جنگی بحری جہاز کی ٹکر کے بعد لاپتہ ہونے والے امریکی بحری اہلکار ہلاک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 19th June 2017, 1:46 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن،18؍جون(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)امریکی نیوی اور جاپان کے میڈیا کا کہنا ہے کہ امریکہ کا جنگی بحری جہاز جاپان کے ساحل کے قریب ایک تجارتی جہاز سے ٹکرانے کے نتیجے میں جہاز کے عملے کے لاپتہ سات اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔یہ واقعہ سنیچر کی علی الصبح پیش آیا تھا جس کے بعد لاپتہ ہونے والے سات اہلکاروں کی تلاش شروع کر دی گئی تھی جبکہ زخمی ہونے والے تین اہلکاروں کو ہیلی کاپٹر کی مدد سے وہاں سے نکال لیا گیا تھا۔امریکی نیوی کا کہنا ہے کہ امدادی کارکنوں کو جہاز کے تباہ شدہ حصوں تک رسائی حاصل کرنے کے بعد لاپتہ ہونے والے سات اہلکاروں کی لاشیں اتوار کو ملیں۔

امریکی نیوی کے مطابق ملنے والی لاشوں کو جاپان کے ہسپتال لے جایا گا جہاں ان کی شناخت ہو گی۔خیال رہے کہ امریکی بحریہ کا جنگی جہاز سنیچر کو جاپان کے جنوب مغربی ساحل یوکوسوکا سے 56ناٹیکل میل یعنی 103کلومیٹر دور اے سی ایکس کرسٹل نامی تجارتی جہاز سے مقامی وقت کے مطابق صبح ڈھائی بجے ٹکرا گیا تھا۔جاپان کے وائس ایڈمرل جوزف کا اتوار کو ایک پریس کانفرس میں کہنا تھا کہ وہ یہ نہیں کہہ سکتے کہ ابھی تک کتنے افراد کی باقیات ملی ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اہلکاروں کے خاندانوں کو اس بارے میں مطلع کیا جا رہا ہے۔اس حادثے کے نتیجے میں امریکی جنگی بحری جہاز کو شدید نقصان پہنچا تھا۔

ٹوکیو سے بی بی سی کے نامہ نگار نے بتایا تھا کہ جس جگہ یہ ٹکر ہوئی وہ انتہائی مصروف راستہ ہے جہاں سے جہاز ٹوکیو خلیج کی جانب آمدورفت کرتے ہیں۔امریکی بحری جہاز دنیا کے جدید ترین جنگی جہازوں میں سے ایک ہے اور اس کے پاس انتہائی جدید ریڈار نظام ہے اور اب اس بارے میں بہت سے سوالات ہوں گے کہ آخر اس کا عملہ اس ٹکر سے بچنے میں ناکام کیوں رہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کابل:حسّاس سفارتی زون میں راکٹ حملہ

افغانستان میں پولیس نے بتایا ہے کہ پیر کی شام افغان دارالحکومت کابل میں ایک راکٹ سخت پہرے والے سفارتی زون میں آ کر گرا۔یہ واقعہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے افغانستان کے حوالے سے اپنی حکمت عملی کے بارے میں متوقع اعلان سے چند گھنٹے قبل پیش آیا۔

ISنے کیا شفیع ارمارکے شام میں مارے جانے کا اعلان؛ پہلے بھی عام ہوئی تھی مرنےکی خبر

کچھ عرصے پہلے میڈیا میں یہ خبر عام ہوئی تھی کہ بھٹکل سے تعلق رکھنے والے شفیع ارمار کو شام میں سرگرم دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کا اہم ترین ایجنٹ ہونے کی وجہ سے امریکہ نے اسے دنیا کامطلوب ترین دہشت گرد global terrorist قرار دیا ہے۔