مہا گٹھ بندھن سے قبل مایاوتی کا عندیہ ، قابل اعزاز سیٹیں ملیں تبھی بنے گی بات: مایا وتی

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 25th July 2018, 1:31 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی:24/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)اتر پردیش کی سابق وزیر اعلی اور بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی نے منگل کو موب لنچنگ کے معاملے پر مرکز کی نریندر مودی حکومت اور بھارتیہ جنتا پارٹی پر برستے ہوئے اچانک لوک سبھا انتخابات 2019 کا ذکر کیا اور کانگریس کو بھی وارننگ دے ڈالی۔موب لنچنگ کو لے کر بی جے پی کو مجرم بتانے کے ساتھ ساتھ مایاوتی نے عام انتخابات 2019 کا بھی ذکر کیا اور اپوزیشن اتحاد کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پارٹی اسی صورت میں مخلوط حکومت میں شامل ہوگی، جب انہیں لوک سبھاسیٹوں میں قابل تکریم سیٹیں دی جائیں گی ۔انہوں نے خبردار کیا کہ جو کانگریس لیڈر راجستھان، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ میں بی ایس پی سے اتحاد کو لے کر ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں، انہیں یاد رکھنا چاہئے کہ ان پر بھی یوپی میں وہی شرائط نافذ ہوتی ہیں۔اس وقت دہلی میں موجود مایاوتی نے اس کے علاوہ کہا کہ موب لنچنگ مجرمانہ ذہنیت والے بی جے پی ارکان اور حامیوں کا کام ہے، لیکن وہ اسے حب الوطنی وطن سمجھتے ہیں۔ میں الور میں ہوئے انسانیت سوز واقعہ کی مذمت کرتی ہوں، لیکن مجھے یقین ہے کہ بی جے پی اس صورت میں مناسب کارروائی نہیں کر پائے گی میں کورٹ سے درخواست کرتی ہوں کہ وہ از خود مداخلت کرے۔مایاوتی نے صاف صاف کہا کہ موب لنچنگ کی واردات پر مرکزی حکومت کچھ نہیں کرے گی اور گؤ کشی کے نام پر انسانوں کی جان یوں ہی جاتی رہے گی۔انہوں نے الزام لگایا کہ BJP ملک کا ماحول بگاڑ رہی ہے اور کورٹ کو ایسے معاملات میں خود نوٹس لینا چاہئے۔ ان واردات کو لے کر مایاوتی نے کہا کہ بی جے پی کی نیت ،کردار اور چہرہ سامنے آ گیا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی آفس کے پاس پھر سوامی اگنی ویش کی پٹائی

بی جے پی آفس کے پاس جمعہ کو سوامی اگنی ویش کی پھر سے پٹائی ہوئی ۔ ایک خاتون نے ان کے اوپر چپل پھینک کر مارا جبکہ کئی لوگ انہیں مارنے کی کوشش کر رہی رہے تھے کہ پولس نے بچاو کرتے ہوئے انہیں اپنی گاڑی میں بیٹھا کرلے کر چلی گئی۔

کووند ،مودی ،پرنب ،منموہن ،سونیا نے واجپئی کو خراج عقیدت پیش کیا

صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند،وزیراعظم نریندرمودی ،سابق صدرجمہوریہ پرنب مکھرجی ،سابق وزیراعظم منموہن سنگھ ،سابق نائب وزیراعظم لال کرشن اڈوانی ،ترقی پسند اتحاد کی چیئرپرسن سونیاگاندھی ،مرکزی وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ ،وزیرخارجہ سشما سوراج ،کئی وزرائے اعلی ،رہنماؤں اور سرکردہ ...

بتیامیں شرپسندوں کے ذریعہ مسجدومدرسہ پر حملہ قابل مذمت:مولانااسرارالحق قاسمی

ممبرپارلیمنٹ مولانا اسرارالحق قاسمی نے یوم آزادی کے موقع پر چمپار ن کے بتیاکی ہاتھی خانہ مسجد ومدرسہ پرشرپسندوں کے ذریعہ کئے گئے حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کامطالبہ کیاہے۔انہوں نے کہاکہ آج کے دن جبکہ پورا ملک آزادی کا جشن منارہاہے اور ہر ...

وینکیانائیڈونے واجپئی کوآزادہندوستان کاسب سے بڑالیڈربتاکرخراج عقیدت پیش کیا

نائب صدر ایم وینکیا نائیڈونے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے انتقال پر گہرے غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کے انتقال کوملک کے لیے ناقابل تلافی نقصان بتایا ہے۔نائیڈو نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہاکہ یہ خبرانتہائی افسوسناک ہے کہ اٹل جی نہیں رہے۔میں آج صبح ہی ان کی صحت کی معلومات لینے ...

ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ نے شکرتال گھاٹ پر بہاؤ میں تیزی لانے پر تبادلہ خیال کی خاطر میٹنگ کی 

آبی وسائل، دریا کی ترقی اور گنگا کے احیاء کے وزیر مملکت ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ نے آج شکرتال گھاٹ پر پانی کے بہاؤ میں تیزی لانے کے معاملے پر ایک میٹنگ کی صدارت کرتیہوئے اترپردیش اور اتراکھنڈ کے آبپاشی کے محکموں کے عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ دریائے گنگا کی معاون ندی سلونی میں ...

کورگ میں بارش کی بھاری تباہی ، تین اموات،زمین کھسکنے کے متعدد واقعات 

جنوبی ہند کا کشمیر کہلانے والے ریاست کے کورگ ضلع میں بارش نے زبردست تباہی مچادی ہے۔ ایک طرف بارش کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے تو دوسری طرف پڑوسی ریاست کیرلا میں طوفانی بارش کے سبب وہاں کی ندیوں کا پانی بھی کرناٹک کی طرف بہادیا گیا ہے،

مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرنے ریاستی حکومت تیار

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ شمالی کرناٹک کے بعض اضلاع کو پینے کے پانی کی فراہمی کا واحد ذریعہ مہادائی کے پانی کی تقسیم کے سلسلے میں حال ہی میں ٹریبونل نے جو فیصلہ صادر کیا ہے ریاستی حکومت اس کا سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔

بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔