کھچا کھچ بھری بس میں طالبہ کے ساتھ فحش حرکت ، مسافرین محو تماشہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 8:28 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 12 فروری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) عوامی مقامات پر جنسی تشدد یا استحصال وہ نام ہے، جس سے کوئی بھی عورت لاعلم نہیں؛ کیونکہ اس کا سامنا سینکڑوں۔ہزاروں لڑکیوں کو اپنی روز مرہ کی زندگی میں کرنا پڑتا ہے ۔ اس بار ایسا ہی ایک واقعہ ملک کے دارالحکومت دہلی میں پیش آیا جس کی مکروہ تصویر سامنے آئی ہے ۔ موصولہ اطلاع کے مطابق دہلی یونیورسٹی کی ایک طالبہ نے کھچا کھچ بھری ایک بس میں ایسے شخص کی حرکتیں ریکارڈ کیں، جو وہیں اس کے سوا بیٹھ ماسٹربیٹ کر رہا تھا۔ اس طالبہ نے ویڈیو ریکارڈ کرکے سوشل میڈیا پر پوسٹ کردیا ، جس میں ایک ادھیڑ عمر کا شخص اپنی گود میں ایک بیگ رکھ کر زیادہ تر مسافروں کی نگاہوں سے بچ کر فحش حرکت کرتا نظر آ رہا ہے، لیکن اس کے ساتھ بیٹھی اس طالبہ کووہ حرکت صاف دکھائی دے رہی ہے۔ طالبہ کا الزام ہے کہ 7 فروری کو پیش آئے اس واقعہ کے دوران اس شخص نے اسے چھونے کی بھی کوشش کی تھی۔ اس کی مخالفت کرتے ہوئے وہ طالبہ سونیا فرضی نام زور سے چلائی، لیکن اس واقعہ کا سب سے زیادہ خوفناک پہلو یہ ہے کہ اس کے چیخ پر بھی وہ شخص قطعی نہیں گھبرایا ؛ کیونکہ اس کی مزاحمت او رچیخ و پکار پر کسی نے توجہ نہ دی ۔ یہ واقعہ اس وقت ہوا، جب بس جنوبی دہلی کے وسنت وہار علاقے میں تھی۔ واقعہ کے فوراََبعدطالبہ بس سے اتر گئی، اور عوامی طور پر فحش حرکت کرنے اور جنسی تشدد کا مقدمہ درج کروانے کے لیے براہِ راست پولیس اسٹیشن پہنچی۔ پیش آئے واقعہ کے تناظر میں خواتین کے تحفظ کو لے کر سوال ایک بار پھر کھڑا ہوگیا ہے ۔ غور طلب ہے کہ سال 2012 میں پیش آئے نربھیا واقعہ نے پوری دلی کو آگ و خو ن کے حوالے کر دیا تھا ؛ لیکن اس کے بعد بھی حکومتی سطح پر اس کے خلاف کوئی مؤثر اقدام نہیں اٹھایا گیا جو کہ حیرت کی بات ہے ۔ وزیر اعلیٰ اروند کجریوال نے کچھ سال پہلے یقین دہانی کرائی تھی؛ لیکن اب تک دہلی کی بسوں میں پولیس کی تعیناتی نہیں ہوئی ہے، اور دارالحکومت میں اب تک CCTV کیمرے بھی نہیں لگائے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

لندن میں سنگاپور کے پاسپورٹ پر رہ رہا نیرو مودی: ای ڈی ذرائع 

ڈائمنڈ کاروباری نیرو مودی اور ان کے خاندان کو کروڑوں روپے کے پنجاب نیشنل بینک فراڈ کیس کی تحقیقات میں شامل ہونے کے لئے نافذ کرنے والے ای ڈی کی طرف سے سمن جاری کئے جانے کے با وجود مافیا مودی نے ہدایات کو نظر انداز کرتے ہوئے بیرون ملک رہنا تو دور وہ تفتیش کاروں کی پہنچ سے بھی دور ...

کرناٹک میں فتح کے بعد راہل کا مودی کو پیغام ، وزیراعظم ملک اور سپریم کورٹ سے بڑا نہیں:راہل گاندھی 

کرناٹک میں یدی یورپا کے وزیر اعلی کے عہدے سے استعفیٰ دینے اور حکومت گرنے کے بعد راہل گاندھی نے بی جے پی اور پی ایم مودی پر جم کر حملہ کیا۔ ساتھ ہی کرناٹک میں بی جے پی کی شکست کو جمہوریت کی جیت بتایا۔

ہمیں اپنی چھٹیوں سے لطف اندوزہونے دیجئے : جسٹس سیکری

کرناٹک میں اقتدار کو لے کر تنازعہ پر سماعت مکمل کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے آج کہا کہ اب ہمیں اپنی چھٹیوں سے لطف اندوز ہونے دیجئے۔ عدالت عظمیٰ میں تین ججوں کے ایک بنچ کی صدارت کر رہے جسٹس اے کے سیکری نے جب عجیب انداز میں یہ تبصرہ کیا اس وقت عدالتی کمرہ قہقہوں سے گونج اٹھا۔