منگلورو قریشی پر ٹارچر اور پی ایف آئی پر لاٹھی چارج کے معاملے میں اچانک یو ٹرن؛ کانگریس لیڈران نے لگایا وزراء کو بدنام کرنے کا الزام

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 21st April 2017, 12:48 AM | ساحلی خبریں |

منگلورو:20/اپریل(ایس اؤنیوز) قریشی پر مینگلور پولس کے ہاتھوں تھرڈ ڈگری استعمال کرنے اور احتجاج کرنے والے پی ایف آئی کارکنوں پر لاٹھی چارج کرنے کے بعد گذشتہ روزیونائیٹیڈ مسلم فرنٹ نے اعلان کیا تھا کہ 2/ مئی کو مینگلور چلو پروگرام منعقد کیا گیا ہے جس میں 60 اداروں کی جانب سے 25 ہزار سے زائد لوگ شرکت کریں گے اور قریشی پر ہوئے ظلم پر انصاف ملنے تک جدوجہد جاری رکھیں گے۔ لیڈران نے الزام لگایا تھا کہ ضلع میں 4لاکھ مسلم رائے دہندگان کے ووٹوں سے اقتدار حاصل کرنے والے  مسلم لیڈران ملت پر ہونے والے ظلم کے خلاف کوئی آواز نہیں اٹھار ہے ہیں، انہوں نے اس بات کا بھی الزام لگایا تھا کہ ریاست میں کانگریس کی حکومت ہونے کے باوجود مسلمانوں پر ظلم وستم ہورہا ہے اور ضلع جنوبی کینرا کے کانگریسی لیڈران خاموش ہیں۔ مگر اب اس معاملے نے اچانک یو ٹرن لے لیا ہے۔ اور کانگریس نے آج پریس کانفرنس کا انعقاد کرتے ہوئے کچھ مسلم لیڈران پر اپنے ہی وزراء اور لیڈران کی بے عزتی اور توہین کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

مینگلور پارٹی دفتر میں پریس کانفرنس کے ذریعے بات کرتے ہوئے کانگریس سے تعلق رکھنے والے ضلع پنچایت ممبران ایم ایس محمد اور شاہ الحمید نے کہاکہمختلف موقعوں پر اعلیٰ عہدوں پر فائز رہتے ہوئے سیاسی فائدہ اٹھانے والے ہی آج وزراء اور لیڈران کی ہتک اور توہین کررہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ سی سی بی پولس کے ذریعے احمد قریشی پر ہونے والے ظلم کے بہانے کانگریس پارٹی کے ہی چند لوگ ریاستی کابینہ کے وزراء رماناتھ رائی اور یوٹی قادر اور پارٹی لیڈران پر الزام تراشی کرتے ہوئے ان کی توہین کرنا قابل مذمت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ رماناتھ رائی کی  سیکولر فکر کیاہے  یہ سبھی کوپتہ ہے، اقلیتوں کے متعلق انہیں جو فکر ہے وہ سب جانتے ہیں، اقلیتوں پر جب بھی ظلم ہواہے انہوں نے مضبوطی کے ساتھ آواز اٹھائی ہے ، یو ٹی قادر بھی اپنے وزارت کے عہدے پر فائز رہتے ہوئے بہترین کام انجام دے رہے ہیں، کچھ لوگوں کو ان کی عوام میں مقبولیت  اور ترقی سے حسد ہورہاہے اسی لئے ان کو غلط طورپر پیش کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

کانگریسی لیڈران کے مطابق جہاں تک احمد قریشی کا معاملہ ہے ریاستی حکومت نے معاملے کی جانچ کی ذمہ داری سی آئی ڈی کے سپرد کی ہے، جانچ کے بعد پتہ چلے گا کہ سچائی کیا ہے۔ لیکن کچھ لوگ احمد قریشی کی صحت میں سدھار کے بجائے بگاڑ چاہتے ہیں، اور اسی کے ذریعے اپنی سیاست چمکانے کی کوشش  کررہے ہیں۔ پریس کانفرنس میں نائب میئر رجنیش ، ششی دھر ہیگڈے ، کارپوریٹر نوین ڈیسوزا، پارٹی لیڈران سنتوش کمار برکے وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: ضلع میں لاٹریوں کی دھاندلی روکنے کے لئے سخت اقدامات : ڈی سی کی صدارت میں فلائنگ اسکواڈ کی تشکیل

ضلع کو لاٹری سے پاک کرنے کے سلسلے میں ضلعی انتطامیہ اہم قدم اٹھاتے ہوئے ضلع ڈی سی کی صدارت میں انسداد لاٹری فلائنگ اسکواڈ تشکیل دیتے ہوئے ایس پی ، انکم ٹیکس معاون کمشنر سرسی اور معاون کمشنر پنشن کاروار کو ممبران کے طورپر شامل کیا گیاہے۔

بھٹکل:حضرت سید نا ابراہیم ؑ کی سیرت اور پیغام پر مشتمل شمس ہائی اسکول اور نیو شمس اسکول میں نمائش کا اہتمام

سیدنا حضرت ابراہیم علیہ السلام کی سیرت اور ان کی ذریت کے حوالے سے تربیت ایجوکیشن سوسائٹی کے شمس انگلش میڈیم ہائی اسکول اور نیو شمس اسکول کے طلبا نے مثالی و نمونے کے قابل نمائش کا اہتمام کرتے ہوئے حضرت ابراہیمؑ کے پیغام کو پیش کرنے کی کوشش کی ۔

بھٹکل:گروسدھیندرا کالج میں بی سی اے اور بی ایس سی ڈگری یافتہ امیدواروں کے لئے کیمپس انٹرویو

ملک کی مشہور و معروف کمپنی وپرو کے ذریعے گرو سدھیندرا کالج میں روزگار کے خواہش مندو ں کے لئے 23اگست 2017کی صبح 30-09بجے سے کیمپس انٹرویو منعقد ہونے کی کالج پریس ریلیز میں اطلاع دی گئی ہے۔ بی سی اے ، بی ایس سی (بیاچ 2017)کے ڈگری یافتہ امیدوار وقت مقررہ پر حاضر رہنے کی کالج کے پریس ریلیز ...

بھٹکل: نوائط کالونی ، امین الدین روڈ پر گھر میں چوری کی واردات : حسبِ معمول چور فرار

شہر بھٹکل اور نواحی علاقوں میں یکے بعد دیگرے لگاتارمکانات کی چوری میں اضافہ ہوتاجارہاہے، گھر میں جب کوئی نہیں رہتاتو اس کا بھرپور استعمال کرتے ہوئے چور گھروں میں گھس کر زیورات،نقد رقم سمیت قیمتی اشیاء لوٹ کر فرار ہورہے ہیں۔ دن بدن اس طرح گھروں کی چوری سے مالکان اور عوام ...

بھٹکل میں نیشنل ہائی وے کی توسیع کو لے کر عوام نے نکالی احتجاجی ریلی؛ بائی پاس نہیں تو 30میٹر کے حدود میں فلائی اوور پر قومی شاہراہ گزارنے کا مطالبہ

شہر کے درمیان سے گزرنے والی قومی شاہراہ 66کو 1966میں این ایچ 17کہا جاتا تھا تب اس کی چوڑائی 30میٹر تھی ، 53سالوں کے بعد شہر بھٹکل کی ترقی ہونے جارہی ہے، ہمیں اس پر نہ کوئی اعتراض ہے اور نہ کوئی اختلاف۔لیکن جس طرح سرکاری نمائندوں، ضلع نگراں کاروزیر ، پروجکٹ مینجر، این ایچ آئی افسران ...

بھٹکل:کنڑا ساہتیہ پریشد کے زیراہتمام طلبا کے درمیان قومی گیت اور تقریری مقابلوں کا انعقاد

یومِ آزادی کی مناسبت سے بھٹکل ساہتیہ پریشد اور بینا وئیدیا تعلیمی ادارے کے اشتراک سے بینا وئیدیا پرائمری اور ہائی اسکول طلبا کے درمیان دیش بھگتی گیتوں کا مقابلے کا اہتمام کیا گیا ۔