نئے لوک آیوکتہ کے تقرر پر اعلیٰ سطحی میٹنگ میں اتفاق نہ ہوسکا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:41 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) ریاست کے نئے لوک آیوکتہ کے تقرر کے سلسلے میں آج وزیراعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں اعلیٰ اختیاری کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں کسی جج کے نام پر اتفاق نہیں ہوسکا۔ رشوت ستانی کے الزامات کے بعد اس عہدہ سے جسٹس بھاسکر راؤ کے استعفیٰ کے بعد سے اب تک ریاستی حکومت نے انسانی حقوق کمیشن کے سابق چیرمین جسٹس ایس آر نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کی دو مرتبہ کوشش کی ،لیکن گورنر نے اسے منظور نہیں کیا۔ آج منعقدہ اعلیٰ اختیاری کمیٹی میٹنگ میں لوک آیوکتہ کے عہدہ کیلئے جسٹس گوپال گوڈا، جسٹس ایس آر نائک ، جسٹس بی وشواناتھ شٹی اور جسٹس این کمار کے نام پیش کئے گئے۔ وزیر اعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں ہوئی میٹنگ میں ریاستی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ایس کے مکھرجی ، اسمبلی اسپیکر کے بی کولیواڈ، کونسل چیرمین شنکر مورتی، وزیر قانون ٹی بی جئے چندرا، اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر جگدیش شٹر ، کونسل کے اپوزیشن لیڈر ایشورپا اور دیگر نے شرکت کی۔ چونکہ گورنر نے جسٹس ایس آر نائک کے نام کو دو مرتبہ منظوری کے بغیر لوٹادیا ، بی جے پی لیڈران نے حکومت کو مشورہ دیا کہ دوبارہ وہ جسٹس نائک کے تقرر پر زور نہ دے، لیکن حکومت کی طرف سے یہی کوشش ہورہی ہے کہ دوبارہ ایس آر نائک کا نام تجویز کیا جائے۔ ان کے علاوہ جسٹس وشواناتھ شٹی ، این کمار اور جسٹس گوپال گوڈا کے ناموں پر تفصیلی تبادلۂ خیال کیاگیا۔ جسٹس وشواناتھ شٹی کے نام پر سماجی کارکن ایس آر ہیرے مٹھ نے اعتراض کیا اور کہا کہ وہ وزیر توانائی ڈی کے شیوکمار کے وکیل ہیں اور ساتھ ہی ان پر جعلی حلف نامہ دے کر سائٹ حاصل کرنے کا الزام ہے۔ اسی لئے انہیں لوک آیوکتہ بنایا نہیں جانا چاہئے۔پچھلے ایک سال سے ریاست میں لوک آیوکتہ کا عہدہ خالی پڑا ہوا ہے۔موزوں امیدوار نہ ہونے کے نتیجہ میں ایسی صورتحال پیدا ہوئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہاؤزنگ بورڈ کی طرف سے کنگیری میں فلاٹس کی عمارتیں تیار،مناسب قیمتوں پر انہیں عوام میں فروخت کیاجائے گا: کرشنپا

ریاستی وزیر ہاؤزنگ ایم کرشنپا نے کہاکہ کرناٹکا ہاؤزنگ بورڈ کی طرف سے کنگیری سوریہ نگر، اور بنڈے مٹھ علاقوں میں جدید ترین مکانات کی تعمیر کی جا ئے گی اور انہیں سبسیڈی قیمتوں پر فروخت کیا جائے گا۔

کیفے کافی ڈے پر چھاپوں کے بارے میں سدرامیا خاموش

سابق وزیر اعلیٰ اور بی جے پی لیڈر ایس ایم کرشنا کے داماد سدھارتھ کے مکان اور ان کے کیفے کافی ڈے آؤٹ لیٹ پر انکم ٹیکس محکمہ نے جو چھاپے مارے ان کے متعلق وزیراعلیٰ سدرامیا نے کچھ بھی کہنے سے انکار کردیا۔

ایس ایم کرشنا کو ڈرانے انکم ٹیکس چھاپے مارے گئے: ریونا

ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ ایچ ایم ریونا نے سابق وزیر اعلیٰ ایس ایم کرشنا کے داماد سدھارتھ کی رہائش گاہ اور ان کی کمپنی کیفے کافی ڈے پر انکم ٹیکس کے چھاپوں کو ایس ایم کرشنا پر دباؤ ڈالنے بی جے پی کی کوششوں سے تعبیر کیا،

نجی اسپتالوں پر گرفت مضبوط کرنے کیلئے قانون،لیجسلیچر کاخصوصی اجلاس طلب کرنے پر غور

وزیر صحت کے آر رمیش کمار نے کہاکہ نجی اسپتالوں پر گرفت مضبوط کرنے کیلئے جو مسودۂ قانون تیار کیا گیاہے، اسے منظور کرانے کیلئے اکتوبر میں ریاستی لیجسلیچر کا خصوصی اجلاس طلب کئے جانے کا امکان ہے،