تیج پرتاپ کے بعد اب منگل پانڈے نے اپنی رہائش گاہ پر تعینات کیے 4 ڈاکٹر، راجدنے گھیرا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 4:39 PM | ملکی خبریں |

سشیل کمارمودی نے ماضی میں تیج پرتاپ پرحملہ بولاتھا،اسی راہ چلنے پرنشانے پرآئی سرکار
پٹنہ12اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)بہار میں اقتدار کی تبدیلی ہو چکی ہے، لیکن لگتا نہیں کہ حالت میں زیادہ تبدیلی آئی ہے۔ایک کام جب بی جے پی کی مخالف حکومت میں ہوتاہے تووہ غلط ہوتاہے لیکن جب وہی کام بی جے پی سرکارمیں ہوتودرست ہوجاتاہے۔چنانچہ جے ڈی یو،بی جے پی حکومت میں وزیر صحت منگل پانڈے پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر 4 ڈاکٹروں کی تقرری کی ہے۔مہاگٹھ بندھن کی حکومت کے وقت بھی وزیر صحت اور لالو یادو کے بیٹے تیج پرتاپ یادو نے بھی اپنی رہائش گاہ پر ڈاکٹروں کی ڈیوٹی لگادی تھی جس پرسشیل کمارمودی نے جم کرحملہ کیاتھا۔اپنی صفائی میں منگل پانڈے نے کہا کہ جیسے ہی میں نے وزیر کا عہدہ سنبھالا، ویسے ہی میرے رہائش گاہ پر طبی امدادکے لیے لوگوں کاآناشروع ہوگیاہے۔ میرا آفس تیار نہیں ہواہے۔ افسران کی تقرری نہیں ہوئی تھی۔ ایسے میں محکمہ صحت کی مدد سے میں نے اپنی سرکاری رہائش گاہ پر ڈاکٹروں کو مقرر کیا۔ جولوگ میری رہائش گاہ پر آ رہے تھے، ڈاکٹروں نے صرف ان لوگوں کو مشورہ دیا. میرے خاندان کا کوئی بھی رکن وہاں نہیں رہتاہے۔ اسی پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے آر جے ڈی سربراہ لالو یادو نے کہاکہ یہ اقتدار کا غلط استعمال ہے. ہمارے یہاں جب ڈاکٹر کی ڈیپوٹیشن ہوئی تھی، تو بی جے پی نے ہنگامہ کھڑا کر دیا تھا۔اس وقت بی جے پی لیڈر سشیل کمار مودی نے کہا تھا کہ آر جے ڈی صدر لالو پرساد یادو کے گھر پر ڈاکٹروں کی تعیناتی کے عہدہ کاغلط استعمال ہے۔اگرلالوپرساد یادو کی طبیعت اتنی زیادہ خراب تھی توانہیں ایئر لفٹ کرناچاہئے تھایاکم ازکم ایمس کے آئی سی یو میں بھرتی کرنا چاہئے۔ ان کے بیٹے بہار کے وزیر صحت ہیں تو کیا عہدہ کا غلط استعمال کرتے ہوئے صرف موسم سرما،کھانسی اور اسہال جیسی معمولی بیماریوں کے لیے درجنوں ڈاکٹروں کی تعیناتی مناسب ہے؟۔ مودی نے کہاتھاکہ ایمس میں ویسے ہی ڈاکٹروں کی کمی ہے، ایسے میں بیچارے ڈاکٹروں کو آٹھ آٹھ دن تک رہائش گاہ پر تعینات کرناکہاں تک مناسب ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں کشمیر میں بی جے پی۔پی ڈی پی سرکار گرگئی؛ محبوبہ مفتی نے سونپا گورنر کو اپنا استعفیٰ

جموں کشمیر میں بی جے پی نے محبوبہ مفتی سرکار سے اپنی حمایت واپس لے لی ہے جس کے ساتھ ہی ریاست میں تین سالوں سے چلی آرہی گٹھ بندھن سرکار ختم ہوگئی ہے۔ بی جے پی کے سرکار سے  الگ ہونے کی اطلاع کے فوری  فوری بعد محبوبہ نے گورنر این این بوہرا  کو اپنا استعفیٰ سونپ دیا۔

ریاستی کانگریس لیڈروں کو نصیحت کرنے راہل گاندھی سے درخواست بہتر انتظامیہ کو یقینی بنانے دونوں پارٹیوں کے درمیان تال میل ضروری: ایچ ڈی کمار سوامی

ریاستی وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے آج دہلی میں کانگریس صدر راہل گاندھی سے ملاقات کر کے ریاست کی سیاسی صورتحال سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔ ا س ملاقات کے دوران راہل گاندھی نے کمار سوامی کو مشورہ دیا کہ کرناٹک میں کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت کا یہ ابتدائی دور ہے۔

کسانوں کا قرضہ معاف کرنے مرکزی حکومت سے تعاون کی اپیل 85لاکھ سے زائد کسان مشکلات کا شکار ہیں ، مصیبت کی گھڑی میں ہاتھ تھامنا مرکزی و ریاستی حکومت کاکام ہے: کمار سوامی

قرض کی دلدل میں پھنسے ہوئے کسانوں کو اوپر لانے کی خاطر کئے جارہے قرضہ معاف اسکیم کو مرکزی حکومت 50فی صد امداد فراہم کرے ، اس خیال کااظہار ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کیا۔

اتر پردیش میں گئو کشی کی افواہ پر مسلم نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل

ملک میں گئو کشی روکنے کے نام پر غنڈہ گردی تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ تازہ معاملہ اتر پردیش میں پلکھوا کے بچھیڑا خرد سے سامنے آیا ہے جہاں گوکشی کی افواہ پر کچھ شرپسندوں نے قاسم نامی نوجوان کو بری طرح مارا پیٹا اور قتل کر دیا۔

سکھ زائرین کی کار ٹرک سے جا ٹکرائی ایک بچہ، تین خواتین سمیت 7ہلاک 

پنجاب کے امرتسر کے پاس سموار اسپورٹس یوٹی لیٹی وہیکل کی ٹرک سے تصادم میں سات لوگ لقمہ اجل ہوگئے ۔واضح ہو کہ مہلوکین میں تین عورت سمیت ایک بچہ بھی ہے ۔ یہ تمام افرادامرتسر کے گولڈن ٹمپل کی زیارت اور پوجا ارچنا کرکے دہلی واپس آرہے تھے۔