کیجریوال نے کیرل کے وزیراعلیٰ سے ملاقات کی ،کہا :بی جے پی کے خلاف سب ساتھ آئیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th April 2017, 11:01 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 19؍اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )ملک کی تمام اپوزیشن پارٹیاں2019 کے لوک سبھا انتخابات سے پہلے مہاگٹھ بندھن کی فراق میں ہیں۔اسی سمت میں دہلی کے وزیر اعلی اور عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال نے کیرل کے وزیر اعلی پنرائی وجین سے آج ملاقات کی ۔ناشتے پر ہوئی اس ملاقات کے بعد کیجریوال نے کہا یہ ملاقات اچھے رشتوں کے تحت ہوئی ہے، اور اس کا کوئی سیاسی مطلب نہیں نکالاجانا چاہیے ۔حالانکہ ایک نئے اتحاد کے سوال پر کیجریوال نے کہا کہ ملک میں احتجاج اور اختلاف کو جس طریقے سے دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے، ان طاقتوں کے خلاف سب کو ساتھ آنے کی ضرورت ہے۔کیجریوال نے کہا کہ سوشل میڈیا سمیت تمام جگہوں پر جس طرح سے لوگوں کو ڈرانے کی کوشش کی جا رہی ہے، ہر طبقے کو ان طاقتوں کے خلاف ساتھ آنے کی ضرورت ہے۔غور طلب ہے کہ کیجریوال اس سے پہلے 2015میں تریپورہ کے وزیر اعلی مانک سرکار اور بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی کے ساتھ دہلی میں ملاقات کر چکے ہیں۔اس کے علاوہ بھی کئی مواقع پر سی پی ایم لیڈروں اور ممتا بنرجی کے ساتھ کجریوال کی ملاقات ہوئی ہے۔دراصل کیجریوال سے ملاقات کے بعد کیرالہ کے وزیر اعلی پنرائی وجین نے کہاکہ لگتا ہے کہ مرکز کی حکومت دہلی کی حکومت کو منتخب حکومت نہیں مانتی ہے اور اسے اپنے ماتحت مانتی ہے۔وجین نے کہا کہ وہ دہلی حکومت کی حمایت کرتے ہیں، نئے ابھرتے اتحاد کے سوال پر پنرائی وجین نے کہا اس کی ضرورت ہے۔بی جے پی جیسی طاقتوں کے خلاف سبھی پارٹیوں کو ساتھ آنے کی ضرورت ہے ، لیکن بغیر کانگریس کے، کیونکہ کانگریس کے لیڈر بی جے پی میں ہی جا رہے ہیں۔واضح رہے کہ سی پی ایم صرف تریپورہ اور کیرالہ میں اقتدار میں ہے ،جبکہ عام آدمی پارٹی دہلی کے علاوہ صرف پنجاب میں ہی مضبوط پوزیشن میں ہے۔ایسے میں ملک میں ایک کردار میں ایسے چھوٹی پارٹیوں کے ساتھ آنے کے باوجود بھی کسی اتحاد کی بڑی تصویر سامنے نظر نہیں آتی ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

اگرپاکستانی الیکشن میں مداخلت کررہاہے تواین آئی اے کیاکررہی ہے، اسدالدین اویسی کاسوال ،بنکاک میں پاکستان کے ساتھ مجوزہ میٹنگ کی تفصیلات بتائیں مودی

حیدرآبادکے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

خبطی ’ وکاس‘ کا تازہ ترین سروے ، مہنگائی آسمان پر ،اشیاء خوردنی کی قیمتوں میں اضافہ ، نومبر میں شرح 15 ماہ بلند سطح پر

سبزیاں، پھل او ر انڈوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کی بری خبر ہے ۔ دن رات ٹی وی ڈیبیٹ نے عوام کو اس قدر غافل اور نکما کر دیا ہے کہ آج ہونے والے ہندو۔ مسلم موضوع پر پارٹی کے بکواس ترجمان کی ہنگامہ آرائی کو تو یاد رکھتے ہیں ؛

منی شنکر ایر کا بیان غلط:لیکن مودی جی نے جو منموہن سنگھ کے بارے میں کہا وہ بھی ٹھیک نہیں:راہل گاندھی

گجرات اسمبلی انتخابی مہم کے آخری دن پریس کانفرنس کرکے کانگریس صدر راہل گاندھی نے ایک بار پھر پی ایم مودی کو نشانے پر لیا ہے۔انہوں نے صاف کہا کہ مودی جی پر منی شنکر ایر کا تبصرہ بالکل غلط تھا آخر وہ ہمارے وزیر اعظم ہیں۔