سکیورٹی وارننگ کے سبب کویت نے بیروت کے لیے پروازیں روک دیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th April 2018, 1:10 PM | عالمی خبریں |

بیروت13اپریل (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا)کویت کی فضائی کمپنی نے جمعرات کے روز سے لبنان کے دارالحکومت بیروت کے لیے اپنی پروازیں روک دینے کا اعلان کیا ہے۔ کویت کی سرکاری خبر رساں ایجسنی کونا کے مطابق اس بات کا اعلان بدھ کی شب تاخیر سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہی گئی۔بیان کے مطابق یہ فیصلہ لبنان کے اطراف فضائی حدود میں ہوابازی کے خطرے سے متعلق سکیورٹی انتباہات کی بنیاد پر کیا گیا۔بیان میں مزید کہا گیا کہ قبرص کے حکام کی جانب سے سنجیدہ نوعیت کے سنجیدہ سکیورٹی انتباہات کے کویت کی فضائی کمپنی اپنے عزیز مسافروں کی سلامتی کے واسطے 12 اپریل سے اگلا نوٹفکیشن آنے تک بیروت کے لیے اپنی پروازوں کا سلسلہ موقوف کر رہی ہے۔واضح رہے کہ منگل کی شام فضائی سلامتی کی یورپی تنظیم (یورو کنٹرول) نے فضائی کمپنیوں کو متنبہ کیا تھا کہ وہ آئندہ 72 گھنٹوں کے دوران شام پر فضائی حملوں کے امکان کے سبب مشرق وسطی میں خبردار رہیں۔یورو کنٹرول کا کہنا تھا کہ مذکورہ عرصے کے دوران فضا سے زمین میں مار کرنے والے میزائل یا کروز میزائل اور یا پھر ایک ساتھ دونوں کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ وائرلیس نیوی گیشن سسٹم کے عمل میں وقفے وقفے سے خلل پڑنے کا بھی امکان ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شمالی کوریا میزائل ٹیسٹ سائٹ کو بند کر دے گا: صدر مون

جنوبی کوریا کے صدر مون جائے اِن کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا نے میزائل لانچ اور ٹیسٹ کرنے کے ایک مرکز کو بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔شمالی کوریا کے دارالحکومت پیانگ یانگ میں دونوں ممالک کے صدور کے درمیان ملاقات کے بعد صدر مون نے کہا کہ انھوں نے کم جونگ اُن کے ساتھ جوہری ہتھیاروں کے ...

افغانی اور بنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو پاکستان کی شہریت دیں گےعمران خان

پاکستان میں جو بچے پیدا ہوئے ہیں، ان کو شہریت دی جائے گی۔پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ ان کی حکومت پاکستان میں پیدا ہوئے تمام افغانی اوربنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو شہریت فراہم کرے گی۔ ایکسپریس ٹریبیونل کی خبر کے مطابق حکومت بنانے کے بعد اتوار کو اپنے پہلے دورے ...

امریکا 2019 میں 30 ہزار پناہ گزین قبول کرے گا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے پیر کے روز ایک اعلان میں بتایا ہے کہ آئندہ برس کے لیے پناہ گزین پروگرام کے سلسلے میں پناہ گزینوں کی حد 30 ہزار مقرر کی گئی ہے۔