صدر کے عہدے سے اڈوانی کا نام ہٹانے کے لیے مودی نے کی سوچی سمجھی سیاست :لالو پرساد یادو کا خیال

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th April 2017, 6:40 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

پٹنہ، 19؍اپریل (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا ) آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد نے آج الزام لگایا کہ سپریم کورٹ کے ذریعہ بابری مسجد شہادت کیس میں سی بی آئی کی عرضی منظور کیا جا نا اور بی جے پی کے سینئر لیڈروں لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی کے خلاف مجرمانہ سازش کے الزام کو بحال کیا جانا اڈوانی کا صدارتی امیدواری سے نام ہٹائے جانے کے لیے وزیر اعظم کی ایک سوچی سمجھی سیاست کا حصہ ہے۔پٹنہ میں صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے لالو نے الزام لگایا کہ جب سے صدر کے لیے اڈوانی کے نام کی بحث شروع ہوئی ہے، سی بی آئی نے خود سپریم کورٹ میں بابری مسجد شہادت کیس میں اڈوانی اور دیگر کے خلاف مقدمے کی سماعت شروع کرائے جانے کی اپیل کی تھی۔انہوں نے الزام لگایا کہ صدر کے عہدے کی امیدواری سے اڈوانی کا نام ہٹائے جانے کے لیے یہ نریندر مودی کی ایک سوچی سمجھی سیاست کا حصہ ہے۔اپنی دلیل کو ثابت کرنے کے لیے لالو نے الزام لگایا کہ یہ ثابت شدہ ہے کہ سی بی آئی وہی کرتی ہے جو مرکزی حکومت چاہتی ہے کیونکہ سی بی آئی مرکزی حکومت کے ماتحت ہوتی ہے۔لالو نے الزام لگایا کہ نریندر مودی کی مخالفت کرنے والے کسی بھی شخص کے خلاف خطرناک سیاسی کھیل کھیلنے میں بی جے پی اپنے پرائے کے درمیان بھی کوئی فرق نہیں کرتی ۔آر جے ڈی سربراہ سپریم کورٹ کے بابری مسجد کی شہادت معاملے میں سی بی آئی کی عرضی منظور کرنے اور بی جے پی کے سینئر لیڈران لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی کے خلاف مجرمانہ سازش کے الزام کو آج بحال کئے جانے پر اپنے ردعمل کا اظہار کر رہے تھے۔لالو نے چمپارن ستیہ گرہ صدسالہ تقریب کے موقع پر مشرقی چمپارن ضلع کے ہیڈکوارٹر موتیہاری میں بی جے پی کی طرف سے ’کسان کمبھ ‘کے انعقاد پر حملہ بولتے ہوئے اس پر ایک ہاتھ سے گاندھی جی کے مجسمہ پر گلہائے عقیدت پیش کرنے اور دوسرے ہاتھ سے ان کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کو سلامی دینے کا الزام لگایا۔

ایک نظر اس پر بھی

سواتی مالیوال نے ہڑتال ختم کی، آرڈیننس کو تاریخی جیت قرار دیا 

دہلی خواتین کمیشن کی صدر سواتی مالیوال نے 12 سال سے کم عمر کی لڑکیوں سے جنسی زیادتی کے قصورواروں کو سزائے موت سمیت ایسے جرائم کے لئے سخت سزا کی فراہمی سے متعلق آرڈیننس کے متعلق صدرجمہوریہ کی طرف سے اعلان کیے جانے کے بعد آج اپنی بھوک ہڑتال ختم کر لی۔

بھٹکل رکن اسمبلی کی کار روک کر بی جےپی کارکنان نے کی نعرے بازی

پیر کو جب دوحریف سیاسی پارٹیوں کے امیدوار پرچہ نامزدگی داخل کرنےکے دوران کچھ انہونی واقعات پیش آئے ۔ کانگریس امیدوار منکال وئیدیا اے سی دفتر میں پہلے پہنچ کر اپنا پرچہ داخل کرنےمیں مصروف تھے تو اسی وقت بی جے پی امیدوار سنیل نایک بھی اپنےلیڈران کے ساتھ پرچہ داخل کرنے کے لئے ...

بھٹکل بی جےپی میں عدم اطمینانی کا دور : امیدوار کے پرچہ نامزد گی کے دوران اہم اور سنئیر لیڈران غائب

پیر کو بی جے پی امیدوار سنیل نائک جب پرچہ نامزدگی کے لئے ہزاروں حمایتوں کے ساتھ روڈ شو کرتے ہوئے نکلے تو سابق وزیر اور بی جے پی لیڈران شیوانند نائک، سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک، بھٹکل کے ہندو برانڈ لیڈر ،بی جےپی ضلع نائب صدر گوند نائک کا نظر نہیں آنااورپروگرام کے بالکل آخر میں ...

بھٹکل رکن اسمبلی منکال وئیدیا اور بی جے پی امیدوار سنیل نائک دونوں کروڑوں جائیداد کے مالک

ریاست کے مختلف مقامات پر وزراء اور ارکان اسمبلی کی جائیداد میں دوگنا ، تگنا اضافہ ہواہے تو بھٹکل کے رکن اسمبلی منکا ل وئیدیا اپنی ذاتی سواریوں ، ڈامبر پلانٹ، ٹپر ، ہٹاچی وغیرہ کو فروخت کرتے ہوئے اپنی جائیداد میں 57،85410 روپئے کا اضافہ کر لیا ہے۔

اننت کمارہیگڈے کو فون پر ملی جان سے مارنے کی دھمکی۔سرسی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج

مرکزی وزیر برائے اسکل ڈیولپمنٹ اننت کمار ہیگڈے کو مبینہ طور پرکسی نے انجان نمبر سے فون کرکے جان سے مارنے کی دھمکی دی ، جس کے تعلق سے اننت کمار کے پرسنل اسسٹنٹ سریش شیٹی نے سرسی ٹاؤن پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی ہے۔