میرٹھ لو جہاد: ہندو لڑکی نے مسلم لڑکے سے کی محبت تو پولس نے کر دی پٹائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th September 2018, 2:00 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

میرٹھ،26؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) لو جہاد جیسے معاملوں میں اتر پردیش کی بی جے پی حکمراں ریاست کی پولس بھی فرقہ وارانہ ذہنیت کی حامل نظر آنے لگی ہے۔ اس کی تازہ مثال ایک وائرل ویڈیو ہے جس نے یو پی پولس کی شبیہ کو بری طرح داغدار کر دیا ہے۔ دراصل منگل کو سوشل میڈیا پر وائرل ایک ویڈیو میں میرٹھ پولس کے جوان ایک ہندو لڑکی سے نہ صرف مار پیٹ کرتے ہوئے نظر آ رہے ہیں بلکہ وہ اس کے ساتھ غیر انسانی سلوک اور غیر اخلاقی زبان کا استعمال کرتے ہوئے بھی نظر آ رہے ہیں۔ ایسا وہ اس لیے کر رہے ہیں کیونکہ لڑکی نے مسلمان لڑکے سے محنت کرنے کا گناہ کیا ہے۔ حالانکہ اس ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد واقعہ میں شامل ایک خاتون پولس اہلکار سمیت 4 پولس والوں کو معطل کر دیا گیا ہے، لیکن معاملہ سامنے آنے کے بعد پولس کٹہرے میں کھڑی نظر آ رہی ہے۔

پولس جیپ میں بنائے گئے 19 سیکنڈ کے اس ویڈیو میں چار پولس اہلکار کے ساتھ متاثرہ لڑکی بیٹھی نظر آ رہی ہے۔ ویڈیو میں دو پولس اہلکار آگے کی سیٹ پر ہیں جب کہ پیچھے کی سیٹ پر دو پولس اہلکار کے درمیان متاثرہ لڑکی بیٹھی ہے۔ اس کی دائیں جانب ایک خاتون پولس اہلکار ہے۔ ویڈیو میں آگے بیٹھا پولس اہلکار اس لڑکی سے کہتا نظر آ رہا ہے کہ ’’تجھے مُلّے زیادہ پسند آ رہے ہیں جو تو ہندو ہوتے ہوئے مسلم لڑکے کے ساتھ رہ رہی ہے۔ تجھے شرم نہیں آتی...۔‘‘ اس پر متاثرہ لڑکی کہتی ہے کہ ’’نہیں انکل ایسا نہیں ہے۔‘‘ لیکن اتنے میں ہی لڑکی کے بغل میں بیٹھی خاتون پولس اس پر تھپڑوں کی بارش کر دیتی ہے۔ خاتون پولس متاثرہ کو کافی زور سے کئی تھپڑ مارتی ویڈیو میں صاف نظر آ رہی ہے۔

دراصل یہ واقعہ اتوار کا ہے جب الگ الگ مذہب سے تعلق رکھنے والی لڑکی اور لڑکا ایک ساتھ کمرے میں پڑھائی کر رہے تھے۔ دونوں ہی میڈیکل کے طالب علم تھے۔ جب دونوں کمرے میں تھے تو اچانک وشو ہندو پریشد کے کارکنان نے انھیں پکڑ لیا اور لو جہاد کا نام دے کر نہ صرف ان کے ساتھ مار پیٹ کی بلکہ لڑکی کے ساتھ زد و کوب بھی کیا۔ وی ایچ پی کارکنان صرف اتنے پر ہی نہیں رکے۔ وہ دونوں کو گھسیٹتے ہوئے پولس اسٹیشن لے گئے اور وہاں پولس کے خلاف نعرے بازی کرنے لگے۔ الزام ہے کہ وہاں پر تو پولس نے لڑکی کو وی ایچ پی کارکنان سے بچا لیا لیکن خود ہی پ ولس جیپ میں اس کے ساتھ مار پیٹ اور بدسلوکی کی۔ اتنا ہی نہیں، پولس والوں نے اپنی اس حرکت کا ویڈیو بھی بنایا جو آج سوشل میڈیا پر وائرل ہو گیا۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق اتوار کو پیش آئے اس واقعہ کے بعد پولس نے وی ایچ پی کارکنان پر کوئی کارروائی کرنا تو دور، الٹے متاثرہ لڑکی اور اس کے دوست کو ہی حراست میں لے لیا۔ بعد میں پولس نے دونوں کے گھر والوں کو تھانہ میں بلا کر لڑکی اور لڑکے کو ان کے حوالے کر دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی ،خواتین کے حامی یا اکبرکے طرفدار؟ جنسی استحصال کے الزام کے خلاف مقدمہ درج کرانے پر کانگریس نے وزیراعظم کو گھیرا

کانگریس نے وزیر مملکت برائے امور خارجہ ایم جے اکبر پر لگنے والے جنسی استحصال کے الزامات کو انتہائی سنگین قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ملک کی خواتین کے احترام کا معاملہ ہے اور وزیر اعظم نریندر مودی کو اس پر خاموشی توڑکر اپنا رخ واضح کرناچاہیے۔

دہلی این سی آر میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے ہنگامی منصوبہ لاگو

دہلی این سی آر میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے ایک ہنگامی منصوبہ پیر کو لاگو کیا گیا ہے جس میں مشینوں سے سڑکوں کی صفائی اور اس علاقے کے بھیڑ بھاڑ والے علاقوں میں گاڑیوں کے ہموار ٹریفک کے لئے ٹریفک پولیس کی تعیناتی جیسے اقدامات شامل ہوں گے۔

ریاستی وزارت سے مہیش کا استعفیٰ منظور

پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس اور بی ایس پی کے درمیان مفاہمت کی کوشش ناکام ہوجانے کے نتیجے میں ریاستی کابینہ سے استعفیٰ دینے والے بی ایس پی کے وزیر این مہیش کو استعفیٰ واپس لینے کے لئے منانے میں جے ڈی ایس قیادت کی کوشش ناکام ہوجانے کے بعد آج وزیراعلیٰ نے مہیش کا ...

ای اسٹامپ پیپر اب آن لائن دستیاب ہوگا

کسی طرح کے دستاویزات تیار کرنے کے لئے درکار ای اسٹامپ کاغذ کی دستیابی اب تک ایک بہت بڑا مسئلہ ہوا کرتی تھی، 100 روپے کے اسٹامپ پیپر کے لئے بھی بھاری رقم ادا کرکے اسے حاصل کرنا پڑتا تھا،

ساحلی علاقے میں موسلادھار بارش۔ آسمانی بجلیوں سے نقصانات

ساحلی علاقے میں اور خاص کر جنوبی کینرا ضلع میں اتوار کی شام سے رات دیر گئے تک زبردست بارش ہوئی ہے۔ بادلوں کی گھن گرج کے ساتھ بجلیوں کے کڑکنے کا سلسلہ بھی جاری رہا اور بعض مقامات پر بجلی گرنے سے گھروں کونقصان پہنچنے کی اطلاعات بھی ملی ہیں۔

بھٹکل میں زائد منافع کالالچ دے کر 100کروڑ سے زائد رقم کی دھوکہ دہی کا الزام : کمپنی مالکان کے گھروں کا گھیراؤ اور احتجاج

شہر کے آزاد نگر میں واقع فلالیس نامی کمپنی کے مالکان  پر سو کروڑ سے زائد رقم لے کر فرار ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے  سینکڑوں لوگوں نے آج اُن  کے مکانوں  کا گھیراو کیا اور اپنی رقم واپس دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا۔  احتجاجیوں کا کہنا تھا کہ   فلالیس نامی جعلی کمپنی ...