مدھیہ پردیش: اسمبلی میں زانیوں کو پھانسی دیئے جانے کی تجویز کا بل منظور 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th December 2017, 8:55 PM | ملکی خبریں |

بھوپال 4دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) مدھیہ پردیش اسمبلی کے سرمائی اجلاس میں 12 سال یا اس سے کم عمر کی لڑکیوں سے عصمت دری یا کسی بھی عمر کی عورت سے گینگ ریپ سے جرم کے ارتکاب میں پھانسی کی سزا دینے کی منظوری دے دی ہے۔ باہمی اتفاق رائے سے گزرنے والے بل میں حکومت نے عوامی تحفظ کے قانون میں اپوزیشن کی طرف سے اٹھائے گئے اعتراضات پر یقین دہانی کرائی ہے۔ اس بل پر اب قانونی مہر کے لئے صدر کو بھیجا جائے گا۔ بل پر بحث کے دوران وزیر اعلی شیوراج سنگھ چو ہان نے کہا کہ اس معاملے پر اخلاقی تحریک چلانے کی ضرورت ہے تاکہ عصمت دری کے بڑھتے واقعات پر قداغن لگائی جا سکے۔ شیوراج نے کہا کہ خواتین بالخصوص لڑکیوں کی حفاظت تشویش ناک امر ہے اور اسی کو لے کر اسمبلی نے ایک تاریخی بل بھی پاس کیا ہے جس میں 12 سال یا اس سے کم عمر کی بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کی شکل میں مجرموں کو پھانسی کی سزا مقرر کی گئی ہے ۔واضح ہو کہ قانونی احکامات کے ساتھ ساتھ معاشرے میں اخلاقی تحریک بھی چلائے جانے کی ضرورت ہے۔اسمبلی میں منظور ہوئے بل کے مطابق تعزیرات ہند کی دفعہ 376 (عصمت دری) اور 376 ڈی (اجتماعی عصمت دری) میں ترمیم کی تجویز کو منظوری دی گئی ہے ، تاہم دونوں میں پھانسی کی سزا کو شامل کیا گیا ہے۔ خواتین کے ساتھ چھیڑخانی اور گھورنے پر ایک لاکھ روپے کی سزا ہے۔ وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے کچھ دنوں پہلے 19 سال کی بچی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کے واقعہ کے بعد کہا تھا کہ عصمت دری کے قصورواروں کو پھانسی کی سزا دینی چاہیے اور وہ قانون بنا کر بل کو منظوری کے لئے حکومت ہند کو بھیجیں گے۔ این سی بی آر کے2016 کے اعداد و شمار میں بھی ملک سطح پر عصمت دری کے معاملات میں مدھیہ پردیش امتیازی مقام حاصل کرتے ہوئے پہلی پوزیشن پر برقرار ہے ۔ اس مذکورہ اعداد و شمار کے لحاظ اس سے حکومت سخت اقدامات کر سکتی ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

گجرات فسادات: 26نومبر تک ٹلی ذکیہ جعفری کی درخواست پر سماعت

سپریم کورٹ نے 2002میں گودھرا سانحہ کے بعد ہوئے فسادات کے سلسلے میں گجرات کے سابق وزیر اعلی نریندر مودی کو خصوصی تحقیقات ٹیم کی طرف سے کلین چٹ دئے جانے کو چیلنج کرنے والی ذکیہ جعفری کی درخواست پر پیر کو سماعت 26نومبر تک کے لیے ملتوی کر دی۔جسٹس اے ایم کھانولکر کی سربراہی میں والی ...

سپریم کورٹ نے کہا،نہیں ملتوی ہوگی سماعت، آلو ک ورماجلد از جلدداخل کریں جواب

سپریم کورٹ نے پیر کو سی بی آئی کے ڈائریکٹر آلوک کمار ورما سے کہا کہ ان کے خلاف بدعنوانی کے الزامات کے بارے میں سی وی سی کی جانچ رپورٹ پر جلد سے جلد آج ہی اپنا جواب داخل کریں۔عدالت نے واضح کیا کہ اس کیس کے لئے منگل کو مقدمے کی سماعت نہیں ٹالی جائے گی

یوپی حکومت کے پاس معذوربچوں کیلئے اسکول کھولنے کو بجٹ نہیں، سیاست چمکانے کیلئے کمبھ میلے پرکروڑوں روپے خرچ کر رہی ہے: راج بھر

اتر پردیش کے وزیر کابینہ اوم پرکاش راج بھر نے بی جے پی کی قیادت والی ریاستی حکومت پر ایک بار پھر نشانہ لگاتے ہوئے الزام لگایا کہ ریاستی حکومت کوکمبھ کے لئے ہزاروں کروڑ روپے خرچ کر رہی ہے لیکن معذور بچوں کے لئے اسکول کھولنے کو اس کے پاس بجٹ ہی نہیں ہے

سیاسی نظریات کی جنگ ہے اسمبلی انتخابات:سچن پائلٹ

کانگریس کے ریاستی صدر سچن پائلٹ نے پیر کو کہا ہے کہ ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخابات دو سیاسی نظریات کی جنگ ہے۔پائلٹ نے ٹونک اسمبلی نشست سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے بعد صحافی سے کہا کہ بی جے پی نے عوام کو دھوکہ دیا اور اس کارپورٹ کارڈ عوام کے سامنے ہے۔انہوں نے کہا کہ ناراض لوگ ...

سی بی آئی بمقابلہ سی بی آئی: آلوک ورما نے سی وی سی کی رپورٹ پر سپریم کورٹ کو سونپا جواب

سی بی آئی کے چھٹی پر بھیجے گئے ڈائریکٹر آلوک کمار ورما نے خود پر عائد بدعنوانی کے الزامات کو لے کر مرکزی ویجلنس کمیشن کی ابتدائی رپورٹ پر اپنا جواب داخل کر دیا ہے۔ ورما نے پیر کی دوپہر سیل بند لفافے میں سپریم کورٹ کو اپنا جواب سونپا۔ اس کیس میں عدالت منگل کو سماعت کرے گی ۔عدالت ...

کنہیا کمار اور جگنیش میوانی پر پھینکی گئی سیاہی، ملزم گرفتار

جواہر لال نہرو یونیورسٹی، (جے این یو) طالب علم یونین کے سابق صدر اور طالب علم رہنما کنہیا کمار اور گجرات کے ممبر اسمبلی جگنیش میواي پر پیر کو یہاں ایک پروگرام کے دوران ہندو سینا کے ایک کارکن نے سیاہی پھینک دی۔موقع پر تعینات پولیس نے فوری طور پر اس کارکن کو گرفتار کر لیا۔اس دوران ...