میرے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا اے ایم یو کے نام سے’مسلم‘ لفظ ہٹانے کی بات نہیں کہی:سابق ہاکی کھلاڑی ظفر اقبال

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 28th November 2018, 8:12 PM | اسپورٹس |

علی گڑھ ،28؍ نومبر (آئی این ایس انڈیا؍ایس اونیوز) ہندوستانی ہاکی ٹیم کے سابق کپتان اور اولمپک کھیلوں کے گولڈ میڈلسٹ ٹیم کے رکن رہ چکے ظفر اقبال نے ان کے ذریعہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کا نام بدلنے کی حمایت کرنے کی خبروں پر نارازگی ظاہر کی ہے۔ظفر نے کہا کہ ان کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا جا رہا ہے۔اے ایم یو کے طالب علم رہ چکے ظفر اقبال نے کہا کہ میڈیا میں تشہیر ہو رہی ہے کہ انہوں نے اے ایم یو کا نام تبدیل کرنے کی مانگ کی حمایت کی۔

میڈیا میں ان کے نام سے غلط باتیں پھیلائی جا رہی ہیں۔ظفر اقبال کہا کہ وہ اس بات سے دکھی ہیں کہ کچھ سیاسی طاقتیں اے ایم یو کو صرف اس لئے بدنام کرنے کی کوشش کر رہی ہیں کیونکہ اس کے نام میں مسلم لفظ جڑا ہے۔اے ایم یو نے دنیا کو ہر میدان میں زبردست کامیابیاں حاصل کرنے والی ہستیاں دی ہیں۔ اقبال نے کہا کہ انہیں ہندوستان اورقومی کھیل ہاکی اور اے ایم یو سے بے انتہامحبت ہے۔آخر کوئی یہ کیسے سوچ بھی سکتا ہے کہ میں محض مسلم لفظ ہٹا دینے سے اے ایم یو کی مصیبتیں ختم ہو جانے کی بات کروں گا۔میں نے بھائی چارے اور قوم پرستی کا سبق اسی اے ایم یو سے سیکھا، جہاں کبھی ہندو اور مسلم کے امتیاز کی کوئی جگہ نہیں رہی۔

اپنے تازہ تنازعہ کے بارے میں صفائی دیتے ہوئے سابق ہندوستانی ہاکی کپتان نے کہا کہ گزشتہ ہفتے کسی صحافی نے اے ایم یو سے تعلیم یافتہ عظیم ہاکی کھلاڑیوں کے نام جاننے کے لیے انہیں فون کیا تھا۔اس دوران صحافی نے ان سے اے ایم یو کے بار بار تنازعات میں پھنسنے کی وجہ کے بارے میں پوچھا تھا۔ظفر اقبال نے بتایا کہ انہوں نے جواب دیا تھا کہ اے ایم یو کو تنازعات میں لانے کے پیچھے تعصب کا احساس ہے۔انہیں دکھ ہے کہ اے ایم یو کو لے کر پہلے جو اعزاز تھا، اب اس کی جگہ شک اور عدم برداشت نے لے لی ہے۔کچھ لوگوں نے محض مسلم لفظ منسلک ہونے کی وجہ سے ہی اے ایم یو پر حملہ آور ہونے کی عادت بنا لی ہے۔انہوں نے کہا کہ ان کے اسی بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے جس کی وہ مذمت کرتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

سندھو عالمی چمپئن شپ میں سونے کا تمغہ جیتنے والی پہلی ہندوستانی کھلاڑی بنیں

ہندوستان کی پی وی سندھو نے جاپان کی نوجومی اوكهارا کو اتوار کو یک طرفہ مقابلے میں 21-7، 21-7 سے شکست دے کر ورلڈ بیڈمنٹن چمپئن شپ میں طلائی تمغہ جیت کر نئی تاریخ رقم کی۔ سندھو عالمی چمپئن شپ میں سونے کا تمغہ جیتنے والی پہلی ہندوستانی کھلاڑی بن گئی ہیں۔

دیپا ملک کو کھیل رتن اور رویندر جڈیجہ سمیت 19 کو ارجن ایوارڈ دینے کا اعلان

ریو پیرا اولمپکس کی چاندی کا تمغہ فاتح پیرا کھلاڑی دیپا ملک کو ملک کے اعلی ترین کھیل اعزاز راجیو گاندھی کھیل رتن سے نوازا جائے گا جبکہ کرکٹر رویندر جڈیجہ سمیت 19 کھلاڑیوں کو باوقار ارجن انعام ملے گا۔

ٹام موڈی اور مہیلا جے وردھنے ٹیم انڈیا کے کوچ کی ریس میں شامل

  ہندوستانی کرکٹ کپتان وراٹ کوہلی ٹیم انڈیا کے نئے کوچ کے لیے روی شاستری کو ہی برقرار رکھنے کی وکالت کر چکے ہیں لیکن اس اہم عہدے کے لیے آسٹریلیا کے ٹام موڈی اور سری لنکا کے مہیلا جے وردھنے بھی دعویداروں کی دوڑ میں شامل ہیں۔