بلگاوی میں لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس 3تا13 دسمبر: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th October 2018, 12:38 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍اکتوبر(ایس او نیوز) ریاستی لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس 3؍ دسمبر سے بلگاوی میں شروع ہوگا۔ ریاستی حکومت نے یہ فیصلہ لیا ہے کہ یہ اجلاس 3؍ سے 13دسمبر تک بلگاوی کے سورنا سودھا میں منعقد کیا جائے گا ۔ بتایا جاتاہے کہ وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے اس سلسلے میں کانگریس قائدین سے تبادلۂ خیال کیا ہے اور اس بات چیت کے نتیجے میں ہی طے ہوا ہے کہ بلگاوی کا دس دنوں کا لیجسلیچر اجلاس 3 تا 13دسمبر منعقد کیا جائے۔ ریاستی کابینہ میں عنقریب اس سلسلے میں فیصلہ لے کر باضابطہ اعلان کردیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے گزشتہ لیجسلیچر اجلاس میں بجٹ پر بحث کا جو اب دیتے ہوئے شمالی کرناٹک کی طرف مکمل توجہ دینے کا وعدہ کیا تھا۔ اور یہ بھی یقین دلایاتھا کہ بلگاوی کے سورنا سودھا میں لیجسلیچر اجلاس کے اہتمام کے ذریعے شمالی کرناٹک کے سلگتے مسائل کو سلجھانے کی طرف پوری توجہ دی جائے گی۔ کرناٹک کو متحد رکھنے اور شمالی کرناٹک کو علیحدہ ریاست بنانے کے مطالبے کو مسترد کرنے کی پہل کرتے ہوئے کمار سوامی نے شمالی کرناٹک میں بعض سرکاری محکموں کو بلگاوی منتقل کرنے کا بھی اعلان کیا۔ اس کے ساتھ ہی چند محکموں کے دفاتر دھارواڑ بھی منتقل ہوئے ہیں۔ اب بلگاوی میں لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس منعقد کرنے کے فیصلے کی وجہ سے شمالی کرناٹک کی طرف توجہ اور بھی زیادہ بڑھ جائے گی۔ حالانکہ بعض خبروں میں کہاجارہا تھا کہ ریاستی حکومت بلگاوی میں لیجسلیچر اجلاس منعقد کرنے کے معاملے میں تذبذب کا شکار ہے، لیکن کانگریس قائدین سے ملاقات کے بعد واضح طور پر یہ بات سامنے آگئی ہے کہ حسب روایت لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس بلگاوی میں ہی منعقد ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ؛ بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کرنے پر مینگلور کے قریب وٹلا اور بنٹوال میں بسوں پر پتھراو

پڑوسی ریاست کیرالہ کے  کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ اور لوٹ مار کی وارداتوں کے بعد پولس نے جب  بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کئے  تو  مینگلور کے قریب  وٹلا اور بنٹوال  میں  بسوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی واردات پیش آئی ہے۔ پتھراو میں   نو ...