منڈگوڈ: بچہ شادی کو سماجی سطح پر ختم کرنا سب کا فرض ہے :تحصیلدار اشوک گرانی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 19th May 2017, 8:51 PM | ساحلی خبریں |

منڈگوڈ:19/مئی (ایس اؤنیوز)محکمہ برائے خواتین واطفال اور بچہ ترقی منصوبہ منڈگوڈ ، ضلع قانونی خدمات بورڈ اور تعلقہ انتظامیہ اور ضلع بچہ تحفظ مرکز کے اشتراک سے انسداد بچہ شادی قانون 2012کے متعلقانسداد بچہ شادی افسران کے لئے جمعہ کو ایک روزہ ورکشاپ کا انعقاد تعلقہ پنچایت ہال میں کیا گیا ۔

مقامی تحصیلدار اشوک گرانی نے ورکشاپ کا افتتاح کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حالیہ دنوں میں بچہ شادی میں کافی اضافہ ہواہے، بچہ شادی کی وجہ سے بچوں کو نہ ٹھیک طرح سے تعلیم ملتی ہے نہ ان کی دیکھ بھال ہوتی ہے اور اسی وجہ سے ناخواندگی کی شرح میں اضافہ ہوتاہے۔ اس کے علاوہ بچے ذہنی و جسمانی سطح پر ٹھیک طرح سے پرورش نہیں پاتے ہیں۔ ان تمام وجوہات کی بنا سماج میں بچہ شادی کی روایت کا ازالہ لازمی ہوگیا ہے، ایک صحت منداور بہتر سماج کی تعمیر میں ہم سب اپنی ذمہ داری ادا کرنی ضروری ہے اور بچہ شادی کو سماج سے نکال باہر کرنے میں ہم سب کو متحرک ہونےکی اپیل کی۔ وکلاء انپورنا ایس بھٹ اور آر ایم ملگی کر نے اپنے مقالات کو پیش کیا۔ اس موقع پر کئی افسران موجود تھے۔ دیپا بڈیگیر نے استقبال کیا تو للتا رائیکر نے پرارتھنا کی ۔پورنیما دوڈمنی نے نظامت کی ، سریکھا ملاپور نے شکریہ اداکیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کمٹہ بلاک کانگریس دفتر کا ضلعی صدر بھیمنانائک کے ہاتھوں افتتاح

مورور کے قریب اُڈپی ہوٹل سےمتصل کمٹہ بلاک کانگریس کے دفتر کا ضلع کانگریس کمیٹی صدر بھیمنا نائک نے افتتاح کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام کی سہولت کے لئے دفتر کا افتتاح کیاگیا ہے عوام اپنی شکایات اور مسائل کو یہاں پیش کرکے حل حاصل کرسکتےہیں۔ عوامی مسائل کے سلسلے میں ہی اس ...

بھٹکل کے اتی کرم داروں کو اراضی دستاویزات میں تاخیر کرنے پرراما موگیر برہم؛ ہزاروں آتی کرم داروں کی طرف سے احتجاج کا انتباہ

بیرونی ملک سے ضلع کو آئے تبتی(ٹبیٹین)عوام کو رہائش کے لئے ضلعی انتطامیہ نے مواقع فراہم کیا ہے۔ ضلع میں ہی پیدا ہوکر پرورش پانے والوں کو زمینی دستاویز(حق پترا) دینے کے لئے افسران ہی اہم وجہ سبب ہونے کا تعلقہ اتی کرم دارر ہوراٹ سمیتی کے صدر راما موگیر نے سخت برہمی  کااظہارکیا۔

بھٹکل اسمبلی حلقے میں کھیلا جارہا ہے ایک نیا سیاسی کھیل! کون بنے گا کانگریسی اُمیدوار ؟

یہ کوئی ہنسی مذاق کی بات ہرگز نہیں ہے۔بھٹکل کی موجودہ جو صورتحال ہے اس میں ایک بڑا سیاسی گیم دکھائی دے رہاہے۔ کیونکہ 2018کے اسمبلی انتخابات کی تیاریوں میں لگی ہوئی سیاسی پارٹیاں اپنا امیدوار کون ہوگا اس پر توجہ دینے کے ساتھ ساتھ مخالف پارٹیوں سے کون امیدوار بننے پر ان کی جیت کے ...