میسورو میں ووٹنگ مشین ہیاک کرنے کا الزام۔ جے ڈی ایس امیدواراور کارکنان نے چار افراد کو پکڑ کر کیاپولیس کے حوالے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th May 2018, 5:23 PM | ریاستی خبریں |

میسورو17؍مئی (ایس او نیوز)میسورو نرسمہا راجہ حلقے سے جے ڈی ایس کے امیدوار اور کارکنان نے وہاں پر ووٹنگ مشین کو ہیاک کرنے کا الزام لگاتے ہوئے چار افراد کوپکڑ لیا اور پھر اس کے بعد ان لوگوں کو پولیس کے حوالے کردیا۔

بتایا جاتا ہے کہ الیکشن سے قبل ایک آزاد امیدوار وینکٹیش موڈی گیرے اور پردیپ نامی شخص نے جے ڈی ایس کے امیدوار عبدالعزیز اور بی جے پی کے امیدوار سندیش سوامی سے الگ الگ ملاقات کی تھی اور پیش کش کی تھی کہ اگر انہیں 5کروڑ روپے دئے گئے تو وہ لوگ امیدوار کو 20ہزار ووٹوں کے فرق سے جیت دلاسکتے ہیں۔

جے ڈی ایس امیدوار عبدالعزیز کا کہنا ہے کہ انتخاب کے بعد انہیں بہت ہی کم ووٹ ملنے کا معاملہ سامنے آنے پر انہیں مشین سے چھیڑ چھاڑ کرنے کے تعلق سے شکوک پیدا ہوئے۔اس بارے میں جانکاری کے لئے انہوں نے الیکشن سے قبل بڑی رقم کی مانگ رکھنے والے پردیپ سے رابطے کی کوشش کی تو وہ ناکام رہے ۔پھر جب انہوں نے پردیپ کے گھر پر جاکر دیکھا تو وہ اپنا گھر خالی کرکے کہیں لاپتہ ہوچکا تھا۔اس لئے پردیپ کے ساتھ گھومنے پھرنے والے چار افراد کو عبدالعزیز اور جنتادل ایس کے دیگر اراکین نے پکڑلیااور انہیں پولیس کے حوالے کیا ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ اس معاملے میں نرسمہا راج محلہ پولیس اسٹیشن میں عبدالعزیز نے اپنی شکایت درج کروائی ہے۔اس خبر کے عام ہوتے ہی مختلف سیاسی پارٹیوں کے اراکین کی بھیڑ پولیس اسٹیشن کےباہر  جمع ہوگئی۔

ایس ڈی پی آئی کے ایک ذمہ دار کا کہنا ہے کہ ووٹنگ مشینوں سے چھیڑ چھاڑ کے معاملے حقیقت پر مبنی ہونے کے امکانات  ہیں۔ ایس ڈی پی آئی کو بھی متوقع مقدار میں ووٹ نہیں ملے ہیں۔ اس سلسلے میں ایس ڈی پی آئی کا کہنا ہے کہ وہ  ہائی کورٹ میں شکایت درج کروائے گی۔ تاکہ اس کی گہرائی سے جانچ ہو اور اصل حقیقت عوام کے سامنے آئے۔

پولیس کمشنر ببرامنیشور راؤ کا کہنا ہے کہ جے ڈی ایس کے امیدوار عبدالعزیز کے الزامات کے مطابق شکایت درج کرلی گئی ہے۔اس بارے میں تحقیقات کی جارہی ہے۔ لیکن ووٹنگ مشین کو ہیاک کرنا کسی سے بھی ممکن نہیں ہے۔ ہم لوگوں نے اس کا تجربہ کرکے دیکھا ہے۔اس طرح کا خیال بے وقوفی کے سوا کچھ بھی نہیں ہے ۔اور تحقیقات کے بعد اس الزام میں اگرکوئی سچائی نظرنہیں آتی ہے تو پھرالزام لگانے والوں کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں پہلی بار مسلم نائب وزیراعلیٰ، آج کمار سوامی کی دہلی میں سونیا اور راہل سے ملاقات

کرناٹک کے وزیراعلیٰ کے طورپر حلف برداری سے قبل جے ڈی ایس لیڈر ایچ ڈی کمار سوامی پیر کے روز نئی دہلی میں کانگریس لیڈروں سونیاگاندھی اور راہل گاندھی سے ملاقات کریں گے اور حکومت کی تشکیل کے سلسلہ میں تبادلہ خیال کریں گے۔ ریاست کے 25ویں وزیراعلیٰ کے طورپر حلف برداری کے لیے تیار ...

یڈی یورپا کے استعفیٰ پر کانگریس اورجنتا دل سیکولر میں خوشی کی لہر

ضلع کانگریس کمیٹی گلبرگہ کے قائیدین اور کارکنان ہفتہ کی شام دفتر ضلع کانگریس کے اطراف جمع ہوگئے اور انھوں نے بی جے پی لیڈر بی ایس یڈی یورپا کی بحیثیت چیف منسٹر اپنے عہدہ سۂ مستعفی ہوجانے پر خوشیاں منائیں ۔

ہمیں اپنی چھٹیوں سے لطف اندوزہونے دیجئے : جسٹس سیکری

کرناٹک میں اقتدار کو لے کر تنازعہ پر سماعت مکمل کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے آج کہا کہ اب ہمیں اپنی چھٹیوں سے لطف اندوز ہونے دیجئے۔ عدالت عظمیٰ میں تین ججوں کے ایک بنچ کی صدارت کر رہے جسٹس اے کے سیکری نے جب عجیب انداز میں یہ تبصرہ کیا اس وقت عدالتی کمرہ قہقہوں سے گونج اٹھا۔

کرناٹک سیاسی بحران: یہ آئین اور دستور کی جیت ہے :ملی کونسل

کرناٹک میں جاری سیاسی ہنگامہ آرائی پر آج پہلی مرتبہ ملک کی معروف تنظیم آل انڈیا ملی کونسل کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر محمد منظور عالم نے اپنے ردعمل کا اظہا رکرتے ہوئے کہاکہ مرکز میں برسر اقتدار بی جے پی حکومت نے وہاں دستور کی دھجیاں اڑانے کی کوشش کی تھی