بھارت مشرقی ایشیا کے ساتھ تمام امور کی انجام دہی کیلئے پابندعہد: مودی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th November 2017, 12:52 AM | ملکی خبریں |

منیلا، 14؍ نومبر (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا ) آج وزیراعظم نریندر مودی نے مشرقی ایشیا میں سیاسی، سیکورٹی اور تجارتی سے متعلقہ مسائل کے حل کے بارے میں مکمل طور پر مشرقی ایشیا سربراہی اجلاس کی حمایت کرنے اور ان کے ساتھ کام کرنے کے لئے اپنے عزم کا اظہار کیا۔ مشرقی ایشیا کی سربراہی میں ایک مضبوط منطقی زون بن گیا ہے۔یہاں گروپ کے رہنماؤں کی سالانہ سربراہی اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے، وزیراعظم نے کہا کہ بھارت چاہتا ہے کہ اس خطے میں مشرق وسطی کے سربراہی اجلاس میں خصوصی کردار ادا کرے ۔ مودی نے کہا کہ ہمیں آنے والے سال میں مشرق وسطی کے سربراہی اجلاس کی اہمیت کو شدت سے محسوس کرناہوگا۔ میں خطے میں سیاسی، سلامتی اور معاشی مسائل کو حل کرنے کے لئے آپ کے ساتھ کام کرنے کے عزم کو دوبارہ دہراتا ہوں۔یشیا پیسفک خطے میں مشرقی ایشیا سربراہی اجلاس ایک اہم پلیٹ فارم ہے۔ 2005 کے آغاز میں قائم گروپ نے مشرقی ایشیا کے اسٹریٹجک، سیاسی اور اقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ مشرقی ایشیا سربراہی اجلاس میں چین، جاپان، کوریا کے جمہوریہ، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ، ریاستہائے متحدہ امریکہ اور روس سمیت 10 آسیان ممالک شامل ہیں۔مودی نے کہا کہ آسیان اس کام کو شروع کررہا تھا جب عالمی ڈویزن زیادہ تھا لیکن امید ہے کہ امن اور خوشحالی کی علامت کے طور پر آسیان کا ذکر کیا جائے گا ۔ کانفرنس میں، رہنماؤں نے دہشت گردی، افغانستان کی صورتحال اور شمالی کوریا کے ایٹمی اور میزائل ٹیسٹ کے دوسرے مسائل کے بارے میں بات چیت کریں گے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

گجرات:بی جے پی میں بڑی بغاوت کے آثار،ٹکٹ کٹنے پراستعفوں کی دھمکی،اعلیٰ قیادت پرامیدوارتبدیل کرنے کادباؤ

بی جے پی کے ٹکٹ کی تقسیم کے بعد شروع ہونے والی بغاوت تھمنے کانام نہیں لے رہی ہے۔ پارٹی کے اعلیٰ کمان دفترتک پہنچنے کے بعد بی جے پی کے کارکنان نے اپنا احتجاج کرناشروع کردیا۔