فرقہ وارانہ کشیدگی سے فائدہ اٹھانے کے لئے خود کو ہی زخمی کرلیا !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th July 2017, 2:54 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو ،16؍جولائی (ایس او نیوز)بجپے پولیس کے بیان کے مطابق 10جولائی کو نامعلوم لوگوں کی طرف سے حملے کی شکایت کرنے والے ابوبکر صدیق (30سال) کا معاملہ جھوٹا ثابت ہواکیونکہ فرقہ وارانہ کشیدگی کے موقع سے فائدہ اٹھانے کے لئے اس نے خود ہی اپنے سر پر بلیڈ سے زخم لگایا تھا اور موٹر بائک پر آنے والے نامعلوم افراد کی طرف سے حملہ کیے جانے کی من گھڑت کہانی پولیس کو سنائی تھی۔

کہتے ہیں کہ جب وہ زخمی حالت میں بجپے پولیس اسٹیشن پہنچا تھا تو اسے فوری طور پر علاج کے لئے اسپتال لے جایا گیا اور اس کے بھائی نے نامعلوم افراد کے خلاف تحریری شکایت درج کروائی تھی۔ لیکن تفتیش کے دوران ابوبکر کے بیانات میں تضاد سامنے آیا۔ جب سختی کے ساتھ پوچھ تاچھ کی گئی تو اس نے پولیس کومبینہ طور پر بتایا کہ سلام نامی ایک شخص سے اس نے 36ہزار روپے قرض لیا تھا۔ اورسلام رقم واپس مانگ رہاتھا۔ابوبکرایک معمولی مزدور ہے جو پتھر کی لاریوں پر مزدوری کیا کرتا ہے۔اس وجہ سے قرض کی رقم لوٹانا اس کے بس میں نہیں تھا۔لہٰذا اس نے خود کو فرقہ وارانہ تشدد کا شکار بتاکر اس پریشانی سے بچ نکلنے کا منصوبہ بنایاتھا۔

ڈائریکٹر جنرل آف پولیس روپک کمار دتّا نے بجپے پولیس ٹیم کو اس کامیاب کارروائی کے لئے نقد انعام اور ستائشی سند سے نوازا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل:راگھویندرا بھٹ اور وٹھل داس کو بھٹا کلنکا ایوارڈ : یوم صحافت کی مناسبت سے جرنالسٹ اسوسی ایشن کا خصوصی پروگرام

بھٹکل جرنالسٹ اسوسی ایشن کی طرف سے ہرسال یوم صحافت کے موقع پر دئیے جانےو الے ’’بھٹاکلنکا ‘‘ ضلعی ایوارڈ کے لئے ریاست کے مشہور کنڑا روزنامہ ’’پرجا وانی ‘‘ کے بھٹکل رپورٹر راگھویندر بھٹ جالی اور ہبلی زون ہوسدگنت کے وٹھل داس کامت کو منتخب کیا گیا ہے۔

منگلورو:ریاست کے تمام غیر پکوان گیس باشندوں کو مفت میں پکوان گیس کا کنکشن :انیل بھاگیہ اسکیم کا بہت جلد اجراء : وزیر یوٹی قادر

ریاست میں کئے گئے سروے کےمطابق قریب 35.50لاکھ شہریوں کے پاس پکوان گیس کی سہولت نہیں ہے، وزیرا علیٰ انیل بھاگیہ (وزیر اعلیٰ گیس اسکیم )کے تحت ان تمام مستحقین کو مفت میں پکوان گیس کا کنکشن دیاجائے گا،اس طرح پورے ملک میں ریاست کرناٹکا وہ پہلی ریاست ہوگی جس کے تمام باشندے پکوان گیس کی ...

کیا آنند اسٹونیکر کاروار سے جے ڈی ایس کے امیدوار ہونگے؟

حالانکہ اگلے اسمبلی انتخابات کے لئے ا بھی کافی عرصہ باقی ہے ، مگر امیدواری کی آس لگانا اور ٹکٹ پانے کے لئے جد وجہد کرناابھی سے سیاسی لیڈروں کے معمولات میں شامل ہوگیا ہے۔کاروار سے ملنے والی خبروں پر اگر بھروسہ کریں تو آنند اسنوٹیکر بی جے پی سے پالا بد ل کر جنتا دل میں داخل ہونے ...