میانمار نے راکھین ریاست میں پھر کرفیو نافذ کر دیا

Source: S.O. News Service | Published on 12th August 2017, 5:15 PM | عالمی خبریں |

برما12اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)میانمار کی حکومت نے فسادات سے متاثرہ راکھین ریاست میں مزید فوجی دستے تعینات کرتے ہوئے کرفیو نافذ کر دیا ہے۔ ہفتے کے روز حکومت نے ان اطلاعات کی تصدیق کی ہے کہ راکھین میں مزید فوج تعینات کر دی گئی ہے۔ اقوام متحدہ نے اس صورت حال پر تشویش ظاہر کی ہے۔ گزشتہ برس اکتوبر میں مسلح افراد کی جانب سے سکیورٹی اہلکاروں پر حملوں کے بعد میانمار کی حکومت نے اس ریاست میں فوجی آپریشن شروع کیا تھا۔ اسی تناظر میں راکھین سے قریب 70 ہزار روہنگیا مسلمان گھربار چھوڑ کر بنگلہ دیش کی جانب ہجرت پر مجبور ہوئے ہیں۔ ان مہاجرین کا الزام ہے کہ فوج روہنگیا افراد کے قتل، جنسی زیادتیوں اور تشدد کے واقعات میں ملوث ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

روہنگیا مہاجرین کی وطن واپسی دو سال میں ممکن 

میانمار میں سکیورٹی دستوں کے وحشیانہ سلوک اور قتل و غارت گری سے جان بچا کر بنگلہ د یش پناہ گزیں لاکھوں روہنگیا مہاجرین کی دو سال کے دوران وطن واپسی پر بنگلہ د یش اور میانمار حکام کے مابین اتفاق رائے ہو گیا ہے ۔