کھچا کھچ بھری بس میں طالبہ کے ساتھ فحش حرکت ، مسافرین محو تماشہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 8:28 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 12 فروری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) عوامی مقامات پر جنسی تشدد یا استحصال وہ نام ہے، جس سے کوئی بھی عورت لاعلم نہیں؛ کیونکہ اس کا سامنا سینکڑوں۔ہزاروں لڑکیوں کو اپنی روز مرہ کی زندگی میں کرنا پڑتا ہے ۔ اس بار ایسا ہی ایک واقعہ ملک کے دارالحکومت دہلی میں پیش آیا جس کی مکروہ تصویر سامنے آئی ہے ۔ موصولہ اطلاع کے مطابق دہلی یونیورسٹی کی ایک طالبہ نے کھچا کھچ بھری ایک بس میں ایسے شخص کی حرکتیں ریکارڈ کیں، جو وہیں اس کے سوا بیٹھ ماسٹربیٹ کر رہا تھا۔ اس طالبہ نے ویڈیو ریکارڈ کرکے سوشل میڈیا پر پوسٹ کردیا ، جس میں ایک ادھیڑ عمر کا شخص اپنی گود میں ایک بیگ رکھ کر زیادہ تر مسافروں کی نگاہوں سے بچ کر فحش حرکت کرتا نظر آ رہا ہے، لیکن اس کے ساتھ بیٹھی اس طالبہ کووہ حرکت صاف دکھائی دے رہی ہے۔ طالبہ کا الزام ہے کہ 7 فروری کو پیش آئے اس واقعہ کے دوران اس شخص نے اسے چھونے کی بھی کوشش کی تھی۔ اس کی مخالفت کرتے ہوئے وہ طالبہ سونیا فرضی نام زور سے چلائی، لیکن اس واقعہ کا سب سے زیادہ خوفناک پہلو یہ ہے کہ اس کے چیخ پر بھی وہ شخص قطعی نہیں گھبرایا ؛ کیونکہ اس کی مزاحمت او رچیخ و پکار پر کسی نے توجہ نہ دی ۔ یہ واقعہ اس وقت ہوا، جب بس جنوبی دہلی کے وسنت وہار علاقے میں تھی۔ واقعہ کے فوراََبعدطالبہ بس سے اتر گئی، اور عوامی طور پر فحش حرکت کرنے اور جنسی تشدد کا مقدمہ درج کروانے کے لیے براہِ راست پولیس اسٹیشن پہنچی۔ پیش آئے واقعہ کے تناظر میں خواتین کے تحفظ کو لے کر سوال ایک بار پھر کھڑا ہوگیا ہے ۔ غور طلب ہے کہ سال 2012 میں پیش آئے نربھیا واقعہ نے پوری دلی کو آگ و خو ن کے حوالے کر دیا تھا ؛ لیکن اس کے بعد بھی حکومتی سطح پر اس کے خلاف کوئی مؤثر اقدام نہیں اٹھایا گیا جو کہ حیرت کی بات ہے ۔ وزیر اعلیٰ اروند کجریوال نے کچھ سال پہلے یقین دہانی کرائی تھی؛ لیکن اب تک دہلی کی بسوں میں پولیس کی تعیناتی نہیں ہوئی ہے، اور دارالحکومت میں اب تک CCTV کیمرے بھی نہیں لگائے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

داعش مقدمہ،اورنگ آباد اور ممبرا سے گرفتار مسلم نوجوانوں کو 14؍ دن کی پولس تحویل، جمعیۃ علماء مہاراشٹر نے قانونی امداد فراہم کی

مہاراشٹر کے اورنگ آباد اور ممبئی سے قریب مسلم آبادی والے ممبرا سے گرفتار ۹؍ مسلم نوجوانوں کو آج اورنگ آباد کی خصوصی یو اے پی اے عدالت نے۱۴؍ دنوں کے لیئے پولس تحویل میں دیئے جانے کے احکامات جاری کیئے نیز اس معاملے میں گرفتار کم سن ملزم کو جوئنائل جسٹس ہوم میں بھیج دیا گیا۔

مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملہ، بھگوا ملزمین کے وکلاء نے زخمی گواہوں پراین آئی اے کے دباؤ میں جھوٹی گواہی دینے کا الزام عائد کیا

مالیگاؤں2008ء بم دھماکہ معاملے میں آج بھگواء ملزمین کے وکلاء نے بم دھماکوں میں زخمی ہونے والے تین افراد سے جرح کی اور ا ن پر الزام عائد کیا کہ آج وہ خصوصی عدالت میں این آئی اے کے دباؤ میں ملزمین کے خلاف جھوٹی گواہی دے رہے ہیں۔

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔