اوکھی طوفان کی وجہ سے الال میں دو گھرہوگئے سمندر میں غائب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd December 2017, 7:30 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

منگلورو3؍دسمبر (ایس او نیوز) سمندری طوفان اوکھی کے بڑھتے ہوئے قدموں نے الال کے ساحلی کنارے پر دو گھروں کو اچانک اس وقت نیست و نابود کردیا جب گھر کے مکین سنیچر کی شام کو چرچ میں عبادت کے لئے گئے ہوئے تھے ۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق طوفان کی وجہ سے سمندر کا پانی الال کے ساحل پر تمام مصنوعی رکاوٹوں کو توڑتے ہوئے 200میٹر تک اندر کی طرف گھس آیا ہے۔سنیچر کے دن شام 7بجے فلومینا فرنانڈیز اورایوریسٹ الفانسونامی دو خاندان کے تمام افراد گھر کو قفل لگاکر چرچ میں عبادت کے لئے چلے گئے تھے۔ لیکن جب وہ لوگ رات 10بجے کے قریب واپس لوٹے تو یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ وہاں پر ان کے دونوں مکانات کا نام و نشان بھی موجود نہیں تھا۔ اگر کچھ تھا تو بس سمندر کی موجیں تھیں۔اس کے علاوہ مزید ایک تیسرے گھر کا نصف حصہ بھی سمندر میں بہہ چکاتھا۔

بتایا گیا ہے کہ جن گھروں کو سمندر نے نگل لیا اس میں فلومینا فرنانڈیز کے گھر میں موجود تقریباً6لاکھ روپے مالیت کی اشیاء بھی پانی میں لاپتہ ہوگئیں، جبکہ الفانسو کے گھر میں موجود 8لاکھ روپے مالیت کی اشیاء بہہ جانے کا اندازہ لگایا گیا ہے۔ اب یہ دونوں خاندان بے گھر ہوکر اپنے رشتے داروں کے یہاں قیام کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ پولیس اور ریوینیو محکمہ کے افسران نے جائے وقوع پر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا۔

ایک رپورٹ کے مطابق الال کی ساحلی پٹی پر سمندر کٹاؤ سے بچنے کے لئے جو مصنوعی دیوار تعمیر کی گئی ہے وہ طوفانی موجوں کو قابو میں کرنے سے قاصر ہےاور مزیدتقریباً 50گھروں پر خطرہ منڈلارہا ہے۔ان تمام خاندانوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کروایا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں چوری کی زبردست واردات؛ مالک مکان کا اسپتال میں داخل ہونا مہنگا پڑ گیا؛ لاکھوں مالیت کے سونے اور چاندی کے زیورات پر ہاتھ صاف

مالک مکان جب علاج کی غرض سے اسپتال میں داخل تھا تو موقع کا فائدہ اٹھا کر لٹیرو ں نے اس کے گھر کا دروازہ توڑکر لاکھوں روپے مالیت کے سونے اور چاندی کے زیورات کے علاوہ سکے بھی چرالیے۔

22فروری ووٹر لسٹ میں نام داخل کرنے کی آخری تاریخ؛ کرناٹکا کے عوام توجہ دیں

اگلے دوایک مہینوں میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات میں حق رائے دہی استعمال کرنے کے لئے فہرست رائے دہندگان (ووٹرلسٹ) میں نام شامل کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس سلسلے میں الیکشن کمشنر  کی طرف سے جاری بیان کے مطابق 22فروری نام درج کروانے کی آخری تاریخ ہوگی۔

بنگلور میں 12 مارچ سے ہوگی ،کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات کیلئے مفت کوچنگ؛ مسلمانوں کے لئے سنہرا موقع

اگلے ماہ 12 مارچ سے طہ ایجوکیشنل ٹرسٹ بنگلور کی جانب سے کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات میں حصہ لینے والوں کے  لئے  مفت کوچنگ کا انتظام کیا گیا ہے، جس میں شریک ہوکر امتحانات میں حصہ لینے والے خواہش مند طلبہ و طالبات  فائدہ اُٹھاسکتے ہیں۔

جا معہ ضیاء العلوم کنڈلور ضلع اڈپی میں جمعرات کو منعقد ہوگا کل ہند فقہ شافعی مشاورتی اجلاس ۔

کنڈلور 19؍فروری (ایس او نیوز)ملکی سطح پر فقہ شافعی کے اصو ل و طریقہ کار کے مطابق پیش آمدہ جدید مسائل کی تحلیل و تجزیہ کے لئے فر زندان شا فعیہ کو ایک جٹ کر نے  اور بحث و مناقشہ کرنےکنداپور سے قریب  جامعہ ضیاء العلوم کنڈلور  - میں بتاریخ ۵جمادی الثانیہ ۱۴۳۹؁ھ مطابق 22/فروری 2018 کو" کل ...

ممبئی پولس میں 1137اسامیوں پر بھرتی کا اعلان؛ جمعیۃ علماء نے مسلم نوجوانوں سے کی، حصہ لینے کی اپیل

دنیا بھر میں مشہور ممبئی پولس نے اپنے محکمہ میں ۱۱۳۷؍ اسامیوں کی بھرتی  کے لئے عرضیاں  طلب کی  ہیں اور اس تعلق سے اپنی ویب سائٹ پر مکمل اعلانیہ جاری کیا ہے جس سے مسلم نوجوانوں کو استفادہ حاصل کرنا چاہئے تاکہ پولس محکمہ میں مسلمانوں کے گرتے تناسب پر روک لگ سکے اور اس میں کچھ ...

22فروری ووٹر لسٹ میں نام داخل کرنے کی آخری تاریخ؛ کرناٹکا کے عوام توجہ دیں

اگلے دوایک مہینوں میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات میں حق رائے دہی استعمال کرنے کے لئے فہرست رائے دہندگان (ووٹرلسٹ) میں نام شامل کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس سلسلے میں الیکشن کمشنر  کی طرف سے جاری بیان کے مطابق 22فروری نام درج کروانے کی آخری تاریخ ہوگی۔

بنگلور میں 12 مارچ سے ہوگی ،کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات کیلئے مفت کوچنگ؛ مسلمانوں کے لئے سنہرا موقع

اگلے ماہ 12 مارچ سے طہ ایجوکیشنل ٹرسٹ بنگلور کی جانب سے کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات میں حصہ لینے والوں کے  لئے  مفت کوچنگ کا انتظام کیا گیا ہے، جس میں شریک ہوکر امتحانات میں حصہ لینے والے خواہش مند طلبہ و طالبات  فائدہ اُٹھاسکتے ہیں۔