آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کو کبھی خط نہیں لکھا: ایڈی یورپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 11:46 AM | ملکی خبریں |

بنگلورو،10 ؍ستمبر (ایس او نیوز) بھارتیہ جنتاپارٹی نے بروز ہفتہ اس سے انکار کیا کہ پارٹی کے ریاستی صدر بی ایس اڈی یو رپا نے کبھی محکمہ انکم ٹیکس کے سربراہ کو خط لکھ کر ڈی کے شیو کما رکی ٹیکس چوری کے تعلق سے تحقیق کرنے کہا ہو جیسا کہ ہفتہ کو ان کے بھائی ،رکن پارلیمان نے الزام لگا یا ہے۔ایک جعلی خط جاری کرنے کے لیے بی جے پی کے جنرل سکریٹری این روی کمار نے سریش کو لتاڑا اور فرق دکھانے کے لیے ایڈی یورپا کی جانب سے لکھاگیا ایک اور خط دکھایا۔ایڈی یورپا نے بھی محکمہ انکم ٹیکس کو شیو کمار کے خلا ف خط لکھے جانے سے انکار کیا۔انہوں نے کہا کہ آج ڈی کے سریش نے یہ الزام لگایا ہے کہ میں نے ان کے بھائی کی بد عنوانیوں کے تعلق سے تحقیق کرنے محکمہ انکم ٹیکس کے سربراہ کو جنوری 2017میں خط لکھا ہے۔ لیکن میرے ڈی کے شیوکمار کے ساتھ ہمیشہ سے اچھے تعلقات رہے ہیں۔ ہم نے ایک دوسرے پر کبھی تنقید نہیں کی۔پھر کس لیے ان کے خلاف محکمہ انکم ٹیکس کو خط لکھوں؟ سریش اس معاملے میں الجھن پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔وہ خط جعلی ہے۔ بی جے پی کے ذرائع نے کہا کہ یہ خط چن پٹن کے سابق رکن اسمبلی سی پی یوگیشور نے ایڈی یورپاکے نام سے لکھ کر ڈی کے شیوکمار اور ان کے بھائی سریش کو محکمہ انکم ٹیکس کے ساتھ الجھانا چاہا ہوگا۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ خط صاف طور پر جعلی ہے اس لیے کہ ایڈی یورپا کا دستخط دا ئیں جانب ہے جبکہ دوسرے خط میں یہ بائیں جانب ہے۔ای میل آئی ڈی اور ایڈی یورپا کے دفتر کا پتہ بھی جعلی ہے۔بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس ایڈی یورپانے بعدازاں ایک ٹوئیٹ کر کے کہا کہ’’جعلی خط جو ڈی کے برادران کے خلاف میری جانب سے لکھے جانے کی بات کی جار ہی ہے وہ اس کے ناپاک اتحاد کو بچانے کانگریس کی مایوسی کا مظہر ہے۔میں ایسی سستی سیاست میں کبھی ملوث نہیں ہوا ، اگر یہ ثابت ہوگیا تو میں سیاست سے سبکدوش ہوجاؤں گا۔

ایک نظر اس پر بھی

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

آگرہ - لکھنو ایکسپریس وے پرخطرناک حادثہ، 7 لوگوں کی موت اور34 زخمی

اترپردیش میں مین پوری کے پاس آگرہ - لکھنوایکسپریس وے پرہفتہ دیررات خطرناک سڑک حادثہ ہوا۔ یہاں مین پوری ضلع کے کرہل تھانہ علاقے کے پاس دہلی سے وارانسی جارہی ایک پرائیویٹ بس بے قابوہوکرایک ٹرک کے ساتھ ٹکراگئی۔ اس خطرناک سڑک حادثے میں کم از کم7 لوگوں کی موت ہوگئی جبکہ 30 سے زیادہ ...

چیف جسٹس آف انڈیا پرجنسی ہراسانی کا الزام سماعت کے لئے بنچ مقرر۔ الزامات بے بنیاد من گھڑت ہیں۔ عدلیہ خطرہ میں: سی جے آئی

ہندوستان کہاں جارہاہے؟ دلدل کی طرف یا پھر عروج کی اپنی آخری منزل کی طرف۔ موجودہ وقت میں یہ ایسے سوالات ہیں جو ہر ہندوستانی شہری کے ذہن پر کچو کے لگارہے ہیں۔ اقتدار پر بر قرار رہنے کے لئے وزارت عظمیٰ کے تقدس اور اس کے احترام کا بھی خیال نہیں کیاجاتا۔دوسری طرف سب سے بڑا انصاف کا ...