سعودی عرب نے اسرائیلی فوج کی فائرنگ کی شدید مذمت کردی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 12:28 PM | عالمی خبریں |

ریاض،15 مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب نے نہتے فلسطینی شہریوں پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ اور حملوں کی شدید مذمت کی ہے اور اپنے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ وہ فلسطینی عوام کے جائز حقوق کی بحالی اور نصب العین کے حصول کے لیے ان کے ساتھ کھڑا ہے۔سعودی عرب کی وزارت خارجہ کے ایک سرکاری ذریعے نے سوموار کو ایک بیان میں غزہ کی پٹی میں غیر مسلح فلسطینیوں کو فائرنگ میں ہدف بنانے پر اسرائیلی فورسز کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔وزارت خارجہ کے ذریعے نے عالمی برادری پر زوردیا ہے کہ وہ اسرائیلی فوج کے تشدد کو رکوانے اور برادر فلسطینی عوام کے تحفظ کے لیے اپنی ذمے داریاں پوری کرے۔وزارت خارجہ نے سعودی مملکت کی جانب سے فلسطینی نصب العین اور اقوام متحدہ کی قرارداد وں اور عرب امن اقدام کے مطابق جائز حقوق کے حصول کے لیے جدوجہد کی حمایت کا ا عادہ کیا ہے۔اسرائیلی فوج نے امریکی سفارت خانے کی سوموار کو تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقلی کے خلاف غزہ کی پٹی میں احتجاج کرنے والے ہزاروں فلسطینیوں پر طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ہے۔اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے باون فلسطینی شہید اور بیسیوں زخمی ہوگئے ہیں۔ان کی شہادت کے بعد مارچ کے بعد سے غزہ کے سرحدی علاقے میں اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے جان کی بازی ہارنے والے فلسطینیوں کی تعداد نوّے سے متجاوز ہو گئی ہے۔غزہ کے مکین اسرائیلی فوج کی چیرہ دستیوں اور گذشتہ ایک عشرے سے زیادہ عرصے سے جاری اس فلسطینی علاقے کی ناکا بندی کے خلاف سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔دریں اثناء فلسطینی صدر محمود عباس کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یروشلیم ( مقبوضہ بیت المقدس ) میں امریکی سفارت خانہ کھلنے سے خطے میں عدم استحکام پیدا ہوگا اور تشدد آمیز واقعات کو مہمیز ملے گی۔ترجمان نے کہا کہ اس اقدام کے بعد امریکا اب مشرقِ وسطیٰ میں امن عمل میں ثالث کار کا کردار ادا کرنے کے قابل نہیں رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بوئنگ 737 طیاروں کے سافٹ ویئر کو مزید بہتر بنانے کی منظوری

 امریکی فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن (ایف اے اے) نے بوئنگ 737 میکس طیاروں کے سافٹ ویئر کو بہتر بنانے اور پائلٹوں کی تربیت میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے۔ یہ رپورٹ مقامی میڈیا نے دی ہے۔ دو بڑے حادثوں کے بعد کئی ممالک نے ان طیاروں کی پرواز پر روک لگا دی ہے۔

مفتی تقی عثمانی پرقاتلانہ حملہ شرمناک، دہشت گردی انتہائی مذم عمل اوربزدلانہ حرکت 

پاکستان کے معروف عالم دین اور نامور محقق مولانا مفتی تقی عثمانی پر ہوئے قاتلانہ حملہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے معروف دانشور ڈاکٹر محمد منظورعالم نے کہاکہ یہ حملہ دہشت گردی اور بزدلانہ حرکت ہے جس کی کسی بھی سماج میں کوئی گنجائش نہیں ہے اور ایسے عناصر کے خلاف سخت کاروئی ضروری ہے ...

اﷲ اکبراﷲ اکبرکی صداؤں سے گونج اٹھا نیوزی لینڈ حملے کے بعد پہلی نمازجمعہ کی ادائیگی ۔اجتماع میں وزیراعظم سمیت بڑی تعداد میں غیرمسلموں کی بھی شرکت

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی دو مساجد پر گزشتہ جمعہ ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کی جانب سے خوفزدہ اور افسردہ مسلمانوں کی حوصلہ افزائی نے انسانیت میں انقلاب برپاکردیا ہے۔