پہلے ہی دن دفاعی وکلاء عدالت سے ندارد، عدالت سخت برہم، گواہ کو دسچارج کردیا،خصوصی عدالت میں زخمیوں کے بیانات کا اندراج شروع

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th January 2019, 9:11 PM | ملکی خبریں |

ممبئی7؍جنوری (ایس او نیوز)مالیگاؤں ۲۰۰۸ بم دھماکہ معاملے میں آج دفاعی وکلاء کو اس وقت پریشانی اٹھانی پڑی جب خصوصی عدالت نے سرکاری گواہ کو دوبارہ گواہی کے لیئے طلب کرنے والی بھگوا ملزمین کی عرضداشت کو خارج کردیا ۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق آج خصوصی این آئی اے عدالت میں ان دھماکوں میں زخمی ہونے والے افراد کی گواہی شروع ہوئی جس کے دوران عدالت میں مالیگاؤں کے ساکن ساجد احمد محمد مصطفی(۳۳) نامی شخص کی گواہی عمل میںآئی جس کے دوران اس نے خصوصی جج ونود پڈالکر کو بتایا کہ ۲۹؍ ستمبر کی شب وہ اس کے دوست انیس کے ہمراہ بھکو چوک چائے پینے کے لیئے گیا تھا جب وہاں بم دھماکہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں اسے سینے اور پیر میں چوٹیں آئی تھی ۔سرکاری وکیل اویناس رسال کے سوالات کے جوابات دیتے ہوئے گواہ نے بتایا کہ اسے بغرض علاج فاران اسپتال میں داخل کیا گیا تھا جہاں پولس نے اس کا بیان درج کیا تھا۔

سرکاری گواہ کے بیان کے اندراج کے بعد جب عدالت نے ملزمین کے وکلاء کو گواہ سے جرح کرنے کا حکم دیا تو عدالت میں موجود جونیئر وکلاء نے کہا کہ ابھی سینئر وکلاء جرح کرنے کے لیئے موجود ہیں نہیں جس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سرکاری گواہ کو ڈسچارج کردیا اوراسے عدالت سے رخصت کرتے ہوئے اپنی کارروائی کل تک کے لئے ملتوی کردی۔

اسی درمیان سرکاری گواہ ، سرکاری وکیل اور متاثرین کی نمائندگی کرنے والے وکلاء کے عدالت سے چلے جانے کے بعد دفاعی وکلاء نے عدالت سے رجوع ہوکر سرکاری گواہ کو گواہی کے لیئے دوبارہ طلب کیئے جانے کی گذارش کی جسے خصوصی جج نے مستر دکردیااور انہیں حکم دیا کہ وہ کل عدالت میں وقت پر حاضر رہے کر دیگر زخمی سرکاری گواہوں سے جرح کریں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی دفاعی وکلاء پر عدالت نے وقت پر حاضر نہیں رہنے کی وجہ سے جرمانہ عائد کیا تھا نیز ڈاکٹروں کو دوبارہ گواہی کے لیئے طلب کرنے پر انہیں معاوضہ دیئے جانے کے احکامات جاری کیئے تھے۔

دفاعی وکلاء کے عدالت سے غیر حاضر رہنے یا دیر سے عدالت پہنچنے پر بم دھماکوں کے متاثرین کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے کہا کہ بھگوا ملزمین کے وکلاء ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت عدالت کی کارروائی میں خلل پیدا کرنا چاہتے ہیں تا کہ معاملے کی سماعت رک جائے اسی لئے وہ عدالت میں حاضر نہیں رہتے ۔

انہوں نے کہا کہ مقدمہ کی سماعت کے ایام میں عدالت میں جمعیۃ علماء کی جانب سے ایڈوکیٹ شاہد ندیم اپنے رفقاء کے ساتھ موجود رہتے ہیں لیکن دفاعی وکلاء بیشتر مواقعوں پر عدالت سے غیر حاضر رہتے ہیں تاکہ عدالت کی کارروائی چل نہ سکے ۔ انہوں نے مزید کہاکہ خصوصی جج پڈالکر نے دفاعی وکلاء پر جو جرمانہ عائد کیا ہے وہ اس کا خیر مقدم کرتے ہیں نیز انہیں امید ہیکہ اگر عدالت کا رویہ ایسے ہی سخت رہا تو دفاعی وکلاء کو مزید ہزیمت اٹھانا پڑ سکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بورڈنگ پاس پر مودی کی تصویر پر تنقید کے بعد ایئر انڈیا نے انہیں واپس لیا

ایئر انڈیا نے تنقید کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی اور گجرات کے وزیر اعلی وجے روپانی کی تصاویر والے بورڈنگ پاس واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ایئر لائنز نے پہلے کہا تھا کہ تصاویر والے بورڈنگ پاس تیسری پارٹی کے اشتہارات کے طور پر جاری کئے گئے اور اگر یہ مثالی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ...

دہلی میں خدمات پر کنٹرول کے معاملے پر فیصلے کیلئے وسیع بنچ بنائے عدالت عظمی: آپ حکومت

قومی راجدھانی دہلی میں انتظامی خدمات پر کنٹرول کے معاملے پر جلد فیصلہ لینے کے لیے آپ حکومت نے پیر کو سپریم کورٹ سے ایک وسیع بنچ قائم کرنے کی درخواست کی۔چیف جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس دیپک گپتا کی بنچ کے سامنے اس معاملے کا ذکر کیا گیا تو بنچ نے آپ حکومت کے وکیل سے کہا کہ اس پر غور ...

عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں گوتم کھیتان اور تین دیگر کو طلب کیا

دہلی کی ایک عدالت نے منی لانڈرنگ کے ایک معاملے میں ای ڈی کی طرف سے چارج شیٹ داخل کئے جانے کے بعد پیر کو وکیل گوتم کھیتان، ان کی بیوی ریتو اور دو کمپنیوں اسمیکس اور ونڈفور کو طلب کیا۔خصوصی جج اروند کمار نے چاروں ملزمان کو چار مئی کو پیش ہونے کے لئے کہا ہے

سبرامنیم سوامی بولے: میں برہمن ہوں، چوکیدار نہیں ہو سکتا

کانگریس کی جانب سے 'چوکیدار چور ہے" کا نعرہ اچھالے جانے کے جواب میں بھارتیہ جنتا پارٹی نے " میں بھی چوکیدار ہوں' کیمپین شروع کیا۔ اس کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی سمیت بی جے پی کے تقریبا سبھی لیڈران نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹویٹر پر اپنے نام کے آگے 'چوکیدار' لفظ لگایا لیا۔

سشیل کمارمودی کا شتروگھن سنہا کو مشورہ، انتخابات نہ لڑیں، پولنگ ایجنٹ تک نہیں ملے گا

بی جے پی کے سینئر لیڈر اور بہار کے نائب وزیراعلیٰ سشیل کمارمودی نے پارٹی کے باغی لیڈر شتروگھن سنہاپرکراراحملہ بولاہے۔سشیل مودی نے کہا کہ شتروگھن سنہا کو پٹنہ صاحب لوک سبھا لوک سبھا میں پولنگ ایجنٹ ملنا مشکل ہو جائے گا۔