کیرلا حکومت نے سیلاب اور تباہی کیلئے تملناڈو حکومت کی لاپرواہی کو ذمہ دار ٹھہرایا 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th August 2018, 11:39 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو؍تروننت پورم،25؍اگست(ایس او نیوز) کیرلا حکومت نے مرکزی حکومت کو ریاست میں سیلاب اور بارش سے ہوئی زبردست تباہی کے سلسلے میں روانہ کردہ اپنی رپورٹ میں اس تباہی کیلئے تملناڈو حکومت کی لاپرواہی اور غفلت کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

کیرلا حکومت نے سپریم کورٹ میں داخل کردہ اپنے حلف نامہ میں واضح کیا ہے کہ کیرلا کے ملا پریار آبی ذخیرہ سے اچانک ضرورت سےزیادہ پانی خارج کیے جانے سے کیرلا میں سیلاب کی صورت حال پیدا ہوئی تھی۔ اس کیلئے تملناڈو حکومت بڑی حد تک ذمہ دار ہے۔ حلف نامہ میں کہا گیا ہے کہ اس سیلاب  سے کیرلا میں350افراد کی موت واقع ہوئی ہے، ہزاروں کروڑ کا مالی نقصان ہواہے، فصلیں اور مکانات تباہ ہوئے ہیں ۔ تامل ناڈو سرکار کی لاپرواہی کے نتیجہ میں یہ تباہی مچی ہے۔

تملناڈو حکومت نے بند سے پانی بہائے جانے کے تعلق سے قبل از وقت کیرلا حکومت کو احتیاطی اقدامات کرنے کوئی پیغام روانہ نہیں کیا تھا۔  اس طرح بند سے پانی بہانے سے کیرلا کے سب سے اہم آبی ذخیرہ اڈکی ڈیم پر آپ ہونے سے وہاں بڑی مقدار میں پانی بہایا گیا تھا اس سیلاب سے کیرلا میں 10 لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں ان کی املاک اور مکانات تباہ ہوئے ہیں ۔ اس وقت سیلاب متاثرین کیلئے کیرلا میں سب سے زیادہ طبی امداد اور کھانے  پینے کی اشیاء  کی ضرورت ہے۔ کیرلا کے کئی اسپتالوں میں بھی سیلابی پانی داخل ہونے سے مریضوں کا علاج دشوار ہوگیا ہے۔ اس حلف نامہ کے داخل کرنے پر تملناڈو حکومت کی جانب سے وضاحت کی گئی ہے کہ اس سیلاب کیلئے تملناڈو ذمہ دار نہیں ہے۔ تملناڈو کے وزیر اعلیٰ یلہنی سوامی نے واضح کیا ہے کہ کیرلا میں سیلاب کی صورتحال پیدا ہونے کے بعد تامل ناڈو کے آبی ذخیرہ سے پانی بہایا گیا تھا، تملناڈو حکومت پر اس طرح کا الزام عائد کرنا مناسب نہیں ہے۔ 

کورگ ضلع کے مختلف دیہاتوں کیلئے کے ایس آر ٹ یسی منی بس سرویس :کورگ ضلع میں بارش اور سیلاب سے زمین بیٹھ جانے اور راستوں پر دراڑ پڑنے سے کے ایس آر ٹی سی نے کورگ ضلع میں مرکیرہ۔سولیا روٹ پر بس سرویسز روک دی تھی۔ اب مسافروں کی سہولت کیلئے کے ایس آر ٹی سی نے مرکیرہ ۔سولیا کے درمیان پناتو ، کریکے ، بھاگ منڈل کے راستہ سے منی بس سرویس شروع کی ہے 5منی بسیں یہاں روزانہ ۱۴ ٹرپ دوڑا کرینگی ۔ اس کے نتیجہ میں کورگ میں لوگوں کو اب آس پاس کے علاوں میں تک آنے جانے کی کوئی خاص دشواری پیش نہیں آئیگی۔  
 

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں کماراسوامی حکومت اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام؛ کرناٹک کا ناٹک بالاخر ہوگیاختم

کرناٹک اسمبلی میں کئی دنوں تک لگاتار پس و پیش کی صورت حال برقرار رہنے کے بعد آج آخر کار فلور ٹیسٹ ہوا اور کماراسوامی کی حکومت اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہی۔ کرناٹک کی جے ڈی ایس-کانگریس مخلوط حکومت کے حق میں 99 ووٹ ڈالے گئے جبکہ اس کی مخالفت میں 105 ووٹ پڑے۔ واضح رہے کہ ...

منگلورو۔بنگلوروٹریک پرچٹان توڑنے کا کام مسلسل جاری۔ دن کے وقت چلنے والی ریل گاڑیاں 24جولائی تک کے لئے منسوخ

انی بندا کے قریب سبرامنیا سکلیشپور ریلوے ٹریک پر ایک بڑی چٹان لڑھکنے کا خطرہ پیدا ہوگیا تھا۔ اس حادثے کو روکنے کے لئے پہاڑی تودے کو دھماکے سے توڑنے کاکام پچھلے دو تین دن سے جاری ہے جس کے لئے ہیٹاچی مشین کے کامپریسر اور بارود کا استعمال کیا جارہا ہے۔ لیکن تیز برسات کی وجہ سے دن ...

کرناٹک: بی ایس پی ارکان اسمبلی کمارسوامی کے حق میں ووٹ کریں گے:مایاوتی

کرناٹک میں کانگریس اورجے ڈی ایس کی مخلوط حکومت رہے گی یا جائے گی اس کا فیصلہ آج ہو جائے گا ۔ برسر اقتدار اتحاد کے ارکان اسمبلی کو بی جے پی ٹوڑنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اس بیچ بی ایس پی سپریموں نے کہا ہے کہ اس کی پارٹی کے ارکان اسمبلی کمارسوامی حکومت کے حق میں ہی ووٹ ڈالیں گے ۔ یہ ...