’’یہاں نابالغ بچیاں رہتی ہیں، بی جے پی اراکین ووٹ مانگنے کے لئے گیٹ کے اندر نہ آئیں!‘‘۔کیرالہ میں گھروں کے باہر لگ گئے پوسٹرس

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th April 2018, 9:44 PM | ساحلی خبریں | ملکی خبریں |

کوچی 14؍اپریل (ایس او نیوز) اتر پردیش کے اُناؤ اورجموں کے کٹھوا میں ہوئے عصمت دری معاملات میں بی جے پی لیڈروں کی شمولیت کی خبریں میڈیا میں عام ہونے اور اناؤ عصمت دری کیس کے اصل ملزم بی جے پی رکن اسمبلی کو گرفتار کیے جانے کے بعد کیرالہ کے بعض گھروں کے باہر انوکھے طرز کے پوسٹرز چسپاں کیے گئے ہیں، جس میں بی جے پی پر سیدھا نشانہ سادھا گیا ہے۔

سوشیل میڈیا پر وائرل ہوئی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ انگریزی اور ملیالم زبان میں گھروں کے داخلی گیٹس کے پاس والی دیواروں میں جو پوسٹرز ہیں اس میں لکھا ہے کہ :’’اس خاندان میں نابالغ بچیاں رہتی ہیں۔ بی جے پی اراکین ووٹ مانگنے کے لئے گیٹ کے اندر داخل نہ ہوں۔#بلاتکاری جنتا پارٹی‘‘ اس طریقے سے بی جے پی کے راج میں نابالغ بچیوں کے محفوظ نہ ہونے کے پیغام کو عام کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

یاد رہے کہ اناؤ اجتماعی عصمت دری کیس میں بی جے پی کے رکن اسمبلی کو کلیدی ملزم بنایاگیا ہے اور اس کے بھائی و دیگر لوگوں کو بھی اس گھناؤنے جرم میں ملوث بتایا گیا ہے۔متاثرہ لڑکی کی طرف سے یوپی کے وزیراعلیٰ آدتیہ ناتھ کو چٹھی لکھ کر اپنی بپتا سنانے کے باوجود ملزم رکن اسمبلی کے خلاف کوئی اقدام نہیں کیا گیا تھا۔ الٹے متاثرہ لڑکی کے باپ کو گرفتار کرکے پولیس کسٹڈی کے دوران ہلاک کیے جانے کا الزام بھی سامنے آیاہے۔

الہ آباد ہائی کورٹ کی مداخلت کے بعد ملزم رکن اسمبلی کو سی بی آئی نے ایک دن پہلے گرفتارکرلیا ہے۔

جبکہ جموں کے ایک علاقے میں بنجاروں کی بستی سے آٹھ سالہ معصوم بچی آصفہ کو اغواکرکے گینگ ریپ کرنے کے بعدجس حیوانی طریقے سے اس کی لاش کو چیرپھاڑ کر رکھ دیا گیا تھا، اس سے پورے ملک میں غم وغصہ کی لہر دوڑ گئی۔ طرفہ تماشہ تو یہ ہوا کہ مندر کے گربھ گڑھی (حجرہ مقدس ) میں قید رکھ کر مسلم بچی کے ساتھ حیوانیت کا سلوک کرنے والے ملزموں کے حق میں بولنے اور ان کا دفاع کرنے کے لئے بی جے پی کے اراکین اسمبلی اور دیگر لیڈروں نے محاذ بنایا۔پولیس کو ملزموں کے خلاف چارج شیٹ داخل کرنے سے روکنے کے لئے غیرمسلم وکیلوں نے مورچہ کھڑا کیا۔ جب یہ سارے حقائق میڈیا کے ذریعے عام ہوئے تو زندہ ضمیر شہریوں کی جانب سے ہندوستان کے کونے کونے سے اس کے خلاف آوازیں بلند ہوئیں۔

بی جے پی کی اخلاقی پستی اور کردار کے کھوکھلے پن کے خلاف احتجاج اور اپنا ردعمل ظاہر کرنے کا جو سلسلہ چل پڑا ہے ،اسی کی ایک انوکھی مگر بہت ہی معنی خیز کڑی کیرالہ میں گھروں کے باہر لگے یہ پوسٹرزہیں۔اور یہ پیغام سوشیل میڈیا کے ذریعے ملک گیر پیمانے پر پھیل گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوسماج اتسوا کے بعد کاسرگوڈ میں فرقہ وارانہ تشدد۔ پولیس نے کیا لاٹھی چارج

اتوار کے دن یہاں منعقدہ ہندوسماج اتسوا میں شرکت کے بعدواپس لوٹنے والوں پر سنگ باری کا الزام لگاتے ہوئے شرپسندوں نے مختلف مقامات پرموٹر گاڑیوں پر پتھراؤ شروع کیا جس کے بعد پولیس نے مداخلت کرتے ہوئے لاٹھی چارج کیااور صورتحال پر قابو پالیا۔

بھٹکل انجمن کا طالب العلم میسور میں منعقدہ اسٹیٹ لیول پرتیبھا کارنجی مقابلے میں دوم

میسور میں منعقدہ ریاستی سطح کے پرتیبھا کارنجی اُردو تقریری مقابلہ میں بھٹکل انجمن ہائی اسکول کا طالب العلم  خبیب احمد اکرمی ابن مولانا خواجہ معین اکرمی مدنی دوسرا مقام حاصل کرنے میں کامیاب ہوگیا ہے۔

مینگلور: چار سالہ بچی کے ساتھ جنسی عمل۔عدالت نے دی ملزم کو دس سال قید بامشقت کی سزا

چار سالہ بچی کے ساتھ جنسی عمل کرنے والے ملزم چندرا شیکھر عرف راجیش (۴۹سال)کو سیکنڈ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنس اور پوکسو اسپیشل کورٹ نے دس سال قید بامشقت اور 10ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے۔

رام مندرپراپنا رخ واضح کرے، تین ریاست جیتنے پرخوش نہ ہوں: اندریش کمار

آرایس ایس لیڈراورمسلم راشٹریہ منچ کے سربراہ اندریش کمارنے کہا ہے کہ اپوزیشن رام مندرپراپنا موقف واضح کرے، یہ نہ سوچیں کہ دوتین ریاست جیت لیا ہے، تو آنے والے دنوں میں بھی انہیں جیت ملے گی۔ انہوں نے واضح لفظوں میں وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ 2019 لوک سبھا الیکشن میں ایسا کچھ نہیں ...

سکھ مخالف فسادات: سجن کمار کو عمرقید، فیصلہ سناتے ہوئے رو پڑے جج۔ یہ معاملہ اس وقت کی وزیر اعظم اندرا گاندھی کے قتل کے بعد یکم نومبر 1984 کا ہے

 1984 کے سکھ مخالف فسادات معاملے پر دلی ہائی کورٹ نے فیصلہ الٹ دیا ہے۔ کانگریس لیڈر سجن کمار کو عمرقید کی سزا سنائی گئی ہے۔ انہیں 31 دسمبر تک خودسپردگی کرنا ہوگی۔ عمرقید کے علاوہ سجن کمار پر پانچ لاکھ روپئے کا جرمانہ کا بھی عائد کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ باقی مجرموں کو جرمانہ کے طور ...

رافیل معاملہ: جھوٹی رپورٹ کی بنیاد پرسپریم کورٹ کا آیا فیصلہ، مرکز پرتوہین عدالت کا معاملہ درج ہو: کانگریس

فرانس کے ساتھ ہوئے رافیل لڑاکو جہاز سودے کو لے کرسیاسی رسہ کشی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ کانگریس نے مرکزی حکومت کی طرف سے سپریم کورٹ کے فیصلے میں حقائق میں سدھارکرنے والی عرضی کو لے کرایک بارپھرسے تنقید کی ہے۔

کانگریس کے تین لیڈران آج وزیر اعلیٰ کی حیثیت سے لیں گے حلف، نظر آئے گی حزب مخالف کی طاقت

مدھیہ پردیش، راجستھان اور چھتیس گڑھ میں کانگریس کے تین لیڈران آج وزیر اعلی کا حلف لیں گے۔ مدھیہ پردیش میں کمل ناتھ، چھتیس گڑھ میں بھوپیش بگھیل اور راجستھان میں اشوک گہلوت وزیر اعلیٰ کے عہدہ کے لئے حلف لیں گے۔