روڈ ریج معاملہ:نو جوت سنگھ سدھو غیرارادتاً قتل کیس میں سپریم کورٹ سے ہوئے بری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 12:07 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،15؍مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) سپریم کورٹ نے 1988 کے پٹیالہ روڈریج سانحہ میں پنجاب کے کابینہ وزیر اور سابق کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو کو غیر ارادتاً قتل کے معاملہ میں آج بری کر دیا۔

جسٹس جستی چیلمیشور اور جسٹس سنجے کشن کول کی بنچ نے 30 سال پرانے اس معاملہ میں اپنا فیصلہ سنایا اور مسٹر سدھو کو تعزیرات ہند (آئی پی سی) کی دفعہ 304 کے تحت غیر ارادتاً قتل کے معاملہ میں بری کر دیا۔ کورٹ نے حالانکہ انہیں دفعہ 323 (چوٹ پہنچانے) کا مجرم ٹھہرایا اور اس کے لئے صرف ایک ہزار روپے جرمانہ عائد کیا۔ مسٹر سدھو کے دوست روپندر سنگھ سندھو کو دونوں ہی دفعات میں بری کر دیا گیا ہے۔

بنچ نے گذشتہ 18 اپریل کو اس معاملہ میں تمام متعلقہ فریقوں کی دلیلیں سننے کے بعد فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

سماعت کے دوران مسٹر سدھو کی جانب سے پیش وکیل آر ایس چیمہ نے پنجاب حکومت کے وکیل کی طرف سے مسٹر سدھو کو قتل کا مجرم بتائے جانے پر احتجاج کیا تھا۔

اس معاملہ میں پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ نے سابق کرکٹر کو تین سال کی سزا سنائی تھی جس کے بعد سدھو نے سزا کے خلاف عدالت میں اپیل کی تھی۔ گزشتہ 12 اپریل کو ہونے والی سماعت کے دوران سدھو کو اس وقت زبردست جھٹکا لگا تھا، جب ریاستی حکومت نے سابق کرکٹر کو روڈرج کے معاملہ میں مجرم قرار دیا تھا۔پنجاب حکومت کے وکیل نے کہا تھا کہ 2006 میں پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ سے مسٹر سدھو کو ملی سزا کو برقرار رکھا جائے۔ ریاستی حکومت کے وکیل نے کہا تھا کہ اس معاملہ میں شامل نہیں ہونے کا مسٹر سدھو کا بیان جھوٹا تھا.

خیال رہے 1988 میں مسٹر سدھو کا پٹیالہ میں کار سے جاتے وقت گرنام سنگھ نامی بزرگ شخص سے جھگڑا ہوا تھا۔ الزام ہے کہ ان کے درمیان ہاتھا پائی بھی ہوئی اور بعد میں گرنام سنگھ کی موت ہو گئی۔ اس کے بعد پولیس نے مسٹر سدھو اور ان کے دوست روپندر سنگھ سندھو کے خلاف غیر ارادتاً قتل کا معاملہ درج کیا۔ بعد میں نچلی عدالت نے مسٹر سدھو کو بری کر دیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

مندر وہیں بنائیں گے ،پر تاریخ راہل گاندھی بتائیں گے: کیشو پرساد موریہ 

یوپی کے نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ نے اتوار کو کہا کہ ’’رام للا ہم آئیں گے، مندر وہیں بنائیں گے، لیکن تاریخ راہل گاندھی ہی بتائیں گے‘‘۔ موریہ اتوار کو چندر شیکھر آزاد زرعی اور ٹیکنالوجی یونیورسٹی کیمپس میں منعقد بی جے پی کانپور آئی ٹی محکمہ کے بندیل کھنڈ شعبہ کے علاقائی ...

چھتیس گڑھ اسمبلی انتخابات 2018 : پہلے مرحلے میں 18 نشستوں کے لیے ووٹنگ ختم، 70فی صدپولنگ ہوئی

چھتیس گڑھ میں سخت سیکورٹی کے درمیان پہلے مرحلے کی ووٹنگ ختم ہو گئی ہے ۔ پہلے مرحلے میں کل 70 فیصد ووٹنگ ہوئی۔ کونڈا گاؤں میں61.47%، کیش کال 63.51%، کانکیر میں62%، بستر میں58%، دنتے واڑہ میں49%، خیرا گڑھ میں70.14%، ڈونگرگڑھ میں 71 فیصد اور کھجی میں72%فیصد لوگوں نے اپنے ووٹ کے حق کا استعمال کیا۔ ...

جسٹس مدن بی لوکر اور جسٹس یویوللت کا بنچ ہی کرے گا سماعت

منی پور فرضی انکاؤنٹر کیس میں سپریم کورٹ نے فوج کے تقریبا 300 جوان ، سابق فوجی اہلکاروں اور مرکز کی درخواست مسترد کر دی ہے۔ جسٹس مدن بی لوکر اور جسٹس یو یو للت کا بنچ ہی اس معاملے کی سماعت کرتا رہے گا ۔ دراصل سپریم کورٹ کو یہ طے کرنا تھا کہ سماعت کر ر ہے بنچ ہی معاملے کی سماعت جاری ...

کْولنگ ٹیکنالوجی میں اہم اختراعات کے تین ملین امریکی ڈالر انعام کا اعلان 

آج نئی دہلی میں دو روزہ گلوبل کْولنگ انوویشن سمٹ کے افتتاحی اجلاس کے دوران معیاری روم ایئر کنڈیشننگ(آر اے سی)کے مقابلے میں پانچ گنا کم ماحولیاتی اثرات کی حامل رہائشی کولنگ ٹیکنالوجی میں اختراع اور ترقی کو ترغیبات فراہم کرنے کے لیے ایک بین الاقوامی مسابقہ گلوبل کولنگ پرائز کا ...

آر ایس ایس پر پابندی لگانے کی بات نہیں کہی:کانگریس 

آر ایس ایس پر پابندی کو لے کر سیاسی گہما گہمی کے درمیان کانگریس نے صفائی دی ہے۔ مدھیہ پردیش کانگریس کے سربراہ کمل ناتھ نے کہا کہ ’’وچن پتر ‘‘ (انتخابی منشور) میں پارٹی نے یا انہوں نے آر ایس ایس پر پابندی لگانے کی بات نہیں کہی۔ کمل ناتھ نے کہا کہ پارٹی کا ایسا کوئی منشا بھی نہیں ...

ایودھیا میں مسجد بن بھی گئی تو نماز پڑھنا ممکن نہیں ہو گا:غیورالحسن رضوی

قومی اقلیتی کمیشن کے سربراہ بھی اب ایودھیا میں متنازع مقام پر رام مندر کی حمایت میں اتر آئے ہیں۔ کمیشن کے سربراہ غیورالحسن رضوی کا کہنا ہے کہ کئی ساری مسلم تنظیم ایودھیا میں رام مندر بنائے جانے کے حق میں ہیں۔ انہوں نے یہ بھی دلیل دی ہے کہ ایودھیا میں رام مندر بن جانے سے امن قائم ...