اجودھیا تنازع:مسجد کیلئے وقف جگہ ہمیشہ مسجد ہی رہتی ہے ، خواہ ڈھانچہ موجود ہو یا نہ ہو:مولانا ارشد مدنی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th May 2018, 11:56 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،16؍مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )گذشتہ کئی ماہ سے مسلسل جاری بابری مسجد ملکیت تنازعہ کی سماعت منگل کو ایک بار پھر دو پہر دو بجے چیف جسٹس کی سربراہی والی بینچ کے سامنے شروع ہوئی ، جس کے دوران جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے سینئروکیل ڈاکٹر راجیو دھون نے بحث کاآغاز کیا اور عدالت کو بتایا کہ اسلامی تعلیمات کے مطابق مسجد اللہ کا گھر ہے اور نماز کی ادائیگی بنیادی ارکان میں شامل ہے۔

جمعیۃ علما ہند کے وکیل کی دلیل پر جمعیۃعلماء ہند کے صدرمولانا سید ارشدمدنی نے کہا کہ آج ہمارے وکلا نے عدالت میں بہت اچھی بحث کی اور مسجد کی شرعی حیثیت پر قرآن واحادیث کے دلائل بھی پیش کئے ۔انہوں نے کہا کہ شریعت کے نزدیک جو جگہ مسجد کے لئے وقف ہوجائے وہ ہمیشہ کے لئے مسجد ہی رہتی ہے خواہ وہاں کوئی ڈھانچہ موجودہویا نہ ہو، مسجد کی شرعی حیثیت ختم نہیں ہوتی ہے۔

انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بابری مسجد کے تعلق سے یہ بات بھی کہیں جاسکتی ہے کہ اگر چہ 6 دسمبر 1992کو وہاں مسجد کی عمارت کو منہدم کیا جاچکا ہے ، لیکن جو زمین ہے وہ مسجد کے ہی صیغہ میں آتی ہے چنانچہ وہاں اب کوئی دوسری تعمیر نہیں ہوسکتی۔ انہوں نے کہا کہ جب حتمی فیصلہ کے لئے معاملہ سپریم کورٹ میں ہے تو اس معاملہ میں زیادہ بیان بازی نہیں کی جانی چاہئے ۔

ایک نظر اس پر بھی

ہوٹل میں سابق بی ایس پی رہنما کے بیٹے کی غنڈہ گردی سے پارٹی نے جھاڑا پلہ

دہلی کے پانچ ستارہ ہوٹل حیات میں ایک شخص نے سرعام غنڈہ گردی کی۔پستول لے کر لڑکی اور اس کے دوست کودھمکاتے ہوئے اس کا ویڈیو وائرل ہوا۔ملزم یوپی کے امبیڈکر نگر سے بی ایس پی کے سابق ممبر پارلیمنٹ راکیش پانڈے کابیٹاہے۔

ہوٹل کے باہر ہوئے واقعہ پر واڈرانے کہا، بچوں کی حفاظت کو لے کر لگتا ہے ڈر

کانگریس کی سینئر لیڈر سونیا گاندھی کے داماد رابرٹ واڈرا نے دہلی کے ایک ہوٹل میں ہتھیار لہرائے جانے کے واقعہ کو لے کر منگل کو کہا کہ اس منظر کو دیکھ کر انہیں اپنے بچوں اور قومی دارالحکومت کے لوگوں کی حفاظت کی فکر ہو رہی ہے۔

مودی حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوگئی ہے، بڑھتی مہنگائی اورچینی فوجیوں کی مبینہ دراندازی پرسررندیپ جیوالا نے آئینہ دکھایا

کانگریس نے پٹرول۔ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ اور ہندوستانی سرحد کے اندر چینی فوجیوں کے مبینہ تجاوز کو لے کر منگل کو وزیر اعظم نریندر مودی پر نشانہ لگایا اور دعوی کیا کہ اب اس حکومت کی الٹی گنتی شروع ہو چکی ہے۔