قومی اردو کونسل ہندوستان کے طول و عرض میں اردوکافروغ چاہتی ہے: ڈاکٹر شیخ عقیل احمد گوا میں منعقدہ پریس کانفرنس میں قومی اردو کونسل کے ڈائریکٹر کا خطاب

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 8th December 2018, 2:46 AM | ملکی خبریں |

پنجی:7/دسمبر (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)حکومت ہندیہ چاہتی ہے کہ جتنی بھی ہندوستانی زبانیں ہیں ان کا فروغ ہو اور ہر کوئی اپنی مادری زبان میں تعلیم حاصل کرے۔گاندھی جی نے کہا تھا کہ ’’یوروپ کے پاس ہمیں دینے کے لیے کچھ نہیں ہے لیکن ہمارے پاس انھیں دینے کے لیے بہت کچھ ہے۔‘‘ ہماری زبان، ہماری ثقافت اور ہماری تہذیب پوری دنیا میں عزت اور وقار کی نظر سے دیکھی جاتی ہے۔ ہم ہندوستانیوں کو کسی بھی غیرملکی زبان سے مرعوب نہیں ہونا چاہیے۔ یہ باتیں قومی اردو کونسل کے ڈائرکٹر ڈاکٹر شیخ عقیل احمد نے پریس کلب، پنجی گوا میں ایک پریس کانفرنس میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ اردو زبان کی شیرینی اور مٹھاس سے کوئی بھی شخص مسحور ہوسکتا ہے۔ یہ زبان کسی خاص مذہب، فرقے یا برادری کی نہیں بلکہ پورے ملک کی زبان ہے۔ اس زبان میں جذبات کی ترجمانی سب سے بہتر انداز میں کی جاسکتی ہے۔ ڈاکٹرشیخ عقیل احمد نے کہاہے کہ عام طور پر جو شمالی ہند کے علاقے ہیں وہ کونسل کی اسکیموں سے زیادہ فیض یاب ہورہے ہیں۔ لیکن ہمارا مقصد ہے کہ اردو زبان وادب کا فروغ ہندوستان کے طول و عرض میں ہو اور ہم اسی مقصد سے یہاں گوا میں اس پروگرام کا انعقاد کررہے ہیں جس میں یہاں کی غیرسرکاری تنظیموں، اسکولوں، مدرسوں اور اداروں کے نمائندوں سے بات چیت کی جائے گی اور انھیں کونسل کی اسکیمو ں اور پروگرام سے واقف کرایا جائے گا تاکہ اس ریاست میں بھی اردو زبان و ادب کا فروغ ہو۔ ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ ہم کمپیوٹر سینٹروں میں بھی مفت اردو تعلیم فراہم کرتے ہیں۔ ہمارے کمپیوٹر سینٹر سے تربیت شدہ طلبااردوزبان اچھی طرح جانتے سمجھتے ہیں۔ گوا سے ہم نے پورے ملک میں اردو کے تئیں بیداری مہم کا آغاز کیا ہے اور ہماری کوشش ہوگی کہ شمال مشرق، انڈمان نکوبار اور جنوبی ہند کے علاقوں میں بھی اس طرح کے پروگرام کا انعقاد کیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی جی کا پرگیہ سنگھ ٹھاکور سے لاتعلقی ظاہر کرنا ایسا ہی ہے جیسے پاکستان کا دہشت گردی سے ۔۔۔۔ دکن ہیرالڈ میں شائع    ایک فکر انگیز مضمون

 وزیر اعظم نریندرا مودی کا کہنا ہے کہ وہ مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کو دیش بھکت قرار دیتے ہوئے ”باپو کی بے عزتی“ کرنے کے معاملے پر پرگیہ ٹھاکورکو”کبھی بھی معاف نہیں کرسکیں گے۔“امیت شاہ کہتے ہیں کہ پرگیہ ٹھاکور نے جو کچھ کہا ہے(اور یونین اسکلس منسٹر اننت کمار ہیگڈے ...

لوک سبھا انتخابات؛ آخری مراحل کے انتخابات جاری؛ 918 اُمیدواروں کی قسمت داو پر؛ ای وی ایم میں خرابی کی شکایتیں؛ بنگال میں دو کاروں پر حملہ

لوک سبھا انتخابات کے ساتویں  اور آخری مرحلہ کے لئے اتوار کی صبح 7 بجے سے ووٹنگ جاری ہے۔جس میں  918 امیدواروں کی قسمت دائو پر لگی ہوئی ہے۔آج جاری انتخابات میں  وزیر اعظم نریندر مودی کا حلقہ انتخاب وارانسی بھی شامل ہے۔ 

دہشت گرد ہر مذہب میں ہیں: کمل ہاسن

تنازعات میں گھرے اداکار لیڈر کمل ہاسن نے جمعہ کو کہا کہ ہر مذہب میں دہشت گرد ہوتے ہیں اور کوئی بھی اپنے مذہب کوبہترین ہونے کا دعویٰ نہیں کر سکتا۔

بی جے پی کو280 سے زیادہ سیٹیں ملیں گی، این ڈی اے کی سیٹیں 300 سے متجاوز ہوں گی: پی مرلیدھر راؤ

بی جے پی لیڈر رام مادھو کے تخمینے کو مسترد کرتے ہوئے پارٹی کے سینئر لیڈر پی مرلیدھر راؤ نے کہا کہ بھگوا پارٹی کو 280 سے زیادہ سیٹیں ملیں گی جبکہ این ڈی اے کے سیٹوں کی تعداد 300 کے پار ہوں گی۔

مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملہ: اے ٹی ایس کی عدالت سے غیر حاضری کے معاملے میں عدالت کا دخل دینے سے انکار

مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ متاثرین جانب سے خصوصی این آئی اے عدالت میں داخل عرضداشت جس میں اس معاملے کی سب سے پہلے تفتیش کرنے والی تفتیشی ایجنسی ATSکی عدالت سے غیرحاضری پر سوال اٹھایا گیا تھا کو عدالت نے یہ کہتے ہوئے خارج کردیا کہ اے ٹی ایس کو پابند کرنا اس کے دائرہ اختیار میں نہیں ہے ...