فرقہ وارانہ کشیدگی سے فائدہ اٹھانے کے لئے خود کو ہی زخمی کرلیا !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th July 2017, 2:54 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو ،16؍جولائی (ایس او نیوز)بجپے پولیس کے بیان کے مطابق 10جولائی کو نامعلوم لوگوں کی طرف سے حملے کی شکایت کرنے والے ابوبکر صدیق (30سال) کا معاملہ جھوٹا ثابت ہواکیونکہ فرقہ وارانہ کشیدگی کے موقع سے فائدہ اٹھانے کے لئے اس نے خود ہی اپنے سر پر بلیڈ سے زخم لگایا تھا اور موٹر بائک پر آنے والے نامعلوم افراد کی طرف سے حملہ کیے جانے کی من گھڑت کہانی پولیس کو سنائی تھی۔

کہتے ہیں کہ جب وہ زخمی حالت میں بجپے پولیس اسٹیشن پہنچا تھا تو اسے فوری طور پر علاج کے لئے اسپتال لے جایا گیا اور اس کے بھائی نے نامعلوم افراد کے خلاف تحریری شکایت درج کروائی تھی۔ لیکن تفتیش کے دوران ابوبکر کے بیانات میں تضاد سامنے آیا۔ جب سختی کے ساتھ پوچھ تاچھ کی گئی تو اس نے پولیس کومبینہ طور پر بتایا کہ سلام نامی ایک شخص سے اس نے 36ہزار روپے قرض لیا تھا۔ اورسلام رقم واپس مانگ رہاتھا۔ابوبکرایک معمولی مزدور ہے جو پتھر کی لاریوں پر مزدوری کیا کرتا ہے۔اس وجہ سے قرض کی رقم لوٹانا اس کے بس میں نہیں تھا۔لہٰذا اس نے خود کو فرقہ وارانہ تشدد کا شکار بتاکر اس پریشانی سے بچ نکلنے کا منصوبہ بنایاتھا۔

ڈائریکٹر جنرل آف پولیس روپک کمار دتّا نے بجپے پولیس ٹیم کو اس کامیاب کارروائی کے لئے نقد انعام اور ستائشی سند سے نوازا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر توڑ پھوڑ کا معاملہ؛ سنگھ پریوار کے کارکنوں کی گرفتاری کے خلاف انکولہ میں احتجاج۔ بھٹکل چلو ریالی کا اعلان

بھٹکل میں بلدیہ عمارت پر حملے کے بعد توڑ پھوڑ اور سرکای عمارت کو نقصان پہنچانے کے الزام میں جہاں ایک طرف پولیس متعلقہ افراد کو گرفتار کررہی ہے، وہیں پر ضلع کے مختلف مقامات پر اسے ہندو مسلم تفرقہ کا رنگ دیتے ہوئے پولیس پر الزام لگایا جارہا ہے کہ وہ بلاوجہ ہندوؤں کو ہراساں کررہی ...

مرڈیشور میں نوائط فاؤنڈیشن بنگلورو کے زیراہتمام یکم اکتوبر کو مفت طبی کیمپ کا انعقاد : عوام سے استفادہ کی اپیل

مرڈیشور نوائط فاؤنڈیشن بنگلورو کے زیرا ہتمام کمیونٹی کے مختلف مقامات پر قائم جماعتوں کے تعاون سے یکم اکتوبر کو نیشنل ہائی اسکول مرڈیشور میں صبح 10بجے سے شام 6 بجے تک فری میڈیکل کیمپ منعقد کئے جانے کی محفل کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلز میں جانکاری دی گئی ہے۔

بھٹکل میں شری درگا مورتی کی وداعی پر پابندی کی مذمت میں راشٹریہ ہندو اندولن کا میمورنڈم

مغربی بنگال میں شری درگا مورتی کی وداعی پر پابندی عائد کرنا مذہبی تفریق ہے، مرکزی حکومت فوری مداخلت کرنے کا مطالبہ لے کر راشٹریہ ہندو آندولن بھٹکل کمیٹی نے اسسٹنٹ کمشنر کے ذریعے میمورنڈم سونپا۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ دکانداروں کی جدوجہد میں شریک ہونے والوں کے خلاف درج معاملات کو رد کرنے کا مطالبہ

رام چندرنائک کی خود کشی کے بعدجو پتھراؤ ہواہے وہ ایک فطری کارروائی تھی ، اسی کے پیش نظر جدوجہد کرنےو الوں پر ڈکیتی کا کیس درج کرنا قابل مذمت ہونے کی دکانداروں نے بات کہی۔