وجئے ملیا نے جیٹلی سے ملاقات کی تھی! بقایاقرض ادا کرنے کی پیشکش کا دعویٰ۔ مفرور کاروباری کا بیان حقائق کے برعکس: وزیر خزانہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th September 2018, 11:23 AM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

لندن13؍ستمبر (ایس او نیوز؍ پی ٹی آئی ) ہندوستان کی سرکردہ بینکوں سے کروڑوں کا قرض لے کر فرار ، شراب کے کاروباری وجئے ملیا حوالگی معاملے میں چہارشنبہ کو لندن کے ویسٹ منسٹر کورٹ میں پیش ہوئے۔سماعت کے دوران ججوں نے ہندوستانی حکام کی جانب سے ممبئی کی آرتھر روڈ جیل میں ملیا کے لئے کی گئی تیاری کا ویڈیو دیکھا۔ویسٹ منسٹر کورٹ کے ججوں نے بیرک کا تین بار ویڈیو دیکھا۔ دریں اثناء بھگوڑے وجئے ملیا نے بڑا دعویٰ کیا ہے کہ ہندوستان چھوڑنے سے قبل انہوں نے وزیر مالیات ارون جیٹلی سے ملاقات کی تھی اور تقریباً 9,000کروڑ روپئے کے قرض سے متعلق تمام معاملوں سے نمٹنے کی پیشکش کی تھی لیکن بینکوں نے ان کے تصفیہ اور ادائیگی پر سوال کھڑے کئے تھے۔ارون جیٹلی نے وجئے ملیا کے دعوؤں کو بے بنیاد قرار دے کر مسترد کردیا ہے ۔ ملیا کے وکیل نے عدالت کوبتایا کہ ابھی تک ایسے کوئی ثبوت نہیں ملے ہیں، جن کی بنیاد پر یہ کہا جاسکے کہ ملیا یا کنگ فشر نے کسی بدنیتی سے بینکوں سے قرض لیا تھا۔ کنگ فشر کو مالی طور پر مضبوط کمپنی باور کرتے ہوئے قرض لیا گیاتھا۔ وکیل نے کنگ فشر کے خسارے کوکاروباری ناکامی قرار دیتے ہوئے دعویٰ کیا کہ ملیا نے جو کچھ بھی کیا ہے وہ برطانیہ میں جرم نہیں مانا جاتا۔ قبل ازیں عدالت میں داخل ہوتے ہوئے ملیا نے نامہ نگاروں سے کہا کہ ’’ میں نے معاملے کے پوری طرح سے تصفیہ کے لئے کرناٹک کورٹ میں اپیل کی ہے اور مجھے امید ہے کہ معزز جج اس پر توجہ دیتے ہوئے ہمارے موقف میں فیصلہ سنائیں گے ‘‘۔

جیٹلی نے ملاقات پر صفائی دی: وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے ملیا سے ملاقات پر صفائی پیش کرتے ہوئے کہاکہ میری جانب سے انہیں ملاقات کے لئے وقت نہیں دیا گیا۔حالانکہ پارلیمان میں انہوں نے مجھ سے بات کی تھی اور معاملے کونپٹانے کی پیشکش کی تھی۔میں نے ان کی پیشکش کوٹھکراتے ہوئے کہاکہ اس بار ے میں کوئی بات چیت نہیں ہوسکتی اور میں نے ان سے کسی طرح کی دستاویز نہیں لی جو وہ اپنے ساتھ لے کر آئے تھے۔ علاوہ ازیں حکومت کے ذرائع نے ملیا سے کسی بھی وزیر کی ملاقات کی خبر کوخارج کردیا۔حکومت کی جانب سے کہاگیا ہے کہ ملک چھوڑنے سے پہلے وجئے ملیا نے وزیراعظم سے ملنے کا وقت مانگا تھا لیکن مصروفیت کی بنا پر انہیں وقت نہیں دیا گیا تاہم پارلیمان کی راہداری میں ایک مرتبہ ملیا نے جیٹلی سے ملاقات کی کوشش کی تھی۔ جیٹلی نے کہا’’وجے ملیا کا مجھ سے ملنے اور قرض نپٹانے کی پیشکش کی بات حقائق طور پر غلط ہے کیونکہ یہ حقیقت سے پرے ہے ‘‘۔ انہوں نے کہا کہ سال 2014 کے بعد سے انہوں نے ملیا کو کبھی ملنے کے لئے وقت نہیں دیا اس لئے اس سے ملنے کا سوال ہی نہیں پیدا ہوتا۔وزیر خزانہ نے کہا کہ راجیہ سبھا کے رکن ہونے کی وجہ سے ملیا کبھی کبھار پارلیمنٹ آ جاتے تھے اور ایک دن انہوں نے اچانک پارلیمنٹ کے گلیارے میں ان کے پاس آ کر کہا کہ وہ بینکوں سے لئے گئے قرض کو نپٹانے کے بارے میں کچھ پیشکش کرنا چاہتے ہیں۔ جیٹلی نے کہا’’مجھے ملیا کے جھوٹ کے بارے میں پہلے بتایا جا چکا تھا اور اس وجہ سے میں نے اخلاقاً ان سے کہاکہ مجھ سے بات کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے ۔ آپ کو اپنے بینکروں سے بات کرنی چاہیے ۔ مجھے پتہ تھا کہ بینکوں کا قرض ادا کرنے کا اس کا کوئی منشا نہیں ہے ‘‘۔جیٹلی نے کہا کہ ملیا اپنے ساتھ جو کاغذات لے کر آئے تھے وہ بھی انہوں نے نہیں لیے ۔ ملیا نے اس موقع کا راجیہ سبھا رکن ہونے کی وجہ سے غلط فائدہ اٹھایا لیکن میں نے ان سے صرف ایک جملہ کہا۔ اس کے علاوہ کبھی بھی نہ تو ان کے دفتر میں اور نہ گھر پر انہیں ملنے کا وقت دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

سابق ایم پی پرفل کمار مہیشوری کی موت

راجیہ سبھا کے سابق رکن، یونائٹیڈ نیوز آف انڈیا)(یو این آئی) کے چیرمین (ایمریٹس)اور نوبھارت اخبار گروپ کے چیف ایڈیٹر پر فل کمار مہیشوری کا یہاں انتقال ہوگیا۔

بھارت۔ تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم تائیپی میں شروع 

vایم ایس ایم ای کے سکریٹری ڈاکٹر ارون کمار پانڈا 13 سے 17 نومبر 2018 تک چلنے والے بھارت 150 تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم کے اجلاس میں بھارتی وفد کی قیادت کررہے ہیں۔ فورم میں کل اپنے افتتاحی کلمات میں ڈاکٹر پانڈا نے کہا کہ بھارت میں ایم ایس ایم ای کی پوزیشن کلیدی اہمیت کی حامل ہے

شمالی کوریا کا میزائل پروگرام جاری ہے، رپورٹ

ایک امریکی ریسرچ آرگنائزیشن نے کہا ہے کہ اس نے شمالی کوریا کے میزائلوں سے متعلق ایسے 13 مقامات کا پتا لگایا ہے جن کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ یہ اس بات کی تازہ ترین علامت ہے کہ شمالی کوریا کو اس کے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار کرانے کی امریکی کوشش تعطل کا شکار ہو گئی ہے۔

غیر ملکی طلبہ کی امریکہ میں دلچسپی کیوں گھٹ رہی ہے؟

غیر ملکی طالب علموں کی آمد سے امریکی معیشت کو ہر سال42 ارب ڈالر کا فائدہ ہوتا ہے اور روزگار کی منڈی میں ساڑھے چار لاکھ ملازمتیں پیدا ہوتی ہیں۔ غیر ملکی طالب علم امریکی معیشت کے لئے بے بڑی اہمیت رکھتے ہیں۔

ہندوستان ڈیجیٹل فروغ اورترقی کے دورسے گذررہاہے ، سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں وزیراعظم کاخطاب

وزیراعظم نے سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ ہندوستان پر چھاجانے والے مالیاتی انقلاب اور ہندوستان کے 1.3 ارب عوام کی زندگی میں بہتر تبدیلیوں کا اعتراف ہے۔ہندوستان اور سنگاپور ہندوستانی اور آسیان ملکوں کے چھوٹے اور اوسط درجے کے کاروباری اداروں کوایک ...

سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے وزیراعظم نریندر مودی کی ملاقات

وزیر اعظم نریندر مودی نے بدھ کو سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں نے مالیاتی ٹیکنالوجی میں تال میل اور علاقائی اقتصادی اتحاد سمیت کئی مسائل پر بات چیت کی۔ مودی نے فنٹیس فیسٹیول سے خطاب کر کے بدھ کو دو روزہ سنگاپوردورہ کا آغاز کیا ۔یہ فیسٹیول مالیاتی ...