منگلورو: چٹانیں کھسکنے کی وجہ سے غیر معینہ مدت تک ٹریفک کے لئے بند کیا گیا شیراڈی گھاٹ 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st August 2018, 1:26 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

منگلورو21؍اگست (ایس او نیوز) ایک طرف سمپاجے سے میسورو کی طرف جانے والی شاہراہ چٹان کھسکنے کی وجہ سے ٹریفک کے لئے بند کردی گئی ہے تو دوسری طرف شیراڈی گھاٹ پر مزید چٹانیں کھسکنے اور مسافروں کے جان و مال کو خطرہ درپیش ہونے کی وجہ سے سکلیشپور کے سب ڈیویژنل آفیسر نے غیر معینہ مدت کے لئے شیراڈی گھاٹ پر موٹر گاڑیوں کی آمد و رفت کو بند کرنے کے احکام جاری کیے ہیں۔

خیال رہے کہ پچھلے کچھ دنوں میں شیراڈی گھاٹ کے 33مقامات پر چٹانیں کھسکنے کے واقعات پیش آئے تھے۔وہاں سے ملبہ ہٹانے کا کام جنگی پیمانے پرابھی بھی جاری ہے۔ لیکن اسی دوران ایک خطرناک صورتحال یہ دیکھنے میں آرہی ہے کہ کئی مقامات پر ہائی وے کے نیچے سے زمین کھسکنے لگی ہے، جس سے ہائی وے کھسکنے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے۔اس ہائی وے سے ہوتے ہوئے منگلورو سے بنگلورو کا سفر کرنے والے اس نئی صورتحال سے پریشان ہوگئے ہیں۔ گزشتہ ایک ہفتے سے شیراڈی گھاٹ پر ٹریفک کو بند کردیا گیا تھا۔ اب تازہ جانکاری کے مطابق مسافروں کے تحفظ کے پیش نظر اس ہائی وے سے ٹریفک کوغیر معینہ مدت تک کے لئے بند کردیا گیا ہے۔

ضلع جنوبی کینرا کو دوسرے اضلاع سے جوڑنے والے دو راستے بند ہوجانے کے بعد اب چارمڈی گھاٹ کا ہی ایک راستہ بچا ہوا ہے، اور اگر یہاں پر بھی زمین یا چٹان کھسکنے کے تازہ واقعات ہوتے ہیں تو پھر جنوبی کینرا کا رابطہ دوسرے اضلاع سے بالکل منقطع ہوجائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

مینگلور: مُلکی پولیس نے کیا بین الریاستی چوروں کو گرفتار۔40لاکھ روپے مالیت کا مسروقہ مال ہوا بر آمد

مُلکی   پولیس اسٹیشن سے وابستہ پولیس افسران نے ایک بین الریاستی چوروں کی ٹولی سے تعلق رکھنے والے دو ملزمین کوگرفتار کرنے کے بعدان کے قبضے سے 40لاکھ روپے مالیت کا مسروقہ مال برآمد کیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ اس ٹولی کے دیگر2دیگر اراکین بھاگ نکلنے میں کامیاب ہوگئے۔

’ڈرائیوروں کے لئے آٹھویں تک کی تعلیم ہونے کی شرط ختم‘

 روڈٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کے وزیر نتن گڈکری نے کہاکہ ملک میں کم تعلیم یافتہ لوگوں کو روزگار کے مواقع دستیاب کرانے کے لئے ڈرائیوروں کے لئے آٹھویں تک کی تعلیم کی کم از کم تعلیمی اہلیت کی لازمیت کو ختم کردیا گیا ہے۔

نچلی عدالت نے چار ملزمین کو عمر قید اور ایک ملزم کو باعزت بری کیا، جمعیۃ علماء نچلی عدالت کے فیصلہ کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرے گی:گلزاراعظمی

14 سالوں کے طویل انتظار کے بعدآج الہ آباد کی خصوصی عدالت نے رام جنم بھومی (ایودھیا دہشت گردانہ حملہ) معاملے میں اپنا فیصلہ سنایا اور پانچ میں سے ایک جانب جہاں چار ملزمین کو عمر قید کی سزا دی وہیں ناکافی ثبوت وشواہد کی بنیاد پر ایک ملزم کو باعزت بری کردیا۔