کیرلا حکومت نے سیلاب اور تباہی کیلئے تملناڈو حکومت کی لاپرواہی کو ذمہ دار ٹھہرایا 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th August 2018, 11:39 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو؍تروننت پورم،25؍اگست(ایس او نیوز) کیرلا حکومت نے مرکزی حکومت کو ریاست میں سیلاب اور بارش سے ہوئی زبردست تباہی کے سلسلے میں روانہ کردہ اپنی رپورٹ میں اس تباہی کیلئے تملناڈو حکومت کی لاپرواہی اور غفلت کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

کیرلا حکومت نے سپریم کورٹ میں داخل کردہ اپنے حلف نامہ میں واضح کیا ہے کہ کیرلا کے ملا پریار آبی ذخیرہ سے اچانک ضرورت سےزیادہ پانی خارج کیے جانے سے کیرلا میں سیلاب کی صورت حال پیدا ہوئی تھی۔ اس کیلئے تملناڈو حکومت بڑی حد تک ذمہ دار ہے۔ حلف نامہ میں کہا گیا ہے کہ اس سیلاب  سے کیرلا میں350افراد کی موت واقع ہوئی ہے، ہزاروں کروڑ کا مالی نقصان ہواہے، فصلیں اور مکانات تباہ ہوئے ہیں ۔ تامل ناڈو سرکار کی لاپرواہی کے نتیجہ میں یہ تباہی مچی ہے۔

تملناڈو حکومت نے بند سے پانی بہائے جانے کے تعلق سے قبل از وقت کیرلا حکومت کو احتیاطی اقدامات کرنے کوئی پیغام روانہ نہیں کیا تھا۔  اس طرح بند سے پانی بہانے سے کیرلا کے سب سے اہم آبی ذخیرہ اڈکی ڈیم پر آپ ہونے سے وہاں بڑی مقدار میں پانی بہایا گیا تھا اس سیلاب سے کیرلا میں 10 لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں ان کی املاک اور مکانات تباہ ہوئے ہیں ۔ اس وقت سیلاب متاثرین کیلئے کیرلا میں سب سے زیادہ طبی امداد اور کھانے  پینے کی اشیاء  کی ضرورت ہے۔ کیرلا کے کئی اسپتالوں میں بھی سیلابی پانی داخل ہونے سے مریضوں کا علاج دشوار ہوگیا ہے۔ اس حلف نامہ کے داخل کرنے پر تملناڈو حکومت کی جانب سے وضاحت کی گئی ہے کہ اس سیلاب کیلئے تملناڈو ذمہ دار نہیں ہے۔ تملناڈو کے وزیر اعلیٰ یلہنی سوامی نے واضح کیا ہے کہ کیرلا میں سیلاب کی صورتحال پیدا ہونے کے بعد تامل ناڈو کے آبی ذخیرہ سے پانی بہایا گیا تھا، تملناڈو حکومت پر اس طرح کا الزام عائد کرنا مناسب نہیں ہے۔ 

کورگ ضلع کے مختلف دیہاتوں کیلئے کے ایس آر ٹ یسی منی بس سرویس :کورگ ضلع میں بارش اور سیلاب سے زمین بیٹھ جانے اور راستوں پر دراڑ پڑنے سے کے ایس آر ٹی سی نے کورگ ضلع میں مرکیرہ۔سولیا روٹ پر بس سرویسز روک دی تھی۔ اب مسافروں کی سہولت کیلئے کے ایس آر ٹی سی نے مرکیرہ ۔سولیا کے درمیان پناتو ، کریکے ، بھاگ منڈل کے راستہ سے منی بس سرویس شروع کی ہے 5منی بسیں یہاں روزانہ ۱۴ ٹرپ دوڑا کرینگی ۔ اس کے نتیجہ میں کورگ میں لوگوں کو اب آس پاس کے علاوں میں تک آنے جانے کی کوئی خاص دشواری پیش نہیں آئیگی۔  
 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:آر ایس ایس پرچارک تربیتی کیمپ میں امیت شاہ کی شرکت۔ سرخ دہشت گردی ، رام مندر، سبریملا اور انتخابات پر ہوئی خاص بات چیت

ملک کی مختلف ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کی مصروفیت کے باوجود بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے منگلورو میں آر ایس ایس ’ پرچارکوں‘ کے لئے منعقدہ 6 روزہ تربیتی کیمپ کے اختتام سے ایک دن پہلے ’سنگھ نکیتن‘ میں پہنچ نے کے لئے وقت نکالااور تربیتی کیمپ کے شرکاء سے خطاب کیا۔

مشاعروں کو با مقصد بنا کر نفرت کے ماحول کو پیار اور محبت میں بدلا جاسکتا ہے : سید شفیع اللہ

مشاعرے اردو زبان اور ادب کی تہذیب کے ساتھ ساتھ امن اور اتحاد کو فروغ دینے کا ذریعہ بھی ہیں۔ ملک اور سماج کے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مشاعروں کا انعقاد کیا جائے۔ بنگلورو میں بزم شاہین کے کل ہند مشاعرے میں ان خیالات کا اظہار کیا گیا۔

ٹیپوجینتی منسوخ کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے جواہر لال نہروکی جنم دن تقریب سے وزیراعلیٰ کااظہار خیال

کسانوں کی طرف سے حاصل کردہ زرعی قرضہ معاف کئے جانے کے سلسلہ میں شکوک وشبہات کا شکار نہ ہوں۔ قرضہ وصولی کیلئے کسانو ں کوغیر ضروری طور پر اذیت دی گئی تو بینک منیجرکو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے ۔

سابق ایم پی پرفل کمار مہیشوری کی موت

راجیہ سبھا کے سابق رکن، یونائٹیڈ نیوز آف انڈیا)(یو این آئی) کے چیرمین (ایمریٹس)اور نوبھارت اخبار گروپ کے چیف ایڈیٹر پر فل کمار مہیشوری کا یہاں انتقال ہوگیا۔