مقتول یمنی صدر علی صالح کے بھتیجے بریگیڈیئر طارق صالح منظر عام پر آگئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th January 2018, 10:25 PM | عالمی خبریں |

صنعاء12جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)یمن کے مقتول صدر علی عبداللہ صالح کے بھتیجے اور ان کی سکیورٹی کے انچارج بریگیڈئیر طارق محمد صالح منظرعام پر آگئے ہیں۔انھیں یمنی فورسز کے عمل داری والے صوبے شبوہ کے شہر عتق میں اپنے چچا کے قتل کے بعد پہلی مرتبہ دیکھا گیا ہے۔

انھوں نے اس شہر میں جنرل پیپلز کانگریس کے مقتول سیکریٹری جنرل عارف الزوکا کے جنازے میں شرکت کی ہے اور اس موقع پر ان کی متعدد تصاویر منظرعام پر آئی ہیں۔عارف الزوکا بھی دسمبر کے اوائل میں صنعاء میں حوثی ملیشیا کے حملے میں سابق صدر علی عبداللہ صالح کے ساتھ مارے گئے تھے۔

تصاویر میں بریگیڈئیر طارق صالح صحت مند نظر آرہے ہیں اور ان کے چہرے یا جسم پر بظاہر کوئی زخم نظر نہیں آرہا ہے۔ان کے اس طرح منظرعام پر آنے کے بعد ان کی چچا کے ساتھ حوثیوں کے حملے میں موت کی افواہیں دم توڑ گئی ہیں اور حوثی ملیشیا کو بھی ان کے زندہ ہونے کا ثبوت مل گیا ہے۔

عارف الزوکا کے جنازے میں شریک ذرائع کا کہنا ہے کہ ’’طارق صالح نے ایک ویڈیو پیغام بھی جاری کیا ہے جس میں انھوں نے کہا کہ وہ ایک اہم موقع پر اور قابل قدر لوگوں کے درمیان نمودار ہونا چاہتے تھے جن کی حب الوطنی ہمیشہ ان کے دل میں رہے گی‘‘۔حوثیوں نے بریگیڈیئر طارق کی گرفتاری کے لیے صنعاء اور دوسرے علاقوں میں اشتہاری پرچے بھی تقسیم کیے تھے اور ان میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ وہ مطلوب ہیں۔انھوں نے یمنی دارالحکومت میں ان کے مکانوں اور قیام گاہوں پر چھاپا مار کارروائیاں کی تھیں۔ان کے ذاتی فون ٹیپ کیے تھے اور انھوں نے ہر اس شخص کو گرفتار کر لیا تھا جس پر انھیں طارق صالح سے تعلق یا روابط کا شْبہ گزرتا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

انیس عامری ایک ’دہشت گرد سیل‘ کا حصہ تھا: جرمن میڈیا

برلن میں دو برس قبل ایک کرسمس مارکیٹ پر ٹرک کے ذریعے حملہ کرنے والا انیس عامری’تنہا بھیڑیا‘ نہیں تھا بلکہ ممکنہ طور پر اس کا تعلق ایک سلفی سیل سے تھا، جس نے اسے اس حملے میں مدد دی تھی۔جرمن میڈیا پر ہفتے کے روز سامنے آنے والی رپورٹوں کے مطابق برلن کرسمس مارکیٹ حملے کے فقط دو ...

فرانسیسی شہروں میں زرد جیکٹوں والے مظاہرین کا احتجاج

فرانس کے مختلف شہروں میں زرد جیکٹوں والے حکومت مخالف مظاہرین مسلسل پانچویں ویک اینڈ پر احتجاج کے لیے جمع ہیں۔ صدر ایمانوئل ماکروں کی حکومت کے خلاف مظاہروں کا یہ سلسلہ ایندھن کی قیمتوں میں اضافے پر شروع ہوا تھا۔ فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں مظاہرین کی پرتشدد کارروائیوں کو ...

سری لنکا کے برخاست وزیراعظم پر پارلیمان کا اعتماد

رواں برس اکتوبر میں برخاست کیے جانے والے سری لنکن وزیراعظم رانیل وکرمے سنگھے نے پارلیمنٹ میں اعتماد کا ووٹ حاصل کر لیا ہے۔ آج بدھ کو ہونے والی رائے شماری میں 225 رکنی ایوان میں وکرمے سنگھے کی حمایت میں 117 اراکین نے ووٹ ڈالا

امریکی فوج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں

امریکی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ اْس کی افواج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں ہیں۔ اس اعلان میں ان چوکیوں کی تعداد اور مقامات کی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔ اسی علاقے میں شامی کردوں کی ملیشیا وائی پی جی ایک بڑے علاقے پر قابض ہے

برطانوی وزیر اعظم کو درپیش قیادت کا چیلنج: کیوں اور کیسے؟

برطانوی پارلیمان کے ارکان نے قدامت پسند وزیر اعظم ٹریزا مے کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کر دی ہے، جس پر رائے شماری آج بدھ بارہ دسمبر کو ہو رہی ہے۔ سوال یہ ہے کہ یہ تحریک پیش کیے جانے کے بعد اب ہو گا کیا ۔برطانوی وزیر اعظم ٹریزا مے نے اسی ہفتے پیر کا دن یورپ کے مختلف ممالک کے ...