منوہر پاریکر کے ایک اور وزیر نے سیاحوں پردیا متنازع بیان، کہا،گوا کی ثقافت کاخیال نہ رکھنے والے سیاح کھدیڑ دیئے جائیں گے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 1:01 PM | ملکی خبریں |

پنجی،11فروری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)گوا کے وزیر زراعت وجے سردیسائی کی طرف سے دیسی سیاحوں کو ’زمین کے بیکار لوگ‘بتانے کا معاملہ ابھی ٹھنڈا ہی نہیں ہواکہ وزیراعلیٰ منوہرپاریکرکے ایک اور وزیر نے سیاحوں کو لے کر متنازعہ بیان دیا ہے۔وجے سردیسائی کی طرف سے گھریلوسیاحوں کے ایک طبقے کو زمین کی گندگی بتائے جانے کے محض دو دن بعد ہی وزیر سیاحت منوہر اجگاؤنکر نے گواکی ثقافت اور طور طریقوں کا خیال نہیں رکھنے والوں کو باہر بھگانے کی دھمکی دی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ریاست کے وزیرِسیاحت اجگاؤنکر نے یہ بھی کہا ہے کہ گوا میں ایسے سیاحوں کی ضرورت نہیں ہے جو یہاں منشیات فروخت کرتے ہیں۔ ریاستی سیاحت محکمہ کی طرف سے منعقد ’فوڈ اینڈ کلچرل فیسٹیول‘کے افتتاح کے دوران ہفتہ (10 فروری) کو وزیر نے کہا کہ یہاں آنے والے سیاحوں کو گوا کی ثقافت اور طور طریقوں کا خیال رکھنا چاہئے، ورنہ میں انہیں کھدیڑدوں گا۔ انہوں نے کہا کہ میں واضح طورپرکہہ رہا ہوں کہ میں کسی کی نہیں سنوں گا۔رپورٹ کے مطابق مہاراشٹروادی گومانتک پارٹی (ایم جی پی) کے ممبر اسمبلی اجگاؤنکرنے کہاہے کہ ہمیں اپنے گوا کی ثقافت اور طور طریقوں کا تحفظ کرنا پڑے گا، ہمیں ایسے سیاح نہیں چاہئے جو منشیات فروخت کریں اور ہمیں ایسے ہوٹل بھی نہیں چاہیے جس میں منشیات فروخت ہوں۔واضح رہے کہ اس سے پہلے جمعہ کو ریاست کے وزیرزراعت سردیسائی نے گھریلو سیاحوں کے ایک طبقے کوزمین کی گندگی بتایا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

تلنگانہ میں 19فروری کو کابینہ کی توسیع

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ دوبارہ اقتدار میں آنے کے دو ماہ کے بعد اپنی کابینہ میں توسیع کرنے کی تیاری میں ہے اور ساری بحث اب اس بات پر ٹک گئی ہے کہ اس میں کن لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔