جموں کشمیر: کپواڑہ انکاؤنٹر میں ایک ملیٹنٹ ہلاک، ہتھیاراور گولہ بارود بر آمد

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th July 2018, 1:15 AM | ملکی خبریں |

سری نگر،12جولائی (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)جموں وکشمیر کے کپواڑہ میں ہندوستانی فوج اور ملیٹنٹوں کے درمیان انکاؤنٹر ہوا۔ اس انکاؤنٹر میں ایک ملیٹنٹ ہلاک ہو گیا۔ ملیٹنٹ کی لاش کے علاوہ ہندستانی فوج نے ہتھیار اور گولہ بارود بھی بر آمد کئے ہیں۔

بتا دیں کہ بدھ کو ہی جموں۔ کشمیر کے کپواڑہ ضلع میں سکیورٹی فورسز اور ملٹینٹوں کے درمیان انکاؤنٹر میں پیرا کمانڈو کا ایک جوان شہید ہو گیا تھا۔ ا س انکاؤنٹر میں ایک دیگر جوان شدید طور پر زخمی ہوا۔ جوان کا علاج اسپتال میں چل رہا ہے جہاں اس کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔

بدھ کو سکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کر لیا تھا اور تلاشی مہم تیز کر دی تھی۔ ایسے میں جمعرات کو سکیورٹی فورسز کو کامیابی حاصل ہوئی۔
 

ایک نظر اس پر بھی

سوامی اگنی ویش معاملہ: بی جے پی یوا مورچہ کے ضلع صدر سمیت آٹھ کے خلاف ایف آئی آر

بندھوا مکتی مورچہ کے بانی اور سماجی کارکن سوامی اگنی ویش کے ساتھ مارپیٹ کے معاملے میں بھارتیہ جنتا یوا مورچہ (بھاج یومو) كے ضلع صدر سمیت کسان مورچہ اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے آٹھ کارکنان کے خلاف کل سٹی تھانے میں ایف آئی آر درج کی گئی۔

22سالہ بیٹے کے ساتھ50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے گریجویشن کی ڈگری حاصل کی

تعلیم حاصل کرنے کی کوئی عمرنہیں ہوتی۔ یہ سچ کرکے دکھایا ہے ممبئی کے50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے ۔ فاروق شیخ نے پچاس کی عمر میں اپنے 22 سالہ بیٹے کے ہمراہ کامرس میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی ہے۔

ڈھائی سال کے انس بھی بنیں گے حاجی، اپنے والدین کے ساتھ حج بیت اللہ کے لیے روانہ

ہندوستانی عازمین حج کی روانگی کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ پہلا قافلہ روانہ ہوگیا ہے اور اب روزانہ بڑی تعداد میں عازمین روانہ ہوں گے۔ تاہم پہلے قافلہ میں ایک ایک ڈھائی سال کا بچہ اندرا گاندھی انٹرنیشنل ایئر پورٹ ٹرمنل -2 پر لوگوں کی توجہ کا مرکز بن گیا۔

اقلیتی طلباء کے لیے اسکالرشپ اسکیمیں جاری رکھنے کوکابینہ کی منظوری

چھ نوٹیفائیڈاقلیتی فرقوں کے طالب علموں کی پری میٹرک، پوسٹ میٹرک اور صلاحیت و وسائل کی بنیاد پر مرتب کردہ اسکالرشپ اسکیموں کو جاری رکھنے کی تجویز آج وزیراعظم نریندر مودی کی صدارت میں اقتصادی امور کی کابینی کمیٹی نے منظوری دے دی۔

تین مسلم نوجوان دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث ہونے کے الزامات سے بری 

مسلم نوجوانوں کو قانونی امدادفراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علمائے مہاراشٹر (ارشد مدنی) کو آج اس وقت ایک بار پھر کامیابی حاصل ہوئی جب کرناٹک کے شہربلاری کی نچلی عدالت نے تین مسلم نوجوانوں کو دہشت گردی کے الزامات سے باعزت بری کردیا۔