لیبیا : داعش کے ہاتھوں قتل ہونے والے 34 مسیحی ایتھوپیائی باشندوں کی باقیات

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th December 2018, 11:52 AM | عالمی خبریں |

طرابلس 26دسمبر ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) لیبیا میں حکام نے بتایا ہے کہ انہوں نے ایتھوپیا سے تعلق رکھنے والے اْن 34 مسیحیوں کی لاشیں نکال لی ہیں جن کو داعش تنظیم کے ارکان نے 2015 میں سرت شہر میں گردنیں کاٹ کر موت کی نیند سلا دیا تھا۔لیبیا میں قومی وفاق کی حکومت کی وزارت داخلہ کے ذیلی متعلقہ ادارے نے پیر کے روز فیس بک پر ایک پوسٹ میں بتایا کہ مذکورہ افراد کے اجتماعی مقبرے کا انکشاف داعش تنظیم کے زیر حراست ارکان کے ساتھ تحقیقات کے نتیجے میں سامنے آیا۔داعش تنظیم نے اپریل 2015 میں ایتھوپیا سے تعلق رکھنے والے 30 سے زیادہ مسیحی باشندوں کو گردن کاٹ کر اور فائرنگ کا نشانہ بنا کر موت کے گھاٹ اتار دیا تھا۔ اس لیے کہ انہوں نے نام نہا د جزیہ ادا کرنے یا داعش کے مفروضہ مذہب ’اسلام‘ قبول کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ داعش نے اْس وقت اس واقعے کی وڈیو بھی جاری کی تھی۔لیبیا میں حکام کا کہنا ہے کہ جس جگہ سے یہ لاشیں برآمد ہوئی ہیں وہ شرت شہر میں واقع ہے۔ علاوہ ازیں ان لاشوں کو قانونی اقدامات کے مکمل کیے جانے تک محفوظ رکھا جائے گا اور اس کے بعد ان کے وطن کے حوالے کر دیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

انڈونیشیا میں سیلاب اور تودے سے مرنے والوں کی تعداد 89 ہوئی

  انڈونیشیا کے مشرقی علاقے پاپوا میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 89 ہو گئی ہے اور لاپتہ 74 لوگوں کی تلاش کے لئے ریسکیو آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ راحت رسانی مہم میں مصروف حکام نے منگل کو یہاں یہ اطلاع دی۔

پاکستان جیسے دوست ملک سے امریکہ کو ’خارش ‘ ہونے لگی : پاکستان کا ایٹمی پروگرام امریکہ کے لیے بڑا خطرہ ہے: مائیک پومپیو

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اتوار کو ایک انٹرویو میں امریکی سلامتی کو درپیش پانچ بڑے مسائل بتاتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کے غلط ہاتھوں میں لگ جانے کا خدشہ ان میں سے ایک ہے۔