مرڈیشور آر این ایس پالی ٹکنک میں سال اول کے طلبا کے لئے استقبالیہ اور خوش آمدپروگرام

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 17th July 2017, 7:25 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:17/جولائی (ایس اؤنیوز)مرڈیشور کے آراین ایس پالی ٹکنک میں سال اول کے طلبا کے لئےمنعقدہ استقبالیہ اور خوش آمد پروگرام کا ہوناور کے صعنت کار جیوتم نایک نے افتتاح کر نے کے بعد خطاب کرتے ہوہئے کہاکہ طلبا لگاتار کٹھن محنت کریں گے تو کامیابی ان کے قدم چومے گی۔

آر این ایس تعلیمی اداروں کے ڈائرکٹر ایم وی ہیگڈے نے پروگرام کی صدارت کی۔ نائب پرنسپال کے مری سوامی نے طلبا کی ہمہ جہت ترقی میں والدین و سرپرستوں کے کردار پر روشنی ڈالی ۔ پالی ٹکنک کے پرنسپال سنتوش نے افتتاحی کلمات پیش کئے۔ الکٹرکل شعبہ کے صدر سائی دتا نے استقبال کیا تو دنیش آچاریہ نے شکریہ اداکیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر توڑ پھوڑ کا معاملہ؛ سنگھ پریوار کے کارکنوں کی گرفتاری کے خلاف انکولہ میں احتجاج۔ بھٹکل چلو ریالی کا اعلان

بھٹکل میں بلدیہ عمارت پر حملے کے بعد توڑ پھوڑ اور سرکای عمارت کو نقصان پہنچانے کے الزام میں جہاں ایک طرف پولیس متعلقہ افراد کو گرفتار کررہی ہے، وہیں پر ضلع کے مختلف مقامات پر اسے ہندو مسلم تفرقہ کا رنگ دیتے ہوئے پولیس پر الزام لگایا جارہا ہے کہ وہ بلاوجہ ہندوؤں کو ہراساں کررہی ...

مرڈیشور میں نوائط فاؤنڈیشن بنگلورو کے زیراہتمام یکم اکتوبر کو مفت طبی کیمپ کا انعقاد : عوام سے استفادہ کی اپیل

مرڈیشور نوائط فاؤنڈیشن بنگلورو کے زیرا ہتمام کمیونٹی کے مختلف مقامات پر قائم جماعتوں کے تعاون سے یکم اکتوبر کو نیشنل ہائی اسکول مرڈیشور میں صبح 10بجے سے شام 6 بجے تک فری میڈیکل کیمپ منعقد کئے جانے کی محفل کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلز میں جانکاری دی گئی ہے۔

بھٹکل میں شری درگا مورتی کی وداعی پر پابندی کی مذمت میں راشٹریہ ہندو اندولن کا میمورنڈم

مغربی بنگال میں شری درگا مورتی کی وداعی پر پابندی عائد کرنا مذہبی تفریق ہے، مرکزی حکومت فوری مداخلت کرنے کا مطالبہ لے کر راشٹریہ ہندو آندولن بھٹکل کمیٹی نے اسسٹنٹ کمشنر کے ذریعے میمورنڈم سونپا۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ دکانداروں کی جدوجہد میں شریک ہونے والوں کے خلاف درج معاملات کو رد کرنے کا مطالبہ

رام چندرنائک کی خود کشی کے بعدجو پتھراؤ ہواہے وہ ایک فطری کارروائی تھی ، اسی کے پیش نظر جدوجہد کرنےو الوں پر ڈکیتی کا کیس درج کرنا قابل مذمت ہونے کی دکانداروں نے بات کہی۔