آئندہ ایک سال میں ہونگے پارلیمانی انتخابات۔ اننت کمار ہیگڈے مرکز میں رہیں گے یا ریاست میں؟

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 26th May 2018, 8:21 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 26/جون  (ایس او نیوز) جون ۲۰۱۴ ؁ء میں اپنا پہلا سیشن شروع کرنے والی پارلیمان کی میعادمئی ۲۰۱۹ ؁ء کو ختم ہونے جارہی ہے۔ یعنی اس کا مطلب یہ ہے کہ آئندہ ایک سال کے اندر پارلیمانی انتخابات منعقد ہونگے۔ 

حالات پر خصوصی نظر رکھنے والوں کے علاوہ عام لوگوں کو بھی اس بات احساس ہوگیا ہے کہ ایک میعاد سے دوسری میعاد تک پہنچتے پہنچتے سیاسی ماحول پوری طرح بدل چکا ہے۔سوال یہ اٹھ رہا ہے کہ کیا آئندہ درپیش انتخاب میں حکومت کی ناکامیاں اپنا کوئی رول ادا کریں گی یا پھر جو حالات ہیں، انہیں میں خوش رہنے والا ماحول سامنے آئے گا، اور موجودہ حکومت کو ہی دوبارہ بر سر اقتدار آنے کا موقع دیا جائے گا۔

ضلع شمالی کینر ا  کی اگر بات کی جائے تو یہاں بھی کچھ تبدیلیاں ہونے کے امکانات نظر نہیں آرہے ہیں۔یہاں سب سے بڑا ایک سوال یہ کیا جارہا ہے کہ کیا اس مرتبہ پارلیمانی نشست پر موجودہ وزیر اننت کمار ہیگڈے انتخابی اکھاڑے میں اتریں گے یا پھر وہ ریاستی سطح پر ابھرنے کے لئے نئی حکمت عملی کے تحت اس سے دور رہیں گے۔کیونکہ اکثر لاپتہ رہ کر چھ مہینے میں ایک بار کبھی دہلی اور کبھی سرسی میں دکھائی دینے والے اننت کمار ہیگڈے اچانک ریاستی سیاست میں پچھلے کچھ مہینوں سے سرگرم ہوگئے ہیں۔اب ان کی دوڑ بھاگ صرف ضلع میں نہیں بلکہ ریاست بھر میں دکھائی دینے لگی ہے۔دوسری پارٹی کے لیڈروں کو بی جے پی میں شامل کروانے میں اننت کمار کا بڑا اہم رول صاف نظر آرہا ہے۔پارٹی کی طرف سے بھی اننت کمار ہیگڈے کو پارٹی کا ریاستی نائب صدر بنایا گیا ہے۔

پچھلے چھ مہینوں میں ان کی مشغولیت کو دیکھتے ہوئے انہیں ریاستی وزیراعلیٰ بنائے جانے کی بھی افواہیں اڑنے لگی تھیں۔اور کچھ مواقع پر اننت کمار ہیگڈے نے اپنی تقاریر میں اس بات کا بھی اشارہ کیا ہے کہ وہ اب پارلیمانی انتخاب میں حصہ لینے کا ارادہ نہیں رکھتے ۔پانچ مرتبہ رکن پارلیمان بناکر بھیجا یہی کافی ہے۔اسی پس منظر میں جانکاروں کاکہنا ہے کہ اننت کمار نے ریاستی گدی پر نشانہ سادھ لیا ہے۔اس اندازے کو تقویت دینے والا اشارہ اس بات سے بھی مل جاتا ہے کہ اس مرتبہ ریاستی اسمبلی کے لئے امیدواروں کو منتخب کرنے میں بھی کئی نشستوں پر اننت کمار نے اپنی بات منوائی ہے اور ہائی کمان سے اپنے پسندیدہ امیدوار کو ٹکٹ دلایا ہے۔اس لئے سیاسی پنڈتوں کا ایک حلقہ اننت کمار کو ریاستی سیاست میں قدم جماتے ہوئے دیکھ رہا ہے اور توقع یہ کی جارہی ہے کہ اس مرتبہ پارلیمانی الیکشن میں بی جے پی کی طر ف سے کوئی اور چہرہ میدان میں اترے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

بے کار پڑا ہے بھٹکل بندر پر پینے کے صاف پانی کا مرکز۔ 12لاکھ روپے کا تخمینہ۔ ادھورا پڑا ہے منصوبہ

بھٹکل تعلقہ کے ماوین کوروے علاقے میں واقع بندرگاہ پر پینے کے صاف پانی کا ایک مرکز 12لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کرنے کا منصوبہ شروع ہوئے دو سال کا عرصہ گزرچکا ہے۔ ٹھیکے دار کی غفلت اور افسران کے کاہلی کی وجہ سے ابھی تک یہ منصوبہ پورا نہیں ہوا ہے اور عوامی استعمال کے لئے دستیاب ...

ہائی اسکول او رکالجوں کے امتحانات مقررہ وقت پر ہوں۔سرسی میں اے بی وی پی نے دیا میمورنڈم

ریاستی سرکار کی طرف سے ابھی تک وزیر تعلیم کا قلمدان کسی کو نہ دینے اور طلبہ کی تعلیمی زندگی کے ساتھ کھلواڑ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے اراکین نے تحصیلدار کی معرفت میمورنڈم دیا اورمطالبہ کیا ریاست کے پرائمری اور سیکنڈری محکمہ تعلیمات کو تباہ ہونے سے ...

کاروار: کائیگا اٹامک اینرجی پلانٹ توسیعی منصوبہ۔ عوامی اجلاس ملتوی کرنے کے لئے دیا گیا میمورنڈم

کائیگا میں واقع جوہری توانائی کے مرکز میں مزید دو نئے یونٹس قائم کرنے کا جو منصوبہ زیرغور ہے اس کے سلسلے میں عوامی شکایات اور احوال جاننے کے لئے 15دسمبر کو عوامی اجلاس منعقد ہوناطے تھا۔ لیکن سابق رکن اسمبلی ستیش سائیل کی قیادت میں عوام کی طرف سے ایڈیشنل ڈی سی ڈاکٹر سریش ایٹنال ...

کاروار میں 22اور23دسمبر کومنعقد ہوگا روزگار میلہ

کاروار رکن اسمبلی روپالی ایس نائک کی قیادت میں 22اور23دسمبر کو ایک زبردست روزگار میلہ منعقد کیا جائے گا، جس میں ملک کے مختلف علاقوں سے 106کمپنیوں کے نمائندے حصہ لیں گے۔توقع کی جارہی ہے کہ تقریباً5300بے روزگار نوجوان اس میلے سے فائدہ اٹھائیں گے ۔

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔

بھٹکل میں آدھا تعلیمی سال گزرنے پر بھی ہائی اسکولوں کے طلبا میں نہیں ہوئی شو ز کی تقسیم  : رقم کا کیا ہوا ؟

آخر اس  نظام ،انتظام کو کیا کہیں ،سمجھ سے باہر ہے! تعلیمی سال 2018-2019نصف گزر کر دو تین مہینے میں سالانہ امتحان ہونے ہیں۔ اب تک بھٹکل کے سرکاری ہائی اسکولوں کو سرکاری شو بھاگیہ میسر نہیں ، نہ کوئی پوچھنے والا ہے نہ  سننے والا۔شاید یہی وجہ ہے کہ محکمہ تعلیم شو، ساکس کی تقسیم کا ...

سوشیل میڈیا اور ہماراسماج ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ (از: سید سالک برماور ندوی)

اکیسویں صدی کے ٹکنالوجی انقلاب نے دنیا کو گلوبل ویلیج بنادیا ہے۔ جدید دنیا کی حیرت انگیزترقیات کا کرشمہ ہے کہ مہینوں کا فاصلہ میلوں میں اورمیلوں کا،منٹوں میں جبکہ منٹ کامعاملہ اب سیکنڈ میں طےپاتا ہے۔

جیل میں بندہیرا گروپ کی ڈائریکٹر نوہیرانے فوٹو شاپ جعلسازی سے عوام کو دیا دھوکہ۔ گلف نیوز کا انکشاف

دبئی سے شائع ہونے والے کثیر الاشاعت انگریزی اخبار گلف نیوز نے ہیرا گولڈ کی ڈائرکٹر نوہیرا شیخ کی جعلسازی کا بھانڈہ پھوڑتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ    کس طرح اس نے فوٹو شاپ کا استعمال کرتے ہوئے بڑے بڑے ایوارڈ حاصل کرنے اور مشہور ومعروف شخصیات کے ساتھ اسٹیج پر جلوہ افروز ...

کہ اکبر نام لیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔!ایم ودود ساجد

میری ایم جے اکبر سے کبھی ملاقات نہیں ہوئی۔میں جس وقت ویوز ٹائمز کا چیف ایڈیٹر تھا تو ان کے روزنامہ Asian Age کا دفتر جنوبی دہلی میں‘ہمارے دفتر کے قریب تھا۔ مجھے یاد ہے کہ جب وہ 2003/04 میں شاہی مہمان کے طورپرحج بیت اللہ سے واپس آئے تو انہوں نے مکہ کانفرنس کے تعلق سے ایک طویل مضمون تحریر ...