شاہ سلمان کے دورِ حکومت میں سعودی عرب میں تاریخی ڈھا نچہ جاتی اصلاحات

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd June 2018, 11:32 AM | خلیجی خبریں |

ریاض،2جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے 2015میں شاہ عبداللہ کے انتقال کے بعد عنانِ اقتدار سنبھالی تھی۔ان کے زیر قیادت حکومت نے تب سے اب تک بڑے پیمانے پر مرحلہ وار ڈھانچا جاتی اصلاحات پر عمل درآمد کیا ہے۔اس کا مقصد سعودی عرب میں خواہشات پر مبنی ترقیاتی اہداف کا حصول ہے۔شاہ سلمان نے ہفتے کے روز محنت ، اسلامی امور اوراطلاعات و ثقافت کے ورزا کو تبدیل کردیا ہے۔انھوں نے ایک شاہی فرمان کے ذریعے ثقافت کی اطلاعات سے الگ ایک نئی وزارت قائم کردی ہے۔انھوں نے مقدس شہر مکہ کے لیے الگ سے ایک شاہی کمیشن اور ماحول کے تحفظ کے لیے ایک کمیشن کے قیام کا اعلان کیا ہے اور ساحلی شہر جدہ میں واقع تاریخی جگہوں کے تحفظ کے لیے ایک اتھارٹی کے قیام کی منظوری دی ہے۔شاہی فرامین کے تحت داخلہ ، ٹیلی مواصلات ، ٹرانسپورٹ ،توانائی ، صنعت اور معدنیات کی و زارتوں میں متعدد نائبین کا تقرر کیا گیا ہے۔شاہ سلمان نے شاہی کمیشن برائے ینبوع اور جبیل اور شاہ عبداللہ سٹی برائے جوہری اور قابل تجدید توانائی کے نئے سربراہوں کا بھی تقر ر کیا ہے۔تجزیہ نگاروں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب میں انتظامی اصلاحات کا مقصد ریاستی اداروں کو افسر شاہی کی سرخ فیتے کی روایتی پابندیوں اور رکاوٹو ں سے آزاد کرنا ہے کیونکہ ان کی وجہ سے انتظامیہ کی کارکردگی اور فعالیت متاثر ہو رہی ہے۔ان کے بہ قول ڈھانچا جاتی اصلاحات دراصل موثر کارکردگی کے مقصد کے حصول کے لیے ایک مسلسل عمل ہیں۔مختلف اعلیٰ عہدوں پر نئے تقرر اور وزراء سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ مختلف سرکاری محکموں میں اب نجی شعبے کو بھی شریک کار کیا جارہا ہے۔جیسا کہ نجی شعبے سے تعلق رکھنے والی کاروباری شخصیت احمد بن سلیمان الراجحی کو محنت اور سماجی ترقی کی وزرات کا قلم دان سونپا گیا ہے۔انھیں علی بن ناصر الغفیص کی جگہ یہ ذمے داری سونپی گئی ہے۔حکومتی ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی 90 فی صد وزارتوں میں انڈر سیکریٹریز تعینات نہیں۔ نئی اصلاحات سے ان وزارتو ں میں اب اعلیٰ تعلیمی اہلیت اور قابلیت کے حامل افراد کے بہ طور انڈر سیکریٹری تقرر کی راہ ہموار ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

کیرالہ کی این آر آئی خاتون نے منگلورو ایئرپورٹ اسٹاف پر لگایا ،جان بوجھ کر پاسپورٹ پھاڑنے کا الزام؛ ائرپورٹ ڈائرکٹر نے الزام کو کیا خارج

 پڑوسی ریاست کیرالہ۔  کاسرکوڈ کے  ایک این آر آئی نے   الزام لگایا ہے کہ منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر سیکیوریٹی اسٹاف نے جان بوجھ کر اس کی بیوی کا پاسپورٹ اُس وقت   پھاڑ دیا جب وہ اپنے دو چھوٹے بچوں کے ساتھ دبئی روانہ ہونے کے لئے پہنچی تھی۔پاسپورٹ پھاڑنے کے بعد  ائرپورٹ ...

دبئی کے قریب عجمان میں منعقدہ نوائط پریمیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ڈی وی ایس یونائٹیڈ کی شاندار جیت؛ الکریمی چیلنجرس کو فائنل میں شکست

دبئی کے قریب عجمان کے  ایڈن گارڈن میدان میں منعقدہ ایز ٹیکس نوائط پرئمیر لیگ (این پی ایل)  کرکٹ کا پہلا ٹورنامنٹ  ڈی وی ایس یونائیٹید نے جیت لیا، جس کے ساتھ ہی  پانچ ٹیموں پر مشتمل یہ ٹورنامنٹ کامیابی کے ساتھ اختتام پذیر ہوا۔

نوہیرا شیخ کے خلاف چارج شیٹ داخل ہونے پر دبئی سے سرمایہ لگانے والوں نے کیا خیر مقدم، لیکن رقم واپس ملنے کے تعلق سے شش و پنج برقرار

’ہیرا گروپ‘ کی پونزی اسکیم میں سرمایہ لگاکر فریب کھانے والے خلیجی ممالک میں مقیم افراد نے کمپنی کی سی ای او   نوہیرا شیخ کے خلاف ممبئی میں چارج شیٹ داخل کیے جانے کا خیر مقد م کیا ہے۔ مگر ان میں سے بہت سارے لوگ اپنی رقم واپس ملنے کے تعلق سے زیادہ پُر امید بھی نظر نہیں آرہے ہیں۔

دبئی میں راہل نے اخبار نویسوں سے کہا؛ ’بی جے پی مشتعل اور غیر روادار؛ کررہی ہے ہمارے اداروں کو برباد؛ مگر ہم اب اُنہیں ایسا کرنے دیں گے

متحدہ عرب امارات کے دورہ پر پہنچے راہل گاندھی نے دبئی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مودی حکومت پر راست حملہ کیا اور  کہ  ’’بی جے پی مشتعل اور غیر روادار ہو رہی ہے اور ہمارے اداروں کو برباد کر رہی ہے، جیسا کہ  سپریم کورٹ ، ریزرو بینک اور الیکشن کمیشن   آف انڈیا  میں ...

دبئی میں راہول گاندھی نے کہا؛ میں آپ کے من کی بات سننے آیا ہوں؛ ہزاروں کی بھیڑ میں راہول کا چل گیا جادو؛ راہول۔راہول کے نعرے

کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے کہاکہ آئندہ برس ہونے والے عام انتخابات کے بعد مرکز میں ان کی حکومت بننے پر آندھراپردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دیا جائے گا۔متحدہ عرب امارات کے اپنے پہلے دورہ پر آئے مسٹر گاندھی نے جمعہ کو شرمک کالونی میں رہنے والے ہندوستانیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ...

ایران سے رہا ہونے والے سبھی ہندوستانی ماہی گیر خیروعافیت کے ساتھ دبئی پہنچ گئے

کل منگل کو ایرانی عدالت کے حکم سے رہا ہونے والے ضلع اُتر کنڑا کے 18 ماہی گیر سمیت جملہ 28 ماہی گیروں کی دونوں بوٹ  آج بدھ رات کو خیر و عافیت کے ساتھ دبئی پہنچ گئی۔ جس کے ساتھ ہی سبھی ماہی گیروں کے گھروالوں اور دوست احباب میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔