وڈالا ٹارچر معاملے میں ہائیکورٹ نے پولس ٹریبونل سے رجوع ہونے کا مشورہ دیا دو رکنی بینچ نے کمسن کے ساتھ ہونے والے تشدد کی تصدیق کی، جمعیۃ علماء پولس ٹریبونل سے رجوع ہوگی: گلزار اعظمی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 29th September 2018, 1:25 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ممبئی،29؍ستمبر(ایس او نیوز؍پریس ریلیز)ممبئی ہائی کورٹ نے آج یہاں ایک با شرع نابالغ لڑکے محمد واجد خان کو جھوٹے مقدمہ میں پھنسا کر اس کوپولس تحویل میں شدید زدوکوب کرنے کے علاوہ اس کے ساتھ بد فعلی کرنے والے معاملے میں پولس کے خلاف دائر کی گئی عرضداشت کی سماعت کے اس کمسن کے ساتھ ہونے والے تشدد کی تصدیق کرتے ہوئے عرض گذار کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت کی جانب سے قائم کردہ پولس ٹریبونل میں مقدمہ دائر کرے جہاں اس طرح کے معاملات کی سماعت کی جاتی ہے ۔ 

ممبئی ہائی کورٹ کی دو رکنی بینچ کے جسٹس رنجیت مورے اور جسٹس بھارتی ڈانگرے نے آج جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کی عرضداشت پر کارروائی کرتے ہوئے کہا کہ میڈیکل رپورٹ اور دیگر رپورٹوں کی بنیاد پر یہ واضح ہوتا ہیکہ عرض گذار کے ساتھ تشدد کیا گیا تھا لہذا اس معاملے کی سماعت پولس ٹریبونل میں کی جانی چاہئے (پولس ٹریبونل میں پولس اہلکاروں کیخلاف داخل شکایتوں کا ازالہ کیا جاتا ہے)

واضح رہے کہ پولس اہلکاروں کی غیر انسانی حرکت کے خلاف جمعیۃ علماء کی جانب سے ایک عرضداشت داخل کی گئی تھی جس کی پیروی کرتے ہوئے گذشتہ سماعت پر ایڈوکیٹ متین شیخ نے عدالت کو بتایا تھا کہ ممبئی کے انٹاپ ہل نامی مقام پر چند پولس والے ایک نوجوان کو زدوکوب کر رہے تھے اس وقت عرض گذار بھی وہاں سے گذر رہا تھا نیز اس نے جب پولس والوں کو نوجوان کو مارتے دیکھا تو وہ بھی ایک کونے میں کھڑے ہوکر دیگر لوگوں کی طرح بڑی دلچسپی سے اسے دیکھنے لگا ۔

ایڈوکیٹ متین شیخ نے عدالت کو مزید بتلایاتھا کہ پولس اسٹیشن لے جاکر نابالغ عرض گذار کے ساتھ پولس نے جو ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے وہ ناقابل بیان ہیں یہاں تک کے اس باشرع نوجوان کو برہنہ کر کے اس کے جیب میں موجودمسواک کا غلط جگہ پر استعمال کیا گیااور اس کے ساتھ مبینہ طور پر بد فعلی بھی کی گئی۔ 

عرضداشت میں عدالت سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ خاطی پولس افسران کے خلاف سخت کارروائی کی جائے اور ان کے خلاف بھی قانون کا غلط استعمال کرنے اور نابالغ لڑکے کے ساتھ بد فعلی کرنے نیزاسے تشدد کا نشانہ بنائے جانے پر ان کے خلاف مقد مہ قائم کیا جائے ۔

آج کی سماعت مکمل ہونے کے بعدجمعیۃ علماء قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے ممبئی میں اخبارنویسوں کو بتایا کہ اب جبکہ دو رکنی بینچ نے تشدد کی تصدیق کرتے ہوئے پولس ٹریبونل سے رجوع ہونے کا مشورہ دیا ہے، جمعیۃ علماء جلد ہی حصول انصاف کے لیئے پولس ٹریبونل سے رجوع ہوگی ۔

گلزار اعظمی نے بتایا کہ ایک جانب جہاں جمعیۃ علماء خاطی پولس افسران کے خلاف کارروائی کے لیئے ہائی کورٹ سے رجوع ہوئی تھی اب پولس ٹریبونل سے بھی رجوع ہوگی نیز وہیں دوسری جانب پولس کی جانب سے واجد خان (نابالغ )کے خلاف بچوں کی عدالت (جونائل جسٹس بورڈ ) میں قائم مقدمہ میں اس کا دفاع کررہی ہے اور اس ضمن میں ایڈوکیٹ انصار تنبولی اور ایڈوکیٹ شاہد ندیم کو ذمہ درائیاں سونپی گئی ہیں جو ہر تاریخ میں جنوبی ممبئی کے ڈونگری علاقے میں قائم بچوں کی عدالت میں ملزم کا دفاع کررہے ہیں ۔

ایک نظر اس پر بھی

اشوک گہلوت کی حلف برداری تقریب میں راہل، منموہن سمیت کئی قدآور لیڈرہوں گے شامل

جے پور کے البرٹ ہال میں پیر کو کانگریس پارٹی اراکین کے لیڈر اشوک گہلوت اور ریاستی صدرسچن پائلٹ کی تاجپوشی تقریب میں کانگریس صدر راہل گاندھی، سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، ایچ ڈی دیوگوڑا سمیت کئی قدآور لیڈر شامل ہوں گے۔

بھٹکل انجمن کا طالب العلم میسور میں منعقدہ اسٹیٹ لیول پرتیبھا کارنجی مقابلے میں دوم

میسور میں منعقدہ ریاستی سطح کے پرتیبھا کارنجی اُردو تقریری مقابلہ میں بھٹکل انجمن ہائی اسکول کا طالب العلم  خبیب احمد اکرمی ابن مولانا خواجہ معین اکرمی مدنی دوسرا مقام حاصل کرنے میں کامیاب ہوگیا ہے۔

مینگلور: چار سالہ بچی کے ساتھ جنسی عمل۔عدالت نے دی ملزم کو دس سال قید بامشقت کی سزا

چار سالہ بچی کے ساتھ جنسی عمل کرنے والے ملزم چندرا شیکھر عرف راجیش (۴۹سال)کو سیکنڈ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنس اور پوکسو اسپیشل کورٹ نے دس سال قید بامشقت اور 10ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے۔

بھٹکل کے ہیبلے میں ناراض عوام نے لیا رکن اسمبلی کو آڑے ہاتھ؛ احتجاج کے باوجود رکھا گیا دو اسکولوں اور دو کالجوں کا سنگ بنیاد

بھٹکل رکن اسمبلی سُنیل نائک کو آج اتوار کو ہیبلے کے لوگوں نے اُس وقت آڑے ہاتھ لیتے ہوئے احتجاج کیا جب وہ وہاں سرکاری ہاڈی زمین پر دو اسکولوں اور دو کالجوں کا سنگ بنیاد رکھنے کے لئے پہنچے تھے۔ 

بنگلورومیٹرو برڈج میں خرابی کا نائب وزیراعلیٰ پرمیشور نے معائنہ کیا

شہر کے ایم جی روڈ پر ٹرینٹی سرکل کے قریب ایم جی روڈ بیپنا ہلی میٹرو روٹ کے پلر نمبر 155کے قریب ایک بیم میں دراڑ کا آج نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے معائنہ کیا اور کہاکہ اس سلسلے میں مرمت کا کام جاری ہے۔