بلگاوی میں لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس 3تا13 دسمبر: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th October 2018, 12:38 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍اکتوبر(ایس او نیوز) ریاستی لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس 3؍ دسمبر سے بلگاوی میں شروع ہوگا۔ ریاستی حکومت نے یہ فیصلہ لیا ہے کہ یہ اجلاس 3؍ سے 13دسمبر تک بلگاوی کے سورنا سودھا میں منعقد کیا جائے گا ۔ بتایا جاتاہے کہ وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے اس سلسلے میں کانگریس قائدین سے تبادلۂ خیال کیا ہے اور اس بات چیت کے نتیجے میں ہی طے ہوا ہے کہ بلگاوی کا دس دنوں کا لیجسلیچر اجلاس 3 تا 13دسمبر منعقد کیا جائے۔ ریاستی کابینہ میں عنقریب اس سلسلے میں فیصلہ لے کر باضابطہ اعلان کردیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے گزشتہ لیجسلیچر اجلاس میں بجٹ پر بحث کا جو اب دیتے ہوئے شمالی کرناٹک کی طرف مکمل توجہ دینے کا وعدہ کیا تھا۔ اور یہ بھی یقین دلایاتھا کہ بلگاوی کے سورنا سودھا میں لیجسلیچر اجلاس کے اہتمام کے ذریعے شمالی کرناٹک کے سلگتے مسائل کو سلجھانے کی طرف پوری توجہ دی جائے گی۔ کرناٹک کو متحد رکھنے اور شمالی کرناٹک کو علیحدہ ریاست بنانے کے مطالبے کو مسترد کرنے کی پہل کرتے ہوئے کمار سوامی نے شمالی کرناٹک میں بعض سرکاری محکموں کو بلگاوی منتقل کرنے کا بھی اعلان کیا۔ اس کے ساتھ ہی چند محکموں کے دفاتر دھارواڑ بھی منتقل ہوئے ہیں۔ اب بلگاوی میں لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس منعقد کرنے کے فیصلے کی وجہ سے شمالی کرناٹک کی طرف توجہ اور بھی زیادہ بڑھ جائے گی۔ حالانکہ بعض خبروں میں کہاجارہا تھا کہ ریاستی حکومت بلگاوی میں لیجسلیچر اجلاس منعقد کرنے کے معاملے میں تذبذب کا شکار ہے، لیکن کانگریس قائدین سے ملاقات کے بعد واضح طور پر یہ بات سامنے آگئی ہے کہ حسب روایت لیجسلیچر کا سرمائی اجلاس بلگاوی میں ہی منعقد ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

امبیڈنٹ گھوٹالہ پر پردہ ڈالنے کی منظم سازش گھپلہ باز وجئے تا تا کو بچانے میں سینئر پولیس افسرملوث :ویدیکے

امبیڈنٹ چٹ فنڈ کمپنی کے گھوٹالہ معاملہ پر پردہ ڈالنے کی منظم کوشش ہورہی ہے ۔ حکومت کرپٹ سیاستدانوں کو بچانے کیلئے امبیڈنٹ سے دھوکہ کھائے متاثرین کے ساتھ ناانصافی کررہی ہے۔

ریاست کرناٹک میں پلاسٹک پر پابندی سے تمام اقتصادی شعبہ جات متاثر

یاست کرناٹک اور خاص طور پر بنگلور شہر میں پلاسٹک پر پابندی کے اقدام کو حکام اور افسران کی طرف سے پوری شدت کے ساتھ نافذ کیا جا رہا ہے اور اس کی وجہ سے پلاسٹک کا کاروبار کرنے والے افراد خاص طورپر بہت ہی زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔

بی جے پی سیاسی فائدہ کی خاطر ایوان میں غیر ضروری معاملے نہ اٹھائے :ضمیر احمد خان وقف بورڈ میں دھاندلیوں کاجائزہ لینے حکومت نے کوئی کمیٹی تشکیل نہیں دی۔مانپاڑی کمیٹی غیر قانونی

ریاستی وزیر برائے امور اقلیت ، اوقاف اور حج بی زیڈ ضمیر احمد خان نے آج ریاستی قانون ساز کونسل میں کہا کہ بشمول شمالی کرناٹک ریاست کی ترقی اور مسائل پر بحث و مباحثہ کے لئے بیلگاوی اسمبلی سیشن منعقد کیا گیا ہے ۔