میانمار: روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام کی جانچ کرنیوالے 2صحافیوں کو 7برس قید

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th September 2018, 11:06 AM | عالمی خبریں |

ینگون، 4؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی)میانمار کی ایک عدالت نے خبررساں ادارے رائٹرز کے دو صحافیوں کو ملکی رازوں سے متعلق قانون کی خلاف ورزی کے جرم میں 7 سال قید کی سزا سنائی ہے۔ ان پر یہ الزام عائد کیا گیا کہ انہوں نے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف تشدد کی جانچ کے دوران ملکی راز کے قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔

صحافی وا لون اور کیاو او کو سرکاری دستاویزات کے ساتھ گرفتار کیا گیا جو انہیں کچھ دیر قبل پولیس افسروں نے دی تھیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ بے گناہ ہیں اور یہ کہ پولیس نے انہیں جال میں پھنسایا ہے۔ یہ دونوں صحافی گزشتہ سال دسمبر میں گرفتاری کے بعد سے قید میں ہیں۔ یہ دونوں شادی شدہ ہیں اور ان کے چھوٹے چھوٹے بچے ہیں۔

رائٹرز کے مدیر اعلی سٹیفن ایڈلر نے کہاآج کا دن میانمار، رائٹرز کے صحافیوں وا لون اور کیاو سیو او اور دنیا بھر میں پریس کی آزادی کے لیے غمناک دن ہے۔ 32 سالہ وا لون اور 28 سالہ کیاو سیو او شمالی رخائن کے گاؤں اندن میں فوج کے ہاتھوں 10 افراد کے قتل کے متعلق شواہد اکٹھا کر رہے تھے۔

رائٹرز کے مطابق میانمار میں برطانیہ کے سفیر ڈین چگ نے کہاہم اس فیصلے سے بہت مایوس ہوئے ہیں دونوں کو رہا کیا جائے۔ امریکی سفیر سکوٹ میرسیل نے بھی یہی تنقید کی اور کہا کہ عدالت کا فیصلہ ان سبھی کے لیے بہت زیادہ پریشان کن ہے جنہوں نے میڈیا کی آزادی کے لیے جدوجہد کی ہے۔میانمار میں اقوام متحدہ کے ریزیڈنٹ اور انسانی اقدار کے کوارڈینیٹر نٹ اوسٹبی نے کہا کہ صحافیوں کو ان کے اہل خانہ کے پاس واپس آنے دینا چاہیے۔

ایک نظر اس پر بھی

فتح تحریک کا حماس پر اسرائیل کے ساتھ سازباز کا الزام

فلسطینی تحریک ’فتح‘ نے ’حماس‘کی قیادت پر الزام لگایا ہے کہ اس نے اسرائیل کے ساتھ سازباز کی ہے اور وہ پناہ گزینوں کی واپسی کے حق سے دست بردار ہو گئی ہے۔ جمعے کی شام جاری ایک بیان میں فتح تحرتیک کا کہنا ہے کہ حماس تنظیم ٹرمپ انتظامیہ اور نیتین یاہو کی حکومت کو پیغامات بھیج رہی ...

اسلام مخالف اے ایف ڈی دوسری سب سے بڑی جماعت، جائزہ رپورٹ

ایک تازہ عوامی جائزے کے مطابق اسلام اور مہاجرین مخالف دائیں بازوں کی سیاسی جماعت آلٹرنیٹیو فار ڈوئچ لینڈ یا اے ایف ڈی، جرمنی کی دوسری سب سے بڑی جماعت بن گئی ہے۔ اس جائزے کے مطابق حکومتی اتحاد اپنی حمایت کھو رہا ہے۔ جرمن براڈ کاسٹر ARD کی طرف سے کرائے جانے والے عوامی جائزے کے ...

رافیل معاملے میں فرانس کے سابق صدر نے کیا مودی کے جھوٹ کا پردہ فاش ’’حکومت ہند نے دیا تھا ریلائنس کا نام‘‘

رافیل جنگی طیارہ سودے کے تعلق سے حکومت اور اہم اپوزیشن پارٹی کانگریس میں جاری جنگ کے بیچ فرانس کے سابق صدر فرانسوااولاند نے نیاانکشاف کرتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان کی طرف سے ہی سودے کے لئے انل امبانی کی کمپنی ریلائنس ڈیفنس انڈسٹریز کے نام کی تجویز پیش کی گئی تھی ۔