منگلورو کمشنریٹ کے حدود میں15دنوں کے لئے پولیس ایکٹ کی دفعہ 35نافذ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th July 2017, 3:00 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو ،16؍جولائی (ایس او نیوز)جنوبی کینرا میں گزشتہ ڈیڑھ دومہینوں سے بڑھتی ہوئی فرقہ وارانہ کشیدگی اور بد امنی کے پس منظر میں منگلورو کمشنریٹ کے حدود میں15دنوں کے لئے پولیس ایکٹ کی دفعہ 35نافذکردی گئی ہے۔

16جولائی کی نصف شب سے لاگو کی گئی پولیس ایکٹ1963 کی اس دفعہ کے تحت عوامی سطح پر وہ تمام سرگرمیاں قابل گرفت جرم ہونگی جس سے نقض امن کا خدشہ ہوتاہے۔ اس کے تحت تقریریں کرنا، ہنگامے کھڑا کرنا،عوام کو مشتعل کرنے کے لئے گانااورموسیقی بجانا،اشارے کنایوں سے طنز کرنا، مذاق اڑانا، ممکری کرنا، تصاویر، علامات، پلے کارڈ یا دوسری چیزوں کی نمائش کرنا جو پولیس افسران کی نظر میں عوامی مزاج اور اخلاقیات کے منافی ہوں،جس سے عوام کا تحفظ میں خطرے پڑ سکتا ہو یا پھر کسی جرم کے لئے اکسانے کا کام کیا جاتا ہو، ایسی تمام سرگرمیوں کا ارتکاب جرم تصور کیاجائے گا اور اس کے خلاف قانونی کارروائی ہوگی۔

اس دفعہ کے تحت پتھروں کو جمع کرنے، لاشوں اورکسی کے پتلوںeffigyکی عوامی میں نمائش کرنے،یا کوئی بھی ایسا عمل کرنے پر پابندی رہے گی جو شائستگی اور شرافت کے خلاف ہو۔ اور امن عامہ کے حق میں نقصان دہ ہو۔

ایک نظر اس پر بھی

کمٹہ بلاک کانگریس دفتر کا ضلعی صدر بھیمنانائک کے ہاتھوں افتتاح

مورور کے قریب اُڈپی ہوٹل سےمتصل کمٹہ بلاک کانگریس کے دفتر کا ضلع کانگریس کمیٹی صدر بھیمنا نائک نے افتتاح کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام کی سہولت کے لئے دفتر کا افتتاح کیاگیا ہے عوام اپنی شکایات اور مسائل کو یہاں پیش کرکے حل حاصل کرسکتےہیں۔ عوامی مسائل کے سلسلے میں ہی اس ...

بھٹکل کے اتی کرم داروں کو اراضی دستاویزات میں تاخیر کرنے پرراما موگیر برہم؛ ہزاروں آتی کرم داروں کی طرف سے احتجاج کا انتباہ

بیرونی ملک سے ضلع کو آئے تبتی(ٹبیٹین)عوام کو رہائش کے لئے ضلعی انتطامیہ نے مواقع فراہم کیا ہے۔ ضلع میں ہی پیدا ہوکر پرورش پانے والوں کو زمینی دستاویز(حق پترا) دینے کے لئے افسران ہی اہم وجہ سبب ہونے کا تعلقہ اتی کرم دارر ہوراٹ سمیتی کے صدر راما موگیر نے سخت برہمی  کااظہارکیا۔

بھٹکل اسمبلی حلقے میں کھیلا جارہا ہے ایک نیا سیاسی کھیل! کون بنے گا کانگریسی اُمیدوار ؟

یہ کوئی ہنسی مذاق کی بات ہرگز نہیں ہے۔بھٹکل کی موجودہ جو صورتحال ہے اس میں ایک بڑا سیاسی گیم دکھائی دے رہاہے۔ کیونکہ 2018کے اسمبلی انتخابات کی تیاریوں میں لگی ہوئی سیاسی پارٹیاں اپنا امیدوار کون ہوگا اس پر توجہ دینے کے ساتھ ساتھ مخالف پارٹیوں سے کون امیدوار بننے پر ان کی جیت کے ...