مدھیہ پردیش میں ای وی ایم کے بعد اب پوسٹل بیلٹ کی سیکورٹی پراٹھے سوال، ہوم گارڈ کینٹین میں لاوارث حالت میں ملے 71پوسٹ بیلٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 9:39 PM | ملکی خبریں |

بھوپال،6دسمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)مدھیہ پردیش اسمبلی کے انتخاب کے بعدیہاں ای وی ایم کی حفاظت کولے کر سوال اٹھ رہے تھے۔وہیں اب پوسٹل بیلٹ سے منسلک لاپرواہی کامعاملہ بھی سامنے آیا ہے۔دراصل بھوپال میں واقع پولیس ہیڈکوارٹر کے ہوم گارڈ کینٹین میں 71پوسٹ بیلٹ لاوارث حالت میں ملے۔اس کیس کے بعد ایک سب انسپکٹرکو فوری طور پر معطل کردیا گیا ہے،جبکہ کلکٹر نے دوسپاہیوں کے خلاف کارروائی کے لئے ہوم گارڈ ڈی جی کو ایک خط لکھا ہے،ان تینوں پولیس اہلکاروں پر رازداری کوختم کرنے کا الزام ہے۔ایک سینئر پولیس اہلکار کے مطابق ان تینوں پولیس اہلکاروں کی ذمہ داری تھی پوسٹر بیلٹ لینے کے بعد محفوظ جگہ میں رکھنا ۔انہوں نے اس معاملے میں غفلت ظاہر کرتے ہوئے اسے کینٹین میں رکھا۔پولیس اہلکار نے کہا کہ جو پوسٹل بیلٹ کینٹین سے ملے ہیں ان میں سے تین کے ووٹوں کو مسترد کیا گیا ہے جبکہ 71پوسٹل بیلٹ غیرمستعمل ہیں۔ آپ کو بتادیں کہ منگل کو پوسٹل بیلٹ کے کھلے میں پڑے ملنے کی اطلاع سے حکام میں ہنگامہ برپاہوگیاتھا۔واضح رہے کہ کچھ وقت پہلے الیکشن کمیشن نے قبول کیا ہے کہ بھوپال کے اسٹرونگ روم میں پولنگ ختم ہونے کے بعد ای وی ایم مشینیں رکھی گئی تھیں،وہاں اچانک بجلی جانے سے سی سی ٹی وی کیمرے تقریباََایک گھنٹے تک بند رہے،اس کی وجہ سے سب کچھ ٹھپ پڑ گیا تھا۔کمیشن نے یہ بھی کہا ہے کہ ساگرمیں پولنگ ختم ہو نے کے2دن بعدای وی ایم مشینوں کو جمع کرنے کے معاملے میں ایک افسر کے خلاف کارروائی کی گئی تھی۔آپ کو بتادیں کہ بھوپال اور ساگر کا معاملہ سامنے آنے کے بعدسے ہی اپوزیشن جماعتیں ای وی ایم مشینوں سے چھیڑخانی کاالزام لگارہے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی کا زوال یا راہل کا عروج ؟ فیصلہ منگل کو

ومبر اور دسمبر میں کئی مرحلوں میں5 ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹ ڈالنے کا عمل پورا ہو چکا ہے۔ ان میں سے مدھیہ پردیش، راجستھان اور چھتیس گڑھ میں بی جے پی اقتدار میں ہے۔

ہندوستان کو آگ میں جھونکنے کی کوششیں تیز رام لیلا میدان میں دھرم سبھا کا انعقاد،مندر بنانے کا کیا عزم، بھگوا کپڑوں میں ملبوس رام بھکتوں کا جم غفیر

ایودھیا میں دھرم سبھا کے بعد دہلی کے رام لیلا میدان میں دھرم سبھا کے انعقاد سے سنگھ اور اس کی ذیلی تنظیموں نے واضح کر دیا ہے کہ آئندہ سال ہونے والے عام انتخابات سے پہلے رام مندر تعمیر کے مدے کو اتنا بڑا کر کے پیش کیا جائے کہ رافیل، نوٹ بندی، جی ایس ٹی، بے روزگاری، کسانوں کے مسائل ...

ڈی ایم کے سربراہ اسٹالن سونیا اور راہل سے ملے

دہلی میں اپوزیشن پارٹیوں کے اجلاس سے ایک دن پہلے ڈی ایم صدر ایم کے اسٹالن نے کانگریس صدر راہل گاندھی اور یو پی اے کی صدر سونیا گاندھی سے اتوار کو ملاقات کی اور کئی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔