مدھیہ پردیش: کنویں میں ملے پانچ معصوم بھائیوں کی لاشیں، والدین فرار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th October 2018, 9:43 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بڑوانی ،10؍ اکتوبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) مدھیہ پردیش کے بڑوانی ضلع میں ایک چونکانے والا معاملہ سامنے آیا ہے، جہاں پانچ چھوٹے بچوں کی لاش کنویں میں پڑی ملی۔یہ معاملہ بڑوانی ضلع کا ہے جہاں ہیڈکوارٹر سے تقریباً 80 کلو میٹر دور چکھلی گاؤں میں بدھ کی صبح ایک ہی خاندان کے پانچ معصوم بھائیوں کی لاش ایک کنویں میں ملی۔ واقعہ کے بعد سے ہی بچوں کے والدین مفرور ہیں۔بڑوانی ضلع کے اضافی پولیس سپرنٹنڈنٹ اومکار سنگھ کلیش نے بتایاکہ پانچوں بچوں کی لاش بدھ کی صبح سیدھوا دیہی تھانہ علاقے چکھلی گاؤں کے کنویں میں ملی۔تمام بچوں کی عمر تین سال سے سات سال کے درمیان ہے۔ان بچوں کی لاشوں کو سب سے پہلے دیہاتیوں نے دیکھا اور پولیس کو معلومات دی۔بعد میں پولیس نے دیہاتیوں کی مدد سے ان لاشوں کو باہر نکالا۔انہوں نے کہا کہ یہ بچے چکھلی گاؤں کے رہائشی 40سالہ بھرت سنگھ کے ہیں۔اس کی دو بیویاں ہیں۔پہلی بیوی سے چار بیٹے اور دوسری سے ایک بیٹا تھا، جو تمام مشتبہ حالت میں کنویں میں مردہ پائے گئے ہیں۔واقعہ سامنے آنے کے بعد سے ہی بھرت سنگھ اور اس کی دونوں بیویاں فرار ہیں۔پولیس ان کی تلاش کر رہی ہے، لیکن ان کا کوئی پتہ نہیں چل سکا ہے۔افسر نے بتایا کہ پولیس کو دونوں بیویوں کے درمیان گھریلو اختلاف کے چلتے قتل کا خدشہ ہے۔بچے کے والد بھرت سنگھ کی بھی تلاش کی جا رہی ہے۔حالانکہ کلیش نے بتایا کہ واقعہ کی اصل وجہ بھرت سنگھ اور اس کی بیویوں کے سامنے آنے کے بعد ہی پتہ چل پائے گا۔انہوں نے کہا کہ تمام لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

تلنگانہ میں 19فروری کو کابینہ کی توسیع

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ دوبارہ اقتدار میں آنے کے دو ماہ کے بعد اپنی کابینہ میں توسیع کرنے کی تیاری میں ہے اور ساری بحث اب اس بات پر ٹک گئی ہے کہ اس میں کن لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔

بھٹکل میں مجلس اصلاح وتنظیم کی جانب سے پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کی کڑی مذمت: تحصیلدار کی معرفت وزیراعظم کو میمورنڈم ؛کڑی کارروائی کا مطالبہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل نے تحصیلدار کی معرفت وزیر اعظم نریندر مودی کو اپیل سونپتے ہوئے دہشت گردی کا کرار ا جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

بھٹکل: شرالی میں ہائی وے کی توسیع کے دوران ہنگامہ؛ پولس کی لی گئی مدد؛ عوامی مخالفت نظرانداز؛ 30میٹرکی ہی توسیع کے ساتھ کام شروع

شرالی میں قومی شاہراہ کی تعمیر 45میٹر کی توسیع کے ساتھ ہی کی جائے ، کسی حال میں بھی توسیع کو 30میٹر تک کم کرنے نہیں دیں گے۔  مقامی  عوام کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتطامیہ بدھ کو 30 میٹر کی توسیع کے ساتھ شاہراہ تعمیری کام کی شروعات کی۔