

بھارتیہ جنتا پارٹی کے اندراسمبلی ٹکٹ کے مسئلے پر جو اندرونی بغاوت ہے وہ ضلع شمالی کینرا میں اب سڑک پر اترتی دکھائی دے رہی ہے۔ ضلع میں اپنی پسند کے امیدواروں کو ٹکٹ دلانے اور اپنی قیادت کا پرچم لہرانے کا منصوبہ بنائے ہوئے مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کے لئے کمٹہ اسمبلی سیٹ کا ...

کرناٹکا اسمبلی انتخابات: پولنگ اوقات میں ایک گھنٹے کی توسیع؛ نامزدگیوں کا اندراج شروع؛ یڈیورپا ، ڈی کے شیوکمار، ایشورپا، رمیش کمار وغیرہ نے بھرا پرچہ

12 مئی کو ہونے والے کرناٹک کے ریاستی اسمبلی انتخابات کے لئے الیکشن کمیشن نے پولنگ کے اوقات میں اضافے کا فیصلہ کیا ہے۔ چیف الیکٹورل افسر سنجیو کمار نے بتایا کہ پہلے پولنگ صبح سات بجے سے شام پانچ بجے تک تھی، مگر اب اسے بڑھا کر  صبح سات بجے سے شام چھ بجے تک رکھا گیا ہے،انہوں نے توقع ...