منگلورو:ڈاکٹر کے پرسکپرپشن کے بغیر نشہ آور دوائیوں کی فروخت۔ میڈیکل اسٹور کا لائسنس منسوخ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th September 2018, 10:20 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو 4؍ستمبر (ایس او نیوز) کسی مستند ڈاکٹر کی تجویز کردہ چٹھی (پرسکرپشن) کے بغیر نشہ آور دوائیاں فروخت کرنے کا الزام ثابت ہونے پر منگلورو پی وی ایس سرکل کے پاس واقع پی کے ہیلتھ کیورمیڈیکل شاپ کا لائسنس ڈرگ کنٹرول ڈپارٹمنٹ نے منسوخ کردیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ پولیس کو دوائیوں کی اس دکان پر ممنوعہ نشہ آور دوائیاں بغیر ڈاکٹر کی پرچی کے فروخت کرنے کی مصدقہ اطلاع ملی تھی۔جس کی بنیاد پر سنٹرل سب ڈیویژن کے اے سی پی کی قیادت میں اوروا پولیس اسٹیشن انسپکٹر،ایسٹ اسٹیشن کے پولیس انسپکٹراورعملے نے مذکورہ دکان پر 18جولائی کوچھاپہ مارتے ہوئے ممنوعہ ادویات ضبط کرلیں۔ اس معاملے میں ڈرگ کنٹرول ڈپارٹمنٹ نے کیس رجسٹر کرلیا تھا ۔جب تحقیقات کے بعد پی کے ہیلتھ کیور میڈیکل شاپ کی طرف سے ڈرگ اینڈ کاسمیٹک ایکٹ 1940کی دفعہ 65Aکی خلاف ورزی ثابت ہوئی تو31اگست کو دکان کا لائسنس منسوخ کرنے کا حکم ڈرگ کنٹرول ڈپارٹمنٹ نے جاری کردیا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

ہلیال میں جے ڈی ایس لیڈر کے گھر پر انتخابی افسران کا چھاپہ ۔تلاشی کے بعد خالی ہاتھ واپس لوٹے افسران؛ کیا بی جےپی کو شکست کا خوف ہے؟

پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر چیک پوسٹس پر تلاشی مہم کے علاوہ ہلیال شہر کے گوداموں، شراب کی دکانوں، موٹر گاڑیوں کی بھی مسلسل تلاشیاں لے رہے ہیں۔

لوک سبھا انتخابات؛ اُترکنڑا میں کیا آنند، آننت کو پچھاڑ پائیں گے ؟ نامدھاری، اقلیت، مراٹھا اور پچھڑی ذات کے ووٹ نہایت فیصلہ کن

اُترکنڑا میں لوک سبھا انتخابات  کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں   نامدھاری، مراٹھا، پچھڑی ذات  اور اقلیت ایک دوسرے کے قریب تر آنے کے آثار نظر آرہے ہیں،  اگر ایسا ہوا تو  اس بار کے انتخابات  نہایت فیصلہ کن ثابت ہوسکتےہیں بشرطیکہ اقلیتی ووٹرس  پورے جوش و خروش کے ساتھ  ...

بھٹکل میں بی کے ہری پرساد کا بی جے پی اور مودی پر راست حملہ، کہا؛ پسماندہ طبقات کومزید کمزور کرنے کی سازش رچی جارہی ہے

بی جے پی بھلے ہی اپنے آپ کو اقلیت مخالف پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہو، مگر  دیکھا جائے تو یہ پارٹی حقیقتاً پسماندہ طبقات، دلت اور ادیواسیوں کو  مزید  کمزور کرنے کی سازش میں لگی ہوئی ہے اور صرف ایک طبقہ کو برسراقتدار پر لانے میں کوشاں ہے۔ یہ بات  آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی ...