سی بی آئی بمقابلہ کولکاتہ پولیس: سپریم کورٹ کے فیصلے کو ممتا اور مرکزی حکومت دونوں نے بتایا ‘اخلاقی جیت‘

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 6th February 2019, 2:37 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:5 /فروری (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا)کولکاتہ پولیس کمشنر راجیو کمارسے سی بی آئی کی پوچھ گچھ کی کوشش کے بعد مغربی بنگال میں چل رہے تنازعہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو ممتا بنرجی نے ’اخلاقی جیت ‘قراردیاہے۔سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ کمشنر راجیو کمار کی کوئی گرفتاری نہیں ہوگی اور نہ ہی ان کے خلاف کوئی تادیبی کارروائی کی جائے گی۔وہیں دوسری طرف مرکزی حکومت نے بھی سپریم کورٹ کے فیصلے کو سی بی آئی کے لئے ’اخلاقی جیت‘ قرار دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے راجیو کمار سے کہا ہے کہ شیلانگ میں سی بی آئی کے سامنے پیش ہوں اور تمام ثبوت ان کوسونپیں اور چٹ فنڈ کیس کی تحقیقات میں تعاون کریں۔سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ممتا بنرجی نے کہاکہ اس ملک میں کوئی بگ باس نہیں ہے۔یہاں صرف عوام ہی بگ باس ہے۔صرف جمہوریت ہی اس ملک کا بڑا مالک ہے۔یہ میری جیت نہیں ہے۔یہ آئین کی جیت ہے۔یہ بھارت کی جیت ہے۔وہیں دوسری طرف مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے کہاکہ سپریم کورٹ نے واضح کر دیا ہے کہ راجیو کمار کو کولکاتہ میں نہیں، بلکہ شیلانگ میں عدالت میں پیش ہونا ہوگا۔ کچھ لوگ اسے جیت بتا رہے ہیں۔ہم کیا کہہ سکتے ہیں۔سوال یہ ہے کہ راجیو کمار 3 سال سے آگے کیوں نہیں آ رہے ہیں؟ لیکن اب تک پوچھ گچھ سے بچتے رہے پولیس کمشنر کو سی بی آئی کے سامنے پیش ہونا ہوگا۔سپریم کورٹ کا فیصلہ CBI کی بڑی اخلاقی فتح ہے۔ساتھ ہی سپریم کورٹ نے مغربی بنگال کے چیف سکریٹری، ڈی جی پی، کولکاتہ پولیس کمشنر کو سی بی آئی کی طرف سے ان کے خلاف دائر توہین درخواستوں پر جواب دائر کرنے کو کہاکہ کورٹ مغربی بنگال کے چیف سکریٹری، ڈی جی پی، کولکاتہ پولیس کے سربراہ سے 20 فروری کو عدالت میں پیش ہونے کو کہہ سکتا ہے۔اب معاملے کی اگلی سماعت کے لئے 20 فروری کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیر اعظم نریندر مودی پہلے چائے و الا، اب چوکیدار بن کر کر رہے تشہیر: مایاوتی

وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف سے شروع کی گئی’میں بھی چوکیدار‘ مہم پر بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی سربراہ مایاوتی نے منگل کو طنز کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ انتخابات میں چائے والا اور اب چوکیدار...، ملک واقعی بدل رہا ہے،