کیجریوال نے کیرل کے وزیراعلیٰ سے ملاقات کی ،کہا :بی جے پی کے خلاف سب ساتھ آئیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th April 2017, 11:01 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 19؍اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )ملک کی تمام اپوزیشن پارٹیاں2019 کے لوک سبھا انتخابات سے پہلے مہاگٹھ بندھن کی فراق میں ہیں۔اسی سمت میں دہلی کے وزیر اعلی اور عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال نے کیرل کے وزیر اعلی پنرائی وجین سے آج ملاقات کی ۔ناشتے پر ہوئی اس ملاقات کے بعد کیجریوال نے کہا یہ ملاقات اچھے رشتوں کے تحت ہوئی ہے، اور اس کا کوئی سیاسی مطلب نہیں نکالاجانا چاہیے ۔حالانکہ ایک نئے اتحاد کے سوال پر کیجریوال نے کہا کہ ملک میں احتجاج اور اختلاف کو جس طریقے سے دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے، ان طاقتوں کے خلاف سب کو ساتھ آنے کی ضرورت ہے۔کیجریوال نے کہا کہ سوشل میڈیا سمیت تمام جگہوں پر جس طرح سے لوگوں کو ڈرانے کی کوشش کی جا رہی ہے، ہر طبقے کو ان طاقتوں کے خلاف ساتھ آنے کی ضرورت ہے۔غور طلب ہے کہ کیجریوال اس سے پہلے 2015میں تریپورہ کے وزیر اعلی مانک سرکار اور بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی کے ساتھ دہلی میں ملاقات کر چکے ہیں۔اس کے علاوہ بھی کئی مواقع پر سی پی ایم لیڈروں اور ممتا بنرجی کے ساتھ کجریوال کی ملاقات ہوئی ہے۔دراصل کیجریوال سے ملاقات کے بعد کیرالہ کے وزیر اعلی پنرائی وجین نے کہاکہ لگتا ہے کہ مرکز کی حکومت دہلی کی حکومت کو منتخب حکومت نہیں مانتی ہے اور اسے اپنے ماتحت مانتی ہے۔وجین نے کہا کہ وہ دہلی حکومت کی حمایت کرتے ہیں، نئے ابھرتے اتحاد کے سوال پر پنرائی وجین نے کہا اس کی ضرورت ہے۔بی جے پی جیسی طاقتوں کے خلاف سبھی پارٹیوں کو ساتھ آنے کی ضرورت ہے ، لیکن بغیر کانگریس کے، کیونکہ کانگریس کے لیڈر بی جے پی میں ہی جا رہے ہیں۔واضح رہے کہ سی پی ایم صرف تریپورہ اور کیرالہ میں اقتدار میں ہے ،جبکہ عام آدمی پارٹی دہلی کے علاوہ صرف پنجاب میں ہی مضبوط پوزیشن میں ہے۔ایسے میں ملک میں ایک کردار میں ایسے چھوٹی پارٹیوں کے ساتھ آنے کے باوجود بھی کسی اتحاد کی بڑی تصویر سامنے نظر نہیں آتی ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر 2002 کا گجرات بن سکتا ہے

آخر کشمیر میں گونر راج نافذ ہو ہی گیا۔ کشمیر کے لئے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔ وہاں اب ساتویں بار گونر راج نافذ ہوا ہے ، ویسے بھی کشمیر کے حالات نا گفتہ بہہ ہیں۔ وادی کشمیر پر جب سے بی جے پی کا سایہ پڑا ہے تب ہی سے وہاں قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے ۔ پہلے تو مفتی سعید اور محبوبہ مفتی نے ...

راجستھان میں ’لو جہاد‘ کے نام پر ماحول خراب کرنے کی کوشش 

راجستھان کے ہنڈون میں لو جہاد کے نام پر بجرنگ دل پر ماحول بگاڑنے کا الزام لگا یا ہے، ہنڈون کے جس کانگریس کونسلر نفیس احمد پر بجرنگ دل نے لو جہاد کا الزام لگایا ہے، ان کا دعویٰ ہے کہ یہ مکمل طور پر ایک من گھڑت کہانی ہے۔

چھتیس گڑھ میں مضبوط طاقت ہے کانگریس، اتحاد کی ضرورت نہیں :پی ایل پنیا

آل انڈیا کانگریس کمیٹی جنرل سیکریٹری اور چھتیس گڑھ کے پارٹی معاملات کے انچارج پی ایل پنیا کا کہنا ہے کہ کانگریس ریاست میں مضبوط قوت ہے اور اس کے اندر کسی اتحاد کے بغیر اسمبلی انتخابات جیتنے کی طاقت ہے۔

ایمرجنسی نے جمہوریت کوقانونی تاناشاہی میں بدل دیا: ارون جیٹلی

مرکزی وزیر اور سینئر بی جے پی لیڈر ارون جیٹلی نے آج یاد کیا کہ کس طرح تقریبا چار دہائی قبل وزیر اعظم اندرا گاندھی کی زیر قیادت حکومت کی طرف سے ایمرجنسی لگائی گئی تھی اور جمہوریت کو آئینی آمریت میں تبدیل کر دیا گیا۔

گنگامیں جمع گندگی کولے کرنتیش کمارکا مرکزی حکومت پرسخت حملہ

بہار کے وزیر اعلی نتیش کماران دنوں ہر روز اپنی بات کوبے باکی سے رکھ رہے ہیں۔ گزشتہ اتوار کو ہوئی نیتی آیوگ کی میٹنگ میں انہوں نے پی ایم نریندر مودی کے سامنے ریاست کے مسائل رکھنے کے بعد انہوں نے مرکزی وزیر ماحولیات ہرش وردھن کو مشورہ دیا کہ دہلی واپس جاکر مرکزی سطح وزیر ...