منگلورو: اڈیار وغیرہ میں غیر قانونی ریت کے اڈے  :5لاکھ روپیوں کی ریت ضبط

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 13th September 2018, 7:31 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو :13/ستمبر(ایس اؤ نیوز) شہر کے نواحی علاقے ولیچیل ، اڈیار ، ارکولا کی نجی زمین پر غیر  قانونی طورپر ذخیرہ کردہ ریت کے اڈے کا پولس نے جمعرات کو  پتہ لگاتے ہوئے پانچ لاکھ سے زائد روپئے مالیت کی ریت ضبط کرلینے کا واقعہ پیش آیا ہے۔ 

منگلورو جنوبی معاون زون کے اے سی پی رام راؤ کی قیادت والی پولس ٹیم جنوبی معاون علاقے کے راؤڑی نگراں دستہ اور منگلورو دیہی پولس تھانہ افسر اپنے عملے کے ساتھ چھاپہ مار کر قریب 780ٹن (78)ریت کو ضبط کر لیا ہے۔ ضبط شدہ ریت کی مالیت 5لاکھ روپئے بتائی جارہی ہے۔

مصدقہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے ولچیل ، اڈیار، ارکولا پر چھاپہ مارکر پولس نے غیر قانونی ریت اڈے کو ڈھونڈنکالنے کے بعد محکمہ کان کنی اور اراضی کے افسران کو جانکاری دی۔ یہ ریت کسی کی ہے،کسی مقصد سے جمع کی گئی ہے ؟ یا پھر چوری کی گئی ہے اس تعلق سے پولس جانچ میں جٹی ہوئی ہے۔ اگلی کارروائی کے لئے ریت ذخیرے کو پولس نے محکمہ اراضی کو منتقل کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

18بیرونی ممالک میں ملازمت کرنے والوں کویکم جنوری سے لازمی طور پر آن لائن رجسٹریشن کرنا ہوگا

بیرونی ممالک میں ملازمت کرنے والوں کے لئے مرکزی حکومت نے ایک نئی شرط لاگو کردی ہے جس کے مطابق یکم جنوری 2019 ؁ء سے امیگریشن چیک ناٹ ریکوائرڈECNRوالا پاسپورٹ رکھنے والے ملازمین کے لئے لازمی ہوگا کہ وہ اپنا آن لائن رجسٹر کروائیں۔

منگلورو: نوجوان کی پراسرار گم شدگی۔ ہائی کورٹ نے سابق پولیس سب انسپکٹر کوجاری کیا سمن

بجپے پولیس اسٹیشن کے سابق سب انسپکٹر مدن کے خلاف شیواکمار نامی رکشہ ڈرائیور کی جانب سے ہائی کورٹ میں’پروانۂ حاضری‘ habeas corpusکی اپیل دائر کرتے ہوئے مانگ کی گئی ہے کہ اس کے بیٹے ونائیکا (19سال) کوڈھونڈکر لایا جائے۔

مخالفت اور احتجاج کے باوجودنیشنل ہائی وے 66پر سورتکل ٹول پلازہ کالائسنس رینیو کردیا گیا

نیشنل ہائی وے توسیعی منصوبے کے ساتھ شروع کیا گیا سورتکل ٹول پلازہ بند کرنے کا مطالبہ عوام کی طرف سے مسلسل کیا جارہا تھا اور کئی مرتبہ اس کے خلاف احتجاج کرنے کے علاوہ عوامی منتخب نمائندوں اور سماجی لیڈروں نے مرکزی حکومت سے تحریری طور پر بھی اس کی مانگ کی گئی تھی۔اور امید کی ...

اترکینرا رکن پارلیمان کی ’’مثالی دیہات ‘‘ کی ترقی بہت مایوس کن : منصوبے کی ناکامی کے لئے  ضلع انتظامیہ ذمہ دار یا رکن پارلیمان ؟

وزیرا عظم نریندر مودی کے اہم منصوبوں میں سے ایک ’’رکن پارلیمان کی مثالی دیہات‘‘ منصوبہ  بی جےپی کے رکن پارلیمان اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کے پارلیمانی حلقہ میں ہی ناکام ہوچکا ہے۔ ابتداء بہت ہی حوصلے کے ساتھ دیہات کو گود لئے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے گزشتہ چار برسوں ...

رہائشی گھر میں 80پکوان گیس سلینڈروں کا ذخیرہ  : تحصیلدار اور افسران کا چھاپہ ،سلینڈر ضبط

شہر کے ہوسپیٹ نامی محلہ کے ایک گھر  میں غیر قانونی طورپر پکوان گیس سلینڈر جمع رکھے جانے  کا پتہ چلاہے۔ مصدقہ خبر پر تحصیلدار اپنی ٹیم کے ساتھ متعلقہ گھر پر چھاپہ مار کر سبھی پکوان گیس سلینڈروں کو ضبط کرلینے کے بعد کیس درج کیا ہے۔

کاروار کی کالی ندی سے ریت نکالنے مرکزی وزارت نے  نہیں دی  اجازت : ڈی سی نے ملیشیا سے ریت درآمد کے لئے مانگی منظوری

کاروار کی کالی ندی کناروں کےچار جگہوں پر ریت نکالنےکی اجازت مانگی گئی تھی تو مرکزی ماحولیات اور جنگلات وزارت نے منظوری نہیں دینے کی اترکنڑا ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول نے جانکاری دی ۔