ٹکنالوجی کو ترقی کا ذریعہ بنانا چاہئے تباہی کا نہیں ‘ وزیر اعظم مودی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 12:36 PM | ملکی خبریں | خلیجی خبریں |

دبئی،11؍فروری (ایس او نیوز؍ایجنسی) وزیر اعظم نریندر مودی نے آج سائبر اسپیس کے بیجا استعمال کے خلاف خبردار کیا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ یہ ٹکنالوجی باغیانہ سرگرمیوں کا ذریعہ نہیں بن جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹکنالوجی کو ترقی کا ذریعہ بنایا جانا چاہئے تباہی کا نہیں۔ نریندر مودی نے ورلڈ گورنمنٹ چوٹی کانفرنس سے اپنے پلینری خطاب میں یہ بات کہی ۔ انہوں نے یہ ریمارکس ایسے وقت میں کئے ہیں جبکہ دنیا بھر میں دہشت گردوں اور ہیکرس کی جانب سے سائبر ٹکنالوجی کے بیجا استعمال کو روکنے کی کوششیں کی جا رہی ہے ۔ اپنے خطاب میں مودی نے ٹکنالوجی کو حکمرانی سے ہم آہنگ کرنے کی اہمیت پر زور دیا اور کہا کہ ایسا کرتے ہوئے سب کیلئے خوشحالی اور مساوی ترقی کو یقینی بنایا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے ہندوستان کی ترقی میں ٹکنالوجی کی جانب سے ادا کئے جانے والے رول کا تذکرہ بھی کیا ۔ وزیر اعظم نے شرکا سے کہا کہ ہندوستان مصنوعی انٹلی جنس ‘ نانو ‘ سائبر سکیوریٹی وغیرہ میں قائدانہ موقف حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج اتنی زیادہ ترقی کے باوجود غربت اور تغذیہ سے عاری غذا کا مسئلہ ہنوز ختم نہیں کیا جاسکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف یہ مسئلہ ہے تو دوسری طرف ہم میزائیلوں اور بموں پر بھاری رقومات وقت اور وسائل خرچ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اسں بات کو یقینی بنانا چاہئے کہ ٹکنالوجی کو ترقی کا ذریعہ بنایا جائے تباہی کا ذریعہ نہیں۔ اس چوٹی کانفرنس میں نائب صدر و وزیر اعظم متحدہ عرب امارات و حکمران دوبئی شیخ محمد بن راشد المختوم بھی موجود تھے ۔ وزیر اعظم نے کچھ افراد کی جانب سے سائبر ٹکنالوجی کو باغیانہ سرگرمیوں کیلئے استعمال کرنے کی کوششوں پر تشویش کا اظہار کیا ۔ چھٹی ورلڈ گورنمنٹ چوٹی کانفرنس میں ہندوتان کو مہمان ملک کی حیثیت سے مدعو کیا گیا ہے اور اس میں تقریبا 140 ممالک کے 4,000 مندوبین شرکت کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ یہ بات صرف ان کیلئے نہیں بلکہ سارے 125 کروڑ ہندوستانیوں کیلئے باعث فخر ہے کہ انہیں ورلڈ گورنمنٹ چوٹی کانفرنس میں بحیثیت مہمان خصوصی مدعو کیا گیا ہے ۔

انہوں نے حکومت دبئی کی جانب سے ٹکنالوجی کے استعمال کی ستائش کی ۔ انہوں نے کہا کہ ایک صحرا کو بدل کر رکھ دیا گیا ہے ۔ یہ ایک کرشمہ ہے ۔ خلیج کی یہ امارت ساری دنیا کیلئے ایک مثال اور نمونہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کی آبادی کا 9.5 فیصد حصہ خط غربت سے نچلی زندگی گذار رہا ہے حالانکہ آبادی میں زبردست اضافہ ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج غربت ‘ بیروزگاری ‘ تعلیم ‘ ہاوزنگ اور انسانی تباہی جیسے زبردست چیلنجس کا سامنا ہے ۔ ہم ان تمام چیلنجس پر ترقی کے ذریعہ قابو پاسکتے ہیں ۔ یہی کام ان کی حکومت ہندوستان میں ٹکنالوجی کے استعمال کے ذریعہ کر رہی ہے ۔ یہ واضح کرتے ہوئے کہ ان کی حکومت ’سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس ‘ کے نعرے کے تحت کام کر رہی ہے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان اپنے 125 کروڑ باشندوں کو بااختیار بنانے پر توجہ دے رہا ہے اور اس کے ذریعہ ساری انسانیت کی ترقی میں اپنا حصہ ادا کرنا چاہتاہ ے ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ 25 برسوں میں ہندوستان میں زچہ کی اموات کی شرح میں ایک تہائی کمی ہوگئی ہے اور دنیا بھر میں یہ تعداد نصف رہ گئی ہے ۔ انہوں نے ہندوستان کے سٹیلائیٹ پروگرام کی بھی ستائش کی اور کہا کہ مریخ تک رسائی کا جو پروگرام تھا اس میں فی کیلومیٹر صرف 7 روپئے کا خرچ آیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہندوستان میں کوئی ٹیکسی میں سفر کرتا ہے تو کم از کم 10 روپئے ادا کرنا ہوتا ہے لیکن مریخ کیلئے فی کیلومیٹر صرف 7 روپئے کا خرچ آیا ہے ۔ نریندر مودی نے کہا کہ ہندوستان کی 65 فیصد آبادی کی عمر 35 سال سے کم ہے اور نوجوانوں کو ٹکنالوجی کے ذریعہ با اختیار بناتے ہوئے ایک نئے ہندوستان کا خواب شرمندہ تعبیر کیا جائیگا ۔ انہں نے کہا کہ ملک میں ایک ٹکنالوجی سسٹم بنایا گیا ہے تاکہ ہندوستان ایک بڑا تخلیقی و اختراعی ملک بن سکے ۔

ایک نظر اس پر بھی

چامراج نگر زہریلے پرسادسے ہلاکتوں کا معاملہ: گروہی مفاد پرستی نے لی 15بے قصوروں کی جان۔ مندر کے پجاری نے دی تھی سپاری !

چامراج نگر کے سولواڈی گاؤں میں مندر کا زہریلا پرساد کھانے کے بعد ہونے والی15بھکتوں کی ہلاکتوں کے پیچھے اسی مندر کے چیف پجاری کی سازش کا خلاصہ سامنے آیا ہے۔ ...

وزیراعظم مودی کا حملہ:4سال پہلے کسی نے سوچابھی نہیں تھا کہ سکھ فسادمعاملے میں کانگریس لیڈر کوسزا ملے گی

وزیر اعظم نریندر مودی نے 1984سکھ مخالف فسادات میں انصاف میں تاخیر کا خاکہ پیش کرتے ہوئے منگل کو کہا کہ کسی نے نہیں سوچا تھا کہ کانگریس لیڈر کو معاملے میں مجرم ٹھہرایا جائے گا۔

خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد کے براہِ راست ملوث ہونے کا کوئی ثبوت نہیں: پومپیو

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ایک بار پھرباور کرایا ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے ساتھ براہ راست کوئی تعلق نہیں اور انہیں اس کیس میں ملوث کرنے کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ملا ہے۔امریکی وزیرخارجہ نے خاشقجی قتل کیس کے حوالے سے سعودی ...

شارجہ میں منکی کمیونٹی کی خوبصورت گیٹ ٹو گیدر تقریب؛ کرناٹک کے وزراء نے کی شرکت؛ منکی میں غریبوں کے لئے چالیس مکانات دینے کا اعلان

منکی کمیونٹی (یو اے ای) کی جانب سےگذشتہ روز شارجہ میں اتحاد و ملن کے نام پر   گیٹ ٹو گیدر کی ایک خوبصورت تقریب منعقد کی گئی جس میں کرناٹک کے وزراء نے بھی شرکت کی اور  منکی کے عوام کی کثیر تعداد ایک پلیٹ فارم پر نظر آنے پر نہایت  خوشی کا اظہار کیا۔ پروگرام میں  بچوں سمیت ...

18بیرونی ممالک میں ملازمت کرنے والوں کویکم جنوری سے لازمی طور پر آن لائن رجسٹریشن کرنا ہوگا

بیرونی ممالک میں ملازمت کرنے والوں کے لئے مرکزی حکومت نے ایک نئی شرط لاگو کردی ہے جس کے مطابق یکم جنوری 2019 ؁ء سے امیگریشن چیک ناٹ ریکوائرڈECNRوالا پاسپورٹ رکھنے والے ملازمین کے لئے لازمی ہوگا کہ وہ اپنا آن لائن رجسٹر کروائیں۔

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کی دبئی آمد پر تہنیتی پروگرام؛ پہلے ملک کے اندرونی مسائل حل کرنے کی طرف توجہ ہونی چاہئے؛ گوڈا نے مودی پر کسا طنز

سابق وزیراعظم  ایچ ڈی دیوے گوڈا کی دبئی آمد کے موقع پر کرناٹکا این آر آئی فورم کی جانب سے دبئی میں گذشتہ روز دیوے گوڈا کے لئے تہنیتی پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں یہ بات بھی بتائی گئی کہ ریاست کرناٹک سے وزیراعظم منتخب ہونے والے دیوے گوڈا واحد شخص ہیں۔ پروگرام میں شال اوڑھ ...

دمام میں کاسرگوڈ کے ایک شخص کی لاش کی تین سال بعد تدفین

دمام سعودی عربیہ میں تین سال قبل انتقال کرگئے پڑوسی تعلقہ  کاسرگوڈ کیرالہ کے حسینار کنہی (۵۷سال) نامی ایک شخص کی لاش کو تین سال بعد دفنایا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ مرحوم حسینار کنہی کے پاسپورٹ پر درج اس کے  ہندوستانی پتے میں کچھ خامیاں تھیں اور پتہ نامکمل تھا اس لئے سعودی پولیس ...